حکومتی مدت ختم ہونے کے قریب؛ ترقیاتی بجٹ صرف 67 فیصد استعمال کیا جا سکا

اتوار مئی 19:20

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبار آن لائن۔ اتوار مئی ء)وفاقی حکومت کی جانب سے ترقیاتی منصوبوں کیلئے مزید 11ارب 21کروڑ 61لاکھ روپے جا ری کر دیے گئے ہیں،جبکہ کہ رواں مالی سال کیلئے ترقیاتی بجٹ (پی ایس ڈی پی) کی مد میں 1001ارب روپے مختص کیے گئے تھے۔ذرائع کے مطابق حکومت کی مدت ختم ہونے کے قریب آ گئی مگر اب تک 6کھرب70ارب 75کروڑ 59 لاکھ روپے جاری کیے گئے ہیں جو مجموعی ترقیاتی بجٹ کا 67 فیصدہے۔

گزشتہ ایک ہفتے کے دوران حکومت کی جانب سے ترقیاتی منصوبوں کیلئے مزید 11 ارب 21 کروڑ 61لاکھ روپے جاری کیے گئے، دوران وفاقی وزارت منصوبہ بندی ترقی و اصلاحات کی جانب سے ڈیفنس ڈویڑن کیلئے 2 کروڑ 41 لاکھ روپے جاری کیے گئے ہیں۔

(جاری ہے)

انفارمیشن ٹیکنالوجی و ٹیلی کام کیلئے 31 کروڑ 95 لاکھ روپے جاری کیے گئے ہیں،کیڈ کیلئے 1کروڑ 54لاکھ، داخلہ کیلئے 24 کروڑ 50 لاکھ،سائنس و ٹیکنالوجی32کروڑ 88لاکھ،نیشنل ہیلتھ سروسز ریگولیشن اینڈ کو آر ڈینیشن کیلئے 9ارب 21کروڑ 41لاکھ روپے،پانی و بجلی کیلئے 1ارب 6 کروڑ 92 لاکھ روپے جاری کیے گئے ہیں،جس کے بعد مجموعی طور پر اب تک وفاقی حکومت کی جانب سے ایوی ایشن ڈویڑن کیلئے مجمو عی طور پر 3ارب 39کروڑ روپے،کابینہ ڈویڑن 13کروڑ 45لاکھ روپے،کیڈ 2ارب 65کروڑ 85لاکھ روپے،تجارت 48کروڑ 50 لاکھ،مواصلات ڈویڑن 10ارب 12کروڑ 70لاکھ روپے،دفاعی پید اوار 1ارب 78 کروڑ 72لاکھ روپے،اسٹیبلشمنٹ 5کروڑ 39لاکھ، فیڈر ل ایجو کیشن اینڈ پر وفیشنل ٹریننگ 1 ارب 52کروڑ 82لاکھ،ہائیر ایجوکیشن کمیشن 19ارب 1کروڑ،ہاؤسنگ اینڈ ورکس 7ارب 32کروڑ 42لاکھ،انسانی حقوق 9کروڑ 15لاکھ،انفارمیشن ٹیکنالوجی و ٹیلی کام 2ارب 49کروڑ 36لاکھ،بین الصوبائی ہم آہنگی 1ارب 12کروڑ 40 لاکھ،داخلہ 12ارب 12کروڑ 56لاکھ ،قانون و انصاف 68کروڑ 91لاکھ ، نارکوٹکس کنٹرول 5کروڑ 47لاکھ، غذائی تحفظ و ریسرچ 1ارب 5کروڑ 32لاکھ ، نیشنل ہیلتھ سروسز ریگولیشن اینڈ کو آر ڈینیشن 18ارب 50کروڑ 86لاکھ ، قومی تاریخ و ادبی ورثہ 7 کروڑ 22 لاکھ، پاکستان اٹامک انرجی کمیشن 12ارب 61کروڑ 64لاکھ،پاکستان نیوکلیئر ریگولیٹری اتھارٹی 28کروڑ 65لاکھ، پیٹرولیم و قدرتی وسائل 46کروڑ 44 لاکھ، منصوبہ بندی ترقی واصلاحات 2ارب 10کروڑ 16لاکھ ، پورٹس اینڈ شپنگ 1ارب 77 کروڑ 20لاکھ ، ریلویز 19ارب 38کروڑ 48لاکھ ، سائنس و ٹیکنالوجی 1ارب 20 کروڑ 27لاکھ، شماریا ت 8کروڑ ، سپارکو 2ارب 42کروڑ 29لاکھ روپے ، ٹیکسٹائل 80 لاکھ اور پانی و بجلی کیلئے مجموعی طورپر 31ارب 50کروڑ 96لاکھ روپے جا ری کیے جا چکے ہیں۔

Your Thoughts and Comments