لاہور ہائیکورٹ، مریم نواز کے استعفی کو جعلی قرار دینے کیلئے دائر درخواست پر اٹارنی جنرل سے جواب طلب

منگل جنوری 08:20

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔ 19جنوری۔2016ء) لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس منصور علی شاہ نے کیس کی سماعت کی۔درخواست گزار سید اقتدار حیدر نے موقف اختیار کیا کہ وفاقی حکومت کے حکم پر مریم نواز کو یوتھ لون سکیم کی چئیر پرسن تعینات کیا گیا مگر اس حوالے سے مریم صفدر کی بجائے نوٹیفیکیشن مریم نوازکے نام پر جاری کیا گیا،انہوں نے کہا کہ مریم نواز کے عہدہ سنبھالنے کے بعد میڈیا میں نواز شریف اور مریم نواز کے ناموں والے کروڑوں روپے کے اشتہارات شائع کئے گئے مگر عدالتی حکم پرمریم نواز کی بجائے مریم صفدر کی جانب سے دستخط شدہ استعفی عدالت میں بھجوا دیا گیا۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ مریم نواز کے نام سے جاری ہونے والے نوٹیفیکشن کے برعکس استعفی میں مریم صفدر کے دستخط کئے گئے ہیں،مریم صفدر نے عدالت میں جعلی استعفی کی کاپی فراہم کر کے عدالت کو گمراہ کرنے کی کوشش کی لہذا مریم نواز کے استعفی کو جعلی قرار دیا جائے۔عدالت نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ نام کے علاوہ ملک میں اور بھی اہم معاملات ہیں۔عدالت نے سٹینڈنگ کونسل کو متعلقہ حکام سے جواب لے کر عدالت میں پیش کرنے کی ہدائت کرتے ہوئے سماعت دس فروری تک ملتوی کر دی

Your Thoughts and Comments