8ممالک میں متعصب معاشرے میں بھارت سر فہرست،پیو ریسرچ سینٹر

زیادہ مذہبی پابندیوں والے ممالک میں مصر، روس، انڈونیشیا اور ترکی شامل، 144ملکوں میں عیسائی، 142ملکوں میں مسلمان تعصبی منافرت کی زد میں، بین الاقوامی ادارے کی سروے رپورٹ

پیر جون 15:08

نئی دہلی(اُردو پوائنٹ اخبار آن لائن۔ پیر جون ء)بین الاقومی ادارے پیو ریسرچ سینٹر نے اپنی سروے رپورٹ میں اکشاف کیا ہے کہ 198ممالک میں معاشرتی اعتبار سے تعصب والے ممالک میں سرفہرست بھارت ہے، زیادہ مذہبی پابندیوں والے دیگر ممالک میں مصر، روس، انڈونیشیا اور ترکی شامل ہیں، 144ملکوں میں عیسائی اور 142 ملکوں میں مسلمان تعصبی منافرت کی زد میں ہیں۔

بین الاقوامی میڈیا کے مطابق بین الاقومی ادارے پیو ریسرچ سینٹر نے اپنی سروے رپورٹ میں اکشاف کیا ہے کہ 198ممالک میں معاشرتی اعتبار سے تعصب والے ممالک میں سرفہرست بھارت ہے، زیادہ مذہبی پابندیوں والے دیگر ممالک میں مصر، روس، انڈونیشیا اور ترکی شامل ہیں، 144ملکوں میں عیسائی اور 142 ملکوں میں مسلمان تعصبی منافرت کی زد میں ہیں۔

(جاری ہے)

سروے رپورٹ کی تفصیلات کیت مطابق بھارت معاشرتی اعتبار سے تعصب والے ممالک میں سرفہرست ہے جہاں عیسائی اور مسلمان سب سے زیادہ مذہبی تعصب کا شکار ہیں۔

بین الاقومی ادارے پیو ریسرچ سینٹر کے سروے میں دنیا کے 198 ملکوں میں مذہبی پابندیوں کا جائزہ لیا گیا، بین الاقوامی سروے کے مطابق 28 فیصد ملکوں میں مذہبی پابندیوں کی شرح انتہائی زیادہ ہے، دنیا بھر میں مذہبی تعصب اور پابندیوں میں اضافہ ہوا ہے، دنیا بھر میں عیسائی اور مسلمان سب سے زیادہ مذہبی تعصب کا شکار ہیں۔بھارت معاشرتی اعتبار سے سب سے زیادہ مذہبی تعصب والا ملک ہے، زیادہ مذہبی پابندیوں والے دیگر ممالک میں مصر، روس، انڈونیشیا اور ترکی بھی شامل ہیں۔رپورٹ کے مطابق 55 ممالک میں یہ شرح انتہائی زیادہ رہی، مختلف مذاہب کے خلاف متعصبانہ کارروائیوں میں بھی اضافہ ہوا جب کہ 144ملکوں میں عیسائی اور 142 ملکوں میں مسلمان اس کی زد میں رہے۔

Your Thoughts and Comments