توہین عدالت کیس، احسن اقبال کی عدلیہ مخالف ویڈیو عدالت میں نہ چلانے کی استدعا مسترد

لاہور ہائیکورٹ نے سابق وزیر داخلہ کی عدلیہ مخالف پریس کانفرنس کی ویڈیو چلا دی ملکی حالات خراب کرنے میں شروعات کس نے کی ،5ججزوالے معاملے پرعدلیہ کی تضحیک کس نے کی ، دانیال عزیز،طلال چودھری،مریم اورنگزیب نے کیاکچھ نہیں کہا،جسٹس مظاہر علی اکبر نقوی کے ریمارکس

منگل جون 12:45

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبار آن لائن۔ منگل جون ء) لاہور ہائیکورٹ نے سابق وفاقی وزیر داخلہ احسن اقبال کی عدلیہ مخالف ویڈیو عدالت میں نہ چلانے کی استدعا مسترد کرتے ہوئے توہین عدالت کیس میں سابق وفاقی وزیر داخلہ احسن اقبال کی عدلیہ مخالف پریس کانفرنس کی ویڈیو چلا دی ۔ منگل کو لاہور ہائی کورٹ میں جسٹس مظاہرعلی اکبرنقوی کی سربراہی میں 3 رکنی بنچ نے سابق وفاقی وزیر داخلہ کیخلاف توہین عدالت کیس کی سماعت کی۔

احسن اقبال اپنے وکیل کے ہمراہ عدالت میں پیش ہوئے اورتحریری جواب عدالت میں پیش کردیا،انہوں نے کہا کہ کبھی عدلیہ کی توہین نہیں کی ضمیر پر کوئی بوجھ نہیں،غیر ملکی اپنے ایجنڈے کو ملک میں داخل کر رہے ہیں،ملک کو اندرونی مضبوطی کی ضرورت ہے ،اس پر جسٹس مظاہر علی اکبر نقوی نے سابق وفاقی وزیرداخلہ کی پریس کانفرنس چلانے کا حکم دیا تو احسن اقبال نے عدلیہ مخالف ویڈیو عدالت میں نہ چلانے کی استدعا کردی جو عدالت نے مسترد کردی ۔

(جاری ہے)

جسٹس مظاہر علی اکبر نقوی نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ ملکی حالات خراب کرنے میں شروعات کس نے کی ،5ججزوالے معاملے پرعدلیہ کی تضحیک کس نے کی ،عدالت نے کہا کہ دانیال عزیز،طلال چودھری،مریم اورنگزیب نے کیاکچھ نہیں کہا،وکیل احسن اقبال نے کہا کہ کسی کی سزاہمیں مت دیں،ہم توآپ کے سامنے سرجھکائے کھڑے ہیں،جب کوئی آنکھیں جھکائے تو اسے معاف کردینا چاہئے،وکیل اعظم نذیرتارڑنے کہا کہ جواب کی روشنی میں توہین عدالت کا نوٹس خارج کیا جائے،احسن اقبال نے بڑے شکوہ کئے ہیں،ان کا بیان ٹی وی پر توڑ موڑ کراورٹکڑوں میں چلایا گیا ۔

جسٹس مظاہر علی اکبر نقوی نے کہا کہ ہم بھی تو جواب شکوہ دے رہے ہیں ،جسٹس مسعود جہانگیر نے کہا کہ احسن اقبال صاحب آپ سے ایسے رویے کی امید نہ تھی، آپ کے ٹیلی فون پرفیصلہ کر دیں توعدلیہ ٹھیک ہی ،آپ کے محلوں میں جاکرآپ سے ملیں توٹھیک ہے ،پاناماکافیصلہ آ جائے توعدلیہ بری ہے،جسٹس مسعود نے کہا کہ حدیبیہ اورخواجہ آصف کافیصلہ حق میں آجائے توعدلیہ اچھی ہے۔

Your Thoughts and Comments