جی سی یونیورسٹی میں ترقی،غربت میں کمی اور فوڈ سیکورٹی پر سیمینار

حکومت کو وراثت میں مسائل ملے ،غربت سرکاری اعدادو شمار سے بھی زیادہ ہے‘ڈاکٹرسہیل ملک

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 17 جون2021ء) گورنمنٹ کالج یونیورسٹی لاہور میں ترقی، غربت میں کمی اور فوڈ سکیورٹی کے موضوع پر خصوصی سیمینار ۔صوبائی وزیر خزانہ مخدوم ہاشم جواں بخت نے صدارت کی ،جبکہ نامور ماہرِ معاشیات ڈاکٹر سہیل جہانگیرملک ،جی سی یو وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر اصغر زیدی،صوبائی وزیرِ زراعت حسین جہانیاں گردیزی اور محکمہ پلاننگ اینڈ ڈویلپمنٹ خالد سلطان اور سابق وفاقی سیکرٹری ڈاکٹر شجاعت علی نے بھی خطاب کیا۔

وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر اصغر زیدی کا کہنا تھا کہ جی سی یو نے نامور ماہرین اور پالیسی سازوں کے مابین پینل ڈسکشنز کی تحریک شروع کی ہے جس کا مقصد پالیسی سازی کے طریقہ کار میںبہتری لانا ہے۔ڈاکٹر سہیل ملک کا کہنا تھا کہ اصل میں غربت سرکاری اعدادو شمار سے بھی زیادہ ہے،مسائل سے نکالنے کے لئے پہلے مسائل کو سمجھنے کی ضرورت ہے۔

(جاری ہے)

انہوں نے مزید کہا کہ حکومت کو وراثت میں بے شمار مسائل ملے، جن سے نکلنا آسان نہیں،27 ملین لوگ کورونا وباء کی وجہ سے معاشی مسائل کا شکار ہوئے۔

حسین جہانیاں نے کہا کہ زراعت کو ترجیحی دینے سے غربت کو کم کیا جاسکتا ہے۔اس موقع پر وزیرِ خزانہ نے کہا کہ ترقی کو صرف عمارتوں اور سڑکوں سے جوڑنا درست نہیں انسانی ترقی زیادہ اہم ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ حکومت نے بجٹ میں پسماندہ اضلاع میں صاف پانی اور نکاسی آب کی سہولت فراہم کرنے کے لیی86ارب روپے رکھے ہیں۔آٹے پر سبسڈی کے لیے 85ارب روپے دیئے جا رہے ہیں،اسی سبسڈی سے فائیو سٹار ہوٹلوں کو بھی آٹا مل رہا ہے جو درست نہیں ،آئندہ سال سے ٹارگیٹڈ سبسڈی کا منصوبہ لائیں گے۔

Your Thoughts and Comments