عائشہ گلالئی نے الیکشن کمیشن میں اپنے اثاثے ظاہر کر دئیے

عائشہ گلا لئی کے پاس کوئی گاڑی،فرنیچریاذاتی استعمال کا سامان نہیں جبکہ بیرون ملک اور پاکستان میں کوئی کاروبار نہیں ہے

جمعرات جون 20:59

پشاور(اُردو پوائنٹ اخبار آن لائن۔ جمعرات جون ء):پاکستان تحریک انصاف گلا لئی کی سربراہ عائشہ گلالئی نے الیکشن کمیشن میں اپنے اثاثے ظاہر کر دئیے۔ عائشہ گلا لئی کے پاس کوئی گاڑی،فرنیچریاذاتی استعمال کا سامان نہیں جبکہ بیرون ملک اور پاکستان میں کوئی کاروبار نہیں ہے۔تفصیلات کے مطابق سال 2018 پاکستان کی پارلیمانی سیاست میں ایک اہم اور تاریخی سال ہے۔

تاریخ میں پہلی مرتبہ 2 جمہوری حکومتیں اپنے اپنے آئینی ادوار مکمل کر کے رخصت ہو چکی ہے۔2018 انتخابات کا سال ہے۔ایک جانب ملکی اداروں نے انتخابات کی تیاری شروع کر رکھی ہے تو دوسری جانب سیاسی جماعتوں نے انتخابات کی تیاریاں شروع کر رکھی ہیں۔کاغذات نامزدگی جمع کروانےکا سلسلہ بھی کل مکمل ہو چکا ہے جس کے بعد کاغذوں کی جانچ پڑتال کی جارہی ہے۔

(جاری ہے)

اس موقع پر بڑی بڑی وکٹیں اڑنے کی امید ہے اس حوالے سے خدشہ ظاہر کیا جا رہا ہے کہ بہت سے بڑے بڑے سیاسی نام اس مرحلے پر مشکل میں پڑ سکتے ہیں اور انکے کاغذات نامزدگی مسترد ہو سکتے ہیں۔کاغذات نامزدگی کے اس جانچ پڑتال کے اہم موقع پر بڑی بڑی قلابازیاں بھی سامنے آرہی ہیں۔آرٹیکل 63,62 کی زد میں آنے سے بچنے کے لیے سیاسی رہنماوں کو کاغذات نامزدگی میں وہ چیزیں بھی سامنے لانی پڑ رہی ہیں جو انہوں نے عرصے سے چھپائی ہوئیں تھیں۔

کہیں پاکستان کے امیر ترین سیاستدان اپنے اثاثے ظاہر کر رہے ہیں تو دوسری جانب کچھ سیاستدان ایسے بھی ہیں جو انتہائی کم مالیت کے اثاثوں کے مالک ہیں انہی میں سے ایک پاکستان تحریک انصاف گلالئی کی سربراہ عائشہ گلا لئی بھی ہیں۔کاغذات نامزدگی میں ظاہر کردہ اثاثوں کی تفصیلات کے مطابق عائشہ گلالئی کے پاس 8کنال کا پلاٹ ہے۔عائشہ گلالئی نےپلاٹ کی مالیت 15لاکھ روپے ظاہرکی ہے۔

عائشہ گلا لئی نے کیش ان ہینڈ10ہزارروپے ظاہر کیا ہے۔عائشہ گلا لئی کے پاس کوئی گاڑی،فرنیچریاذاتی استعمال کا سامان نہیں۔عائشہ گلا لئی کا بینک اکاؤنٹ پارلیمنٹ ہاؤس میں موجود بینک میں ہے۔عائشہ گلا لئی کے اکاؤنٹ میں 3 لاکھ روپے موجود ہیں۔عائشہ گلا لئی کے پاس ڈیڑھ تولہ سونا ہے۔سونے کی مالیت 90 ہزار روپے ظاہر کی گئی ہے۔مزید یہ کہ عائشہ گلا لئی کا پاکستان یا بیرون ملک کوئی کاروبار نہیں۔

Your Thoughts and Comments