پیمرانے بی بی سی ورلڈ کو لینڈنگ رائٹس ، علامہ اقبال اوپن یونیورسٹی کو نان کمرشل ٹی وی اور الحمد یونیورسٹی کوئٹہ کو نان کمرشل ریڈیو لائسنس دینے کی منظوری دیدی

پیمرانے بی بی سی ورلڈ کو لینڈنگ رائٹس ، علامہ اقبال اوپن یونیورسٹی ..
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 15 مارچ2019ء) پیمرا ہیڈکوارٹرز اسلام آباد میں اتھارٹی کا 148واں اجلاس منعقد ہوا جس میںمیسرز انڈیگو انٹرٹینمنٹ (پرائیویٹ) لمیٹڈ، لاہور کو غیرملکی سیٹلائیٹ ٹی وی چینل "بی بی سی ورلڈ نیوز" کو لینڈنگ رائٹس کی اجازت کی منظوری دی گئی۔ اتھارٹی نے علامہ اقبال اوپن یونیوسٹی، اسلام آباد کو تعلیمی مقاصد کیلئے نان کمرشل سیٹلائیٹ ٹی وی کا لائسنس اور الحمد اسلامک یونیورسٹی، کوئٹہ کونان کمرشل ایف ایم ریڈیو لائسنس کے اجراء کی بھی منظوری دی ۔

سپیشل کمیونیکیشن آرگنائزیشن کی گلگت بلتستان کیلئے انٹرنیٹ پرٹوکول (IPTV) ڈسٹری بیوشن سروس لائسنس کی درخواست کو بھی منظور کر لیاگیا۔ اتھارٹی نے میسرز ریڈیو ہاٹ (پرائیویٹ )لمٹیڈ کونصیر آباد، سبی اور چاغی کیلئے دیئے گئے ایف ایم ریڈیو کے تین لائسنس کمپنی کی درخواست پر منسوخ کر دیئے۔

(جاری ہے)

میسرز سیل وژن (پرائیویٹ) لمٹیڈ کی موبائل ٹی وی اور موبائل آڈیو لائسنسوں سے منسوخی کی درخواست کو بھی منظور کر لیاگیا۔

اتھارٹی نے N-Vibeٹی وی کی مینجمنٹ میں تبدیلی اور میسرز سانجھ پریت (پرائیویٹ) لمٹیڈ اٹک کیلئے ایف ایم ریڈیو کی میسرز گیشربرم (پرائیویٹ) لمٹیڈ سکردو کی مینجمنٹ کو منتقلی کی درخواستیں بھی منظور کر لیں۔ اتھارٹی نے پیمرا کے سالانہ بجٹ 2018-19 پر نظر ثانی اور 2019-20کیلئے بجٹ کے تخمینہ کیلئے ایک کمیٹی کی منظوری دی جو سفارشات مرتب کر کے اتھارٹی کی آئندہ اجلاس میں پیش کریگی ۔

اتھارٹی اجلاس چیئرمین پیمرا محمد سلیم بیگ کی صدارت میں منعقد ہواجس میں محمد جہانزیب خان(چیئرمین ایف بی آر)، میجر جنرل (ریٹائرڈ) عامر عظیم باجوہ (چیئرمین پی ٹی ای)، شفقت جلیل (سیکریٹری اطلاعات ونشریات)، میجر (ریٹائرڈ) اعظم سلیمان خان(سیکریٹری داخلہ)، سرفراز خان جتوئی (ممبر سندھ)، نرگس ناصر (ممبر پنجاب)، شاہین حبیب الله(ممبر خیبرپختون خواہ) اور اشفاق جمانی نے شرکت کی۔

Your Thoughts and Comments