میاں صاحب نے بتا دیا ہے مجھے کیوں نکلا یہ بھی بتایا ہے کس نے نکالا مریم نواز

نوازشریف کو تاحیات نا اہل کر نے ،ْ پارٹی صدارت سے ہٹانے اور وزیر اعظم ہائوس سے نکالنے کے بعد بھی عوام کی محبت کم نہیں ہوئی ہے ،ْ جتنی مرضی لوٹے بنالیں ،ْ عوام پارٹی نہیں چھوڑتے ووٹ دیتے ہیں ،ْورکرز کنونشن سے خطاب

بدھ مئی 21:51

اٹک (اُردو پوائنٹ اخبار آن لائن۔ بدھ مئی ء)سابق وزیر اعظم محمد نوازشریف کی صاحبزادی مریم نواز نے کہاہے کہ میاں صاحب نے بتا دیا ہے مجھے کیوں نکلا یہ بھی بتایا ہے کس نے نکالا نوازشریف کو تاحیات نا اہل کر نے ،ْ پارٹی صدارت سے ہٹانے اور وزیر اعظم ہائوس سے نکالنے کے بعد بھی عوام کی محبت کم نہیں ہوئی ہے ،ْ جتنی مرضی لوٹے بنالیں ،ْ عوام پارٹی نہیں چھوڑتے ووٹ دیتے ہیں۔

بدھ کو ورکرز کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے مریم نواز نے کہا کہ میں اٹھارہ سال بعد اٹک آئی ہوں ،ْایک طرف میاں صاحب کو مشرف نے اٹک قلعہ میں قید کیا تھا ،ْ دوسری طرف میرا بھائی اٹک جیل میں قید تھا ،ْ ایک دفعہ میاں صاحب سے ملاقات ہوتی تھی اور پھر بھائی سے ہوتی تھی ہم تھکے ہارے جیل کے باہر دو دو گھنٹے انتظار کرتے تھے ۔

(جاری ہے)

انہوںنے کہاکہ سزائے موت کے قیدیوں کو زنجیریں لگی ہوئی تھیں اور سزائے موت کے قیدیوں کو ہمارے ساتھ بٹھایا جاتا تو پھر بعد میں آدھا گھنٹا ملاقات ہوتی تھی اس وقت بھی اٹک والوں نے ہماری میزبانی کی تھی ۔

انہوںنے کہاکہ شیخ آفتاب نے اس وقت اپنے لیڈر کا ساتھ دیا اور وفا داری نبھائی تھی ۔مریم نواز نے کہاکہ نوازشریف اٹھارہ سال پہلے اٹک کے قلعہ کے اندر آپ سے محبت کر نے کی سزا بھگت رہا تھا ،ْاس وقت بھی آپ کے ووٹ کو جھکنے نہیں دیا ،ْ ووٹ کی پرچی کو روندنے نہیں دیا گیا انہوںنے کہاکہ مشرف اور اس وقت کے چند جرنیلوں نے کہا استعفیٰ دے دو میں نے صاحب نے کہا استعفیٰ نہیں دونگا تب بھی انہوںنے آپ سے محبت کی ،ْ آپ سے کمٹمنٹ کی سزا بھگتی تھی آج بھی نیب کورٹ میں میاں صاحب روزے کی حالت میں نو بجے سے ایک بجے تک متواتر اپنا بیان ریکار ڈ کرواتے ہیں ۔

انہوںنے کہاکہ میاں صاحب نے بتا دیا ہے کہ کیوں نکالا اور یہ بھی بتا دیا کہ اس کو کس نے نکالا ۔ مریم نواز نے کہا کہ شیخ آفتاب نے افطار پارٹی میں ہمیں آپ کے ساتھ افطاری کا موقع دیا ہے اس پر ہم شکر گزار ہیں ۔مریم نواز نے کہاکہ میاں صاحب پر مقدمہ پانامہ پر چلایا جس کاپانامہ نام ہی نہیں تھا وہ ستر سے زائد پیشیاں بھگت چکے ہیں جو چار سو لوگ جن پاناما کا نام آیا ان کو کبھی کسی نے پوچھا نہیں ان کو کبھی عدالت میں نہیں بلایا گیا ایک پیشی بھی نہیں بھگتی ،ْانہوںنے کہاکہ آپ بار بار ووٹ دیکر نوازشریف کو وزیر اعظم ہائوس میں لاتے ہیں کچھ لوگ سازش کر کے نکال دیتے ہیں ،ْ نوازشریف کا نام پاناما میں نہیں تھا جب پاناما پر مقدمہ چلا اور نوازشریف کی طرف سے ثبوت آئے تو پتا چلا کچھ نہیں ہے ،ْ دادا سے لیکر پوتے تک کا حساب کتاب کر دیا لیکن کچھ نہیں نکلا آخر میں اقامہ نکال کر لئے آئے ۔

اقامے کو ویزا کہتے ہیں اور کہا کہ تم نے اپنے چھوٹے بیٹے حسن نوازسے تنخواہ نہیں لی ،ْ کبھی کسی نے اپنے بیٹوں سے تنخواہ لی ہے ،ْ اور کہا تم اپنے بیٹے سے تنخواہ لے سکتے تھے نہیں لی لہذا آپ وزیر اعظم ہائوس سے نکلیں ۔ مریم نواز نے کہاکہ کرپشن کا مقدمہ بنایا ،ْ اللہ کے فضل و کرم سے آپ کا لیڈر سرخرو ہوا ایک پائی کی کرپشن ثابت نہیں ہوئی ،ْ منی لانڈرنگ ثابت نہیں ہوئی ،ْ وزیر اعظم ہائوس سے نکالا پھر آپ کی جماعت کی صدارت سے بھی ہٹا دیا لیکن عوام کی نوازشریف سے محبت کم نہیں ہوئی ہے لیکن آج بھی آپ کے دلوں میں نوازشریف ہے ۔

مریم نواز نے کہا کہ جب پھر بھی تسلی نہیں ہوئی تو تاحیات نا اہل کر دیا انہوںنے کہاکہ این اے 120کا الیکشن ہوا ،ْ چالیس امیدوار میری والدہ کے مقابلے میں اتارے گئے ،ْ الیکشن سے 48گھنٹے پہلے متحرک کارکنان کو منہ پر کپڑ ا ڈال کر اٹھا کر لے گئے ہیں ،ْ الیکشن کے نتائج کے بعد تک نہیں چھوڑا پھر کسی کو کسی گمنام سڑک پر چھوڑ گئے ۔انہوںنے کہاکہ جب پولنگ ہورہی تھی تو ان کو پتہ تھا کہ مسلم لیگ نواز یہاں سے جیتے گی ،ْہر الیکشن پولنگ اسٹیشن کے اوپر جب مسلم لیگ نواز کی پرچی لیکر کوئی آتا تھا تو اسے چھ چھ چکر لگاتے تھے اور مخالفت کو پانچ سیکنڈ میں ووٹ ڈلواتے تھے ،ْ انہوںنے کہاکہ میں نے کچھ لوگوں کو ر وتے ہوئے دیکھا اور کہاکہ ہماری باری نہیں آئی اور ہم نے ووٹ ڈال کر جانا ہے ،ْ سب ہتھکنڈے آزمائے اللہ تعالیٰ نے نوازشریف اور شیر کو فتح دی ،ْ نا اہل کے بعد ایک کے بعد ایک فیصلہ آیا ،ْ لودھراں نوازشریف فتح یاب ہوا ،ْ اس بزرگ کو نہیں جانتی تھی ،ْ ان کا کبھی نام نہیں سنا تھا ،ْ جہاں مسلم لیگ دو سال پہلے 25ہزار سے ہاری تھی وہ اتنی بڑی لیڈر سے جیت گئی ۔

انہوںنے کہاکہ دو سال تین پشتوں پر مقدمے چلانے کے بعد ،ْ نا اہل کر نے کے بعد ،ْ پارٹی صدارت سے نکالنے کے بعد ،ْ تاحیات نا اہل کر نے کے بعد ،ْ نیب کورٹ میں ستر پیشیوں کے بعد نوازشریف اور عوام سے محبت کوم نہیں کر سکے تو مان لو تم ہار گئے ہو ،ْ کہہ رہے ہیں کہ الیکشن میں دھاندلی ہوگی جتنی مرضی دھاندلی کرلی ،ْ جتنی مرضی لوٹے بنالو عوام پارٹی نہیں چھوڑتی ،ْ ووٹ عوام دیتے ہیں ،ْ نوازشریف کے ساتھ انصاف کروگے نا ں ،ْ نوازشریف کے خلاف نا انصافی کا بدلہ لو گے ،ْ ووٹ کو عزت دو گے اور عزت دلوائو گے ۔

Your Thoughts and Comments