پاکستان کی جانب غیر ملکی سرمایہ کاروں کو راغب کرنے کا آسان ترین راستہ قانون کی حکمرانی ہے،پاکستان میں عدلیہ حقیقی طور پر آزاد ہے، ہم بلاخوف و خطر فیصلے کرتے ہیں

چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثارکا ایسٹ چائنہ یونیورسٹی شنگھائی میں خطاب

پیر مئی 23:23

اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبار آن لائن۔ پیر مئی ء) چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار نے کہا ہے کہ ان کے دورہ چین سے دونوں ممالک کے درمیان دوستانہ تعلقات مزید مستحکم ہوں گے، انہیں چینی شہریوں اور حکومت کے مختلف شعبوں بالخصوص عدلیہ کے تجربات اور صلاحیتوں سے استفادہ کرنے کا موقع ملے گا۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے پیر کو ایسٹ چائنہ یونیورسٹی شنگھائی کے فیکلٹی ممبران اور طالب علموں سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ انہوں نے دورہ چین کے دوران دونوں ممالک کے درمیان عدالتی شعبہ میں تعاون کے مواقع اور پاک۔چین اقتصادی راہداری معاشی تعلقات کے تناظر میں قانونی چیلنجز سے نمٹنے کے حوالہ سے جائزہ لیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کی جانب غیر ملکی سرمایہ کاروں کو راغب کرنے کا آسان ترین راستہ قانون کی حکمرانی ہے۔ اس موقع پر انہوں نے طالب علموں کو پاکستان کے عدالتی نظام کے متعلق بھی آگاہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان میں عدلیہ حقیقی طور پر آزاد ہے اور ہم بلاخوف و خطر فیصلے کرتے ہیں۔

Your Thoughts and Comments