ہم سے غلطی ہوئی، نیب کا کالا قانون ختم کرنا چاہیے تھا، وزیراعظم

نواز شریف کا نام کسی گواہ نے نہیں لیا، نیب صرف اور صرف مسلم لیگ ن کو توڑنے کیلئے بنائی گئی تھی، شاہد خاقان عباسی

بدھ مئی 00:01

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبار آن لائن۔ منگل مئی ء) وزیراعظم پاکستان شاہد خاقان عباسی کا کہنا ہے کہ نگراں وزیراعظم کے نام پر ابھی اتفاق رائے نہیں ہوا، الیکشن 2018 کے انعقاد کیلئے 28جولائی آخری تاریخ ہے۔ نواز شریف کا نام کسی گواہ نے نہیں لیا، نیب صرف اور صرف مسلم لیگ ن کو توڑنے کیلئے بنائی گئی تھی، ہم سے غلطی ہوئی، نیب کا کالا قانون ختم کرنا چاہیے تھا۔

نجی ٹی وی کو دیے گئے انٹرویو میں شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ انتخابات میں مختلف تشبیہات دی جاتی ہیں، اشاروں کی سیاست ہم نے پیچھے چھوڑ دی ہے‘۔انہوں نے کہا کہ ’نوازشریف کی بات کو بھارت نے اپنے مقاصد کیلئے توڑا مروڑا، نوازشریف نے یہ بات نہیں کہی کہ یہاں سے لوگ ممبئی بھیجے گئے، نواز شریف فرنٹ فٹ پر کھیلنے والے ہیں، نواز شریف کے بیانیے کو غلط انداز میں رپورٹ کیا گیا۔

(جاری ہے)

وزیراعظم نے کہا کہ مریم نواز نے پارٹی میٹنگ میں کبھی حصہ نہیں لیا، مریم نواز نے پارٹی میں کبھی کسی کوہدایات نہیں دیں، مریم نواز پارٹی معاملات میں مداخلت نہیں کرتیں۔شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ نواز شریف کا نام کسی گواہ نے نہیں لیا، نیب صرف اور صرف مسلم لیگ ن کو توڑنے کیلئے بنائی گئی تھی، ہم سے غلطی ہوئی، نیب کا کالا قانون ختم کرنا چاہیے تھا۔وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ نواز شریف نے کبھی ڈیل کی نہ کریں گے، ایک ملک کے سابق وزیراعظم پر براہ راست الزام لگایا گیا اور ساری خرابی براہ راست الزام لگانے سے شروع ہوئی۔ 05-18/--382

Your Thoughts and Comments