الیکشن 2013ء کے متعلق آنکھیں کھول دینے والے حقائق جلد سامنے آئینگے،چودھری پرویزالٰہی ،لینڈ ریکارڈ کمپیوٹرائزیشن کا منصوبہ ورلڈ بنک کے تعاون سے 2006ء میں کامیابی سے شروع کیا، شہباز شریف نہ روکتے تو اب تک مکمل ہو چکا ہوتا ،میڈیا سے گفتگو

پیر فروری 07:51

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبار آن لائن۔3فروری۔2014ء) پاکستان مسلم لیگ کے سینئر مرکزی رہنما و سابق نائب وزیراعظم چودھری پرویزالٰہی نے کہا ہے کہ الیکشن 2013ء کے متعلق جلد ایسے حقائق سامنے آئیں گے کہ لوگوں کی آنکھیں کھلی کی کھلی رہ جائیں گی، لینڈ ریکارڈ کمپیوٹرائزیشن کا منصوبہ ورلڈ بنک کے تعاون سے ہم نے 2006ء میں کامیابی سے شروع کیا تھا شہباز شریف نہ روکتے تو 2012ء تک مکمل ہو چکا ہوتا، ہماری منزل ویلفیئر سٹیٹ تھی 1122، تعلیم، صحت اور امن عامہ کی بہتری سمیت تمام تاریخی منصوبے اس کی جانب اہم اور کامیاب پیش رفت تھی لیکن جہاں تک ان کا بس چلا انہوں نے ہمارے پروگرام اور منصوبے روک دئیے، وزیراعلیٰ کے شہر لاہور میں بھی 70 فیصد شہریوں کو پینے کا صاف پانی نہیں مل رہا لیکن صرف ایک روٹ پر چلنے والی میٹرو بس کو ماہانہ ایک ارب روپے کے لگ بھگ سبسڈی دی جا رہی ہے، عوام کی خاطر کچھ کرنے کیلئے تختی تبدیل پالیسی چھوڑنا ہو گی، انہیں ہمارے بنائے گئے تعلیمی ادارے اور امراض قلب کے ہسپتال چالو کرنے چاہئیں۔

(جاری ہے)

وہ اپنی رہائش گاہ پر میڈیا کو مختلف سوالات کے جواب دے رہے تھے۔ چودھری پرویزالٰہی نے موجودہ حکومت کی جانب سے پنجاب کے مختلف اضلاع میں لینڈ ریکارڈ کمپیوٹرائزیشن کے بارے میں سوال پر کہا کہ میری حکومت نے پنجاب اسمبلی سے قانون سازی کے بعد ورلڈ بینک کے مالی و فنی تعاون کے بعد اس کام کا آغاز کیا، صوبائی حکومت کے علاوہ ورلڈ بینک نے مارچ 2007ء میں اس کیلئے 5 ارب روپے کی امداد منظور کی، قصور اور لاہور میں یہ کام شروع بھی کر دیا گیا لیکن ن لیگ کی حکومت نے ہمارے دیگر میگا منصوبوں کی طرح اس پر بھی کام روک دیا اور اب اسے دوبارہ شروع کر کے کریڈٹ لینے کی کوشش کر رہے ہیں۔

Your Thoughts and Comments