صوبائی وزیر صحت خواجہ عمران نذیر اور ادویات کی ریٹلرز ایسوسی ایشن کے مابین اجلاس

ریٹلرز کے تحفظات کے حوالے سے مختلف امور زیر بحث آئے

پیر فروری 10:22

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔13فروری۔2017ء )صوبائی وزیر صحت خواجہ عمران نذیر اور ادویات کی ریٹلرز ایسوسی ایشن کے مابین گزشتہ روز اجلاس منعقد کیا گیا۔ ملاقات میں ریٹلرز ایسوسی ایشن کے صدر اسحق میو، جنرل سیکرٹری میاں غلام مرتضیٰ سمیت ایسوسی ایشن کے دیگر عہدیداروں نے شرکت کی۔ اس موقع پر ریٹلرز کے تحفظات کے حوالے سے مختلف امور زیر بحث آئے۔

پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ کیئر کے وزیر خواجہ عمران نذیر نے کہا ہے کہ شہریوں کو معیاری ادویات مناسب نرخوں پر ملنا اُن کا بنیادی حق ہے۔ مذاکرات کے دوران ایسوسی ایشن نے کہا کہ ڈرگ انمیڈمنٹ ایکٹ 2017ء پر اُن کے تحفظات ہیں۔ اُنہوں نے مذاکرات میں شیڈول جی کے تحت ادویات کے بند کرنے پر خلاف بحث کی گئی ایسوسی ایشن نے مطالبہ کیا ہے کہ ڈرگ ریٹلرز کا پنجاب بھر میں ڈسپنسرز یا فارمیسی لائسنس کو منتقل کیے جانے کا مطالبہ کیا۔

(جاری ہے)

یہ بھی کہا گیا ہے کہ ڈسپنسر یا فارمیسی کا سرٹیفکیٹ ہولڈرز کو ابتدائی طبی امداد کی اجازت دی جائے اس لئے کہ بسا اوقات ہسپتال جائے حادثہ سے کئی کئی کلومیٹرز کے فاصلے پر ہوتے ہیں اس طرح زخمی یا مریض کی جان بچانے کے مواقع موجود ہوتے ہیں جو دیر ہونے کے باعث معدوم ہو جاتے ہیں۔ دوسری جانب فارما سیوٹیکل مینو فیکچرز ایسوسی ایشن نے اپنا احتجاج جاری رکھنے کا فیصلے کرتے ہوئے ڈرگ ایکٹ کے تحت 13 فروری کو بھرپور احتجاج کرنے کی کال دی ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کے من پسند تنظیموں سے اُن کا کوئی تعلق نہیں ہے۔ ڈرگ ایکٹ کے خلاف بھرپور احتجاج کیا جائے گا۔

متعلقہ عنوان :

Your Thoughts and Comments