نواز شریف اور مریم نواز کو اڈیالہ جیل کی بی کیٹیگری میں رکھا جائے گا

دونوں مجرمان کو 2قیدی بطور ملازم مل سکیں گے،انکا کمرہ ائیرکنڈیشنڈ ہوگا جبکہ انہیں فریج تک بھی رسائی ہوگی،گھر کا کھانا بھی مل سکے گا

پیر جولائی 23:17

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبار آن لائن۔ پیر جولائی ء):نواز شریف اور مریم نواز کو اڈیالہ جیل کی بی کیٹیگری میں رکھا جائے گا۔ دونوں مجرمان کو 2قیدی بطور ملازم مل سکیں گے،انکا کمرہ ائیرکنڈیشنڈ ہوگا جبکہ انہیں فریج تک بھی رسائی ہوگی،گھر کا کھانا بھی مل سکے گا۔تفصیلات کے مطابق نواز شریف کو احتساب عدالت کی جانب سے ایون فیلڈ ریفرنس میں نواز شریف اور مریم نواز کو سزا سنا دی ہے۔

نواز شریف کو 11سال قید بامشقت،8ملین پاونڈ جرمانہ جبکہ مریم نواز کو 8سال قید بامشقت اور 2 ملین پاونڈ کا جرمانہ سنایا گیا۔اسی کیس میں مریم نواز کے شوہر کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کو ایک سال قید بامشقت کی سزا سنائی گئی ہے۔اس فیصلے کے بعد نواز شریف اور مریم نواز نے وطن واپسی کا اعلان کیا تھا لیکن کوئی تاریخ نہیں دی تھی۔

تاہم آج مریم نواز نے جمعہ 13جولائی کو وطن واپس آنے کا اعلان کردیا ہے۔

سابق وزیراعظم نواز شریف کی صاحبزادی مریم نواز نے لندن میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے 13 جولائی کو ملک واپس آنے کا اعلان کیا ہے۔ ۔یہاں نیب نے بھی نواز شریف اور مریم نواز کی گرفتاری کی تیاریاں مکمل کر لی ہیں۔نیب کی ٹیم 13جولائی کو وارنٹ گرفتاری لے کر لاہور ائیرپورٹ پہنچے گی جہاں مریم نواز اور نواز شریف کی آمد متوقع ہے۔اس موقع بتایا گیا ہے کہ سابق وزیراعظم نواز شریف کے ہمراہ لندن سے ن لیگی سینئر کارکنان اور بین الاقوامی میڈیا کے نمائندے بھی آئیں گے۔

تاکہ نیب کی جانب سے گرفتاری کے دوران ان کوکوریج مل سکے۔تازہ ترین خبر کے مطابق نواز شریف اور انکی صاحبزادی کو لاہور ائیرپورٹ کی بجائے کسی بھی اور ائیرپورٹ پر اتارا جا سکاتا ہے اور اگر طیارہ لاہور میں اترا تو انہیں وہاں سے ہی گرفتار کر کے ہیلی کاپٹر کے ذریعے اڈیالہ جیل میں منتقل کیا جائے گا۔اس حوالے سے نیب نے ہیلی کاپٹر کے حصول کے لیے حکومت کو درخواست دے دی ہے۔

اڈیالہ جیل منتقل ہو نے کے بعد مریم نواز اور نواز شریف کو بی کلاس کیٹگری کی جیل میں رکھا جائے گا جہاں انہیں 2قیدی بطور ملازم مل سکیں گے۔انکا کمرہ ائیرکنڈیشنڈ ہوگا جبکہ انہیں فریج تک بھی رسائی ہوگی۔اس موقع پر انہیں گھر کا کھانا بھی مل سکے گا یا انہیں کھانا بنانے کی اجازت بھی ہو گی ۔اس کے علاوہ وہ قیدیوں کا مخصوص لباس پہننے کے پابند نہیں ہوں گے۔اس کے علاوہ بی کلاس میں مقیم قیدی اخبار اور ٹیلی ویژن تک رسائی کے لیے متعلقہ حکام کو درخواست دے سکتا ہے۔

Your Thoughts and Comments