پنجاب کے نامزد نگران وزیراعلیٰ ناصر کھوسہ پانامہ کیس میں نوازشریف کو نااہل قرار دینے والے سپریم کورٹ کے بینچ کے سربراہ جسٹس آصف سعید کھوسہ کے بھائی ہیں

نوازشریف ،یوسف رضا گیلانی کے پرنسپل سیکرٹری ، پنجاب ،بلوچستان کے چیف سیکرٹری بھی رہے نوازشریف کی منظوری سے ورلڈ بین کے تین سال تک ایگزیکٹوڈائریکٹر کے عہدے پر بھی کام کر چکے ہیں

پیر مئی 20:31

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبار آن لائن۔ پیر مئی ء) پنجاب کے لئے نامزد کئے گئے نگران وزیراعلیٰ ناصر سعید کھوسہ سابق وزیراعظم نوازشریف کے پرنسپل سیکرٹری اور ورلڈ بینک میں ایگزیکٹو ڈائریکٹو کے اہم عہدوں پر تعینات رہے ہیں جبکہ وہ سپریم کورٹ کے پانامہ کیس میں نوازشریف کو اناہل قرار دینے والے بینچ کے سربراہ ، سپریم کورٹ کے سینئر جج جسٹس آصف سعید کھوسہ اور سابق ڈی جی ایف آئی اے طارق کھوسہ کے بھائی ہیں ۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف اور پنجاب اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر میاں محمود الرشید کے درمیان ہونے والی مشاورت میں تحریک انصاف کی طرف سے ناصر کھوسہ کا نام نگران وزیراعلیٰ کے طور پر دیا گیا جس سے وزیراعلیٰ شہباز شریف نے اتفاق کیا ۔

(جاری ہے)

ناصر کھوسہ ڈی ایم جی سروس کے گریڈ22کے ریٹائرڈ سینئر آفیسر ہیں ، وہ نوازشریف اور یوسف رضا گیلانی کے ساتھ پرنسپل سیکرٹری کے طور پر فرائض انجام دے چکے ہیں ۔

وہ پنجاب اور بلوچستان کے چیف سیکرٹری بھی رہے اور نوازشریف کے پرنسپل سیکرٹری کے عہدے سے ریٹائرمنٹ کے بعد سابق وزیراعظم کی منظوری سے واشنگٹن میں تین سال تک ورلڈ بینک میں ایگریکٹو ڈائریکٹر کے عہدے پر تعینات رہے ۔انہیں سول سروس میں ایک اچھی شہرت کا حامل آفیسر جانا جاتا رہا اور مختلف حکومتوں میں اہم عہدوں پر تعینات رہے ہیں ۔ نامزد وزیراعلیٰ پانامہ کیس میں سابق وزیراعظم نوازشریف کو ناہل قرار دینے والے سپریم کورٹ کے پانچ رکنی بینچ کے سربراہ جسٹس آصف سعید کھوسہ کے بھائی ہیں جبکہ ان کے ایک اور بھائی طارق کھوسہ ڈائریکٹر جنرل ایف آئی اے کے عہدے سے ریٹائر ہوئے ہیں ۔

ا ن کا تعلق ڈیرہ غازی خان سے ہے۔یاد رہے کہ اپوزیشن لیڈر محمود الرشید کا کہنا ہے کہ ناصر سعید کا نام تحریک انصاف کی جانب سے پیش کیا گیا تھا۔

Your Thoughts and Comments