ذرا سی غیرت ہے اور اپنے باپ کے بیٹے ہوتو پیپلزپارٹ کو ووٹ دو،سراج درانی ووٹرز کو دھمکانے پر اتر آئے

رزق پیپلزپارٹی دے اور آپ لوگ ووٹ کسی اور کو دو، تھوڑی بھی غیرت اور اپنے باپ کی اولاد ہو تو پی پی کو ووٹ دو، پیپلزپارٹی کو ووٹ نہ دیا تو لاشیں گرتی رہیں گی،سراج درانی

پیر جولائی 23:55

کراچی(اُردو پوائنٹ اخبار آن لائن۔ پیر جولائی ء):ذرا سی غیرت ہے اور اپنے باپ کے بیٹے ہوتو پیپلزپارٹ کو ووٹ دو،سراج درانی ووٹرز کو دھمکانے پر اتر آئے۔سابق اسپیکر سندھ اسمبلی سراج درانی کا کہنا تھا کہ رزق پیپلزپارٹی دے اور آپ لوگ ووٹ کسی اور کو دو، تھوڑی بھی غیرت اور اپنے باپ کی اولاد ہو تو پی پی کو ووٹ دو، پیپلزپارٹی کو ووٹ نہ دیا تو لاشیں گرتی رہیں گی۔

تفصیلات کے مطابق الیکشن 2018 کا وقت قریب سے قریب تر آچکا ہے۔2018 کے تاریخی الیکشن کا وقت قریب سے قریب تر آتا جارہا۔سیاسی جماعتوں کی جانب سے الیکشن کی بھرپور تیاریاں کی جار ہی ہیں ۔اس موقع پر سیاسی رہنما اپنے اپنے حلقے میں انتخابی مہم چلانے میں مشغول ہیں ۔ان میں بہت سے سیاسی پرندے ایسے بھی ہیں جنہوں نے 5 سال بعد اپنے اپنے علاقوں اور حلقوں کا رخ کیا ہے جس کے بعد عوام کی جانب سے ایسے سیاستدانوں کے مواخذے کا سلسلہ بھی جاری ہے۔

عوام کی جانب سے کئیے جانے والے سوالات عوام میں شعور کی بیداری کی علامت ہیں ۔آئے روز ایسے واقعات سامنے آرہے ہیں جس میں سیاستدانوں کو عوامی مزاحمت کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ۔ایسا پی کچھ سندھ کی سابق اسپیکر اسمبلی اورپاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما سراج درانی کے ساتھ ہوا۔سراج درانی اپنے حلقے میں پہنچے تو اس موقع پر کارکنان کی جانب سے ان کا پرتپاک استقبال کیا گیا ۔

تاہم صورتحال اس وقت بدمزگی کا شکار ہوگئی جب ووٹرز نے ان پر سوالات کی بوچھاڑ کر دی۔پے در پے سوالات سے سراج درانی اس قدر جھنجلاہٹ کا سامنا کرنا پڑا کہ وہ ووٹرز کو سبق سکھانے پر اتر آئے اور انہوں نے ووٹرز کے ساتھ اخلاق سے گری ہوئی زبان میں بات چیت کرنا شروع کردی۔سپیکر سندھ اسمبلی آغا سراج درانی نے انتخابی جلسے سے خطاب کیا، اس موقع پر انہوں نے ووٹرز اور علاقہ مکینوں کیلئے دھمکی آمیز اور شرمناک زبان استعمال کی۔

ووٹرز پر چڑھائی کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ رزق پیپلزپارٹی دے اور آپ لوگ ووٹ کسی اور کو دو، تھوڑی بھی غیرت اور اپنے باپ کی اولاد ہو تو پی پی کو ووٹ دو، پیپلزپارٹی کو ووٹ نہ دیا تو لاشیں گرتی رہیں گی۔ آغا سراج کی باتیں ووٹرز چپ چاپ سنتے رہے، وہ بولے کہ اگر پی پی کو ووٹ نہ دیا تو لعنتی ہو جاؤ گے، لوگ ہمیشہ آپ پر لعنتیں کریں گے۔یاد رہے کہ اس قبل شازیہ مری اور فریال تالپور بھی ایسے ووٹرز کو دھمکا چکی ہیں۔

Your Thoughts and Comments