Vitamin B6 Sehat Ke Liye Zaroori

وٹامن 6Bصحت کےلئے ضروری

ہفتہ دسمبر

Vitamin B6 Sehat Ke Liye Zaroori
ڈاکٹر محمد آصف
عام طور پر لوگ وٹامن سی اور وٹامن ڈی کو بہت اہمیت دیتے ہیں اور ان کی کمی کے حوالے سے پریشان رہتے ہیں مگر ایک اور اہم ترین وٹامن کو بھول جاتے ہیں جس کی اچھی صحت کے لیے بہت ضرورت ہوتی ہے۔درحقیقت یہ وٹامن متعدد جسمانی افعال میں مدد دیتا ہے،جیسے مزاج،کھانے کی خواہش ،نیند اور سوچنے کی صلا حیتوں پر اثر انداز ہونا،آپ کو انفیکشن سے لڑنے کے لیے بھی اس کی ضرورت ہوتی ہے۔

اسی طرح کھانے کو جسمانی توانائی کے لیے تبدیل کرنے کے ساتھ ساتھ یہ جسم کے ہر حصے میں خون کے ذریعے آکسیجن پہنچانے میں بھی مدد دیتاہے۔یہ وٹامن بی6ہے جس کی سطح میں کمی کا اثر جسم برداشت نہیں کر سکتا۔اچھی بات یہ ہے کہ وٹامن بی سکس کی کمی کی علامات کافی نمایاں ہوتی ہیں جو درج ذیل ہیں۔

(جاری ہے)


جسمانی توانائی سے محرومی
اگر جسم میں وٹامن بی سکس کی سطح بہت کم ہو جائے تو خون کی کمی ہوجاتی ہے جس سے خون کے سرخ خلیات کی مقدار کم ہوتی ہے،اس کے نتیجے میں تھکاوٹ اور کمزوری کا احساس ہو سکتاہے ،انیمیا کی ایک اور وجہ آئرن کی کمی بھی ہوتی ہے،وٹامن بی 12اور فولیٹ کی سطح میں کمی بھی اس کا باعث بن سکتی ہے۔


جلدی مسائل
اس وٹامن کی کمی کا اثر جلد پر بھی ظاہر ہوتاہے،آپ کا جسم اس کے نتیجے میں کیمیائی تبدیلیوں سے گزرتا ہے جس سے جلد کی پرتیں بن جاتی ہیں،خارش اور سرخ نشان چہرے پر ابھر آتے ہیں۔یہ سرخ نشان وقت کے ساتھ زیادہ سے زیادہ نمایاں ہونے لگتے ہیں،اگر وٹامن کی کمی معمولی ہوتو یہ علامات کئی ماہ یا برسوں نمودار ہوتی ہیں۔


خشک اور پھٹے ہوئے ہونٹ
آپ کا منہ اس وٹامن کی کمی کے بارے میں جاننے کا اچھا ذریعہ ثابت ہوتاہے کیونکہ ہونٹ خشک اور پھٹ جاتے ہیں،زبان سوج سکتی ہے۔
کمزور مدافعتی نظام
وٹامن بی سکس کی کمی کے نتیجے میں جسم کے لیے انفیکشن اور امراض کے خلاف مزاحمت مشکل ترین ہوجاتی ہے اور بار بار بیمار ہونے لگتے ہیں ،کینسر اور دیگر امراض سے بھی وٹامن بی سکس کی سطح میں کمی آتی ہے،جسے بڑھانے کے لیے سپلیمنٹس کا استعمال کیا جا سکتاہے۔


ہاتھ پیر سن ہونا
کیا آپ کی انگلیوں میں سنسنا ہٹ سی محسوس ہوتی ہے؟ہاتھ پیر سن ہو جاتے ہیں؟اس کی وجہ ایک اعصابی مرض ہوتا ہے جو کہ وٹامن بی سکس کی کمی کے نتیجے میں متحرک ہو سکتاہے ،وٹامن بی سکس سمیت دیگر بی وٹامنز جیسے بی12اعصابی نظام کو صحت مند رکھنے کے لیے ضروری ہوتے ہیں۔
حاملہ خواتین میں قے اور متلی
حاملہ خواتین کو کسی اور کے مقابلے میں اپنی غذا میں اس وٹامن کی زیادہ ضرورت ہوتی ہے،اگر انہیں زیادہ متلی یا قے کا سامنا ہوتو ڈاکٹر کے مشورے سے وٹامن بی سکس سپلیمنٹس کا استعمال کرنا چاہیے۔


دماغی دھند
وٹامن بی سکس مزاج اور یاداشت کو ریگو لیٹ کرنے میں مدد دیتاہے،اگر آپ کو اکثر ذہنی الجھن یااداسی کا سامنا ہو،خاص طور پر درمیانی عمر میں،تو یہ اس وٹامن کی کمی کا نتیجہ ہو سکتاہے۔
کینسر
وٹامن بی سکس کی کمی کینسر میں مبتلا ہونے کا خطرہ بڑھانے میں کردار ادا کر سکتی ہے،سائنسدان اس حوالے سے یقینی طور پر تو کچھ نہیں کہتے مگر کچھ تحقیقی رپورٹس میں اس وٹامن کی کمی کو معدے اور غذائی نالی کے کینسر سے جوڑا گیا ہے۔

اسی طرح وٹامن کی کمی سے بریسٹ اورمثانے کے کینسر کا باعث بننے والے خلیات بڑھنے کا امکان ہوتاہے۔
اس کی روزانہ کتنی مقدار درکار ہوتی ہے؟
وٹامن بی سکس کی روزانہ درکار مقدار کا انحصار عمر کے مطابق ہوتاہے،7سے12ماہ کے بچوں کو0.3ملی گرام دی جانی چاہیے،اس کے مقابلے میں50سال سے زائد عمر کے مردوں کو1.7ملی گرام جبکہ خواتین کو 1.5ملی گرام کی ضرورت ہوسکتی ہے،حاملہ خواتین کو 1.9ملی گرام وٹامن کی ضرورت ہوتی ہے۔


حاصل کیسے کیا جائے؟
درحقیقت وٹامن بی سکس کا غذا کے ذریعے حصول بہت آسان ہے،چکن،گائے کے گوشت اور مچھلی بہترین ذرائع ہیں۔اسی طرح آلو اور مکئی سے بھی اس وٹامن کو حاصل کیا جا سکتاہے،ایک کپ چنے روزانہ درکار مقدار کا50فیصد حصہ فراہم کر سکتے ہیں۔مختلف پھلوں میں بھی یہ پایا جاتاہے جبکہ وٹامن بی سکس کے سپلیمنٹس بھی مل جاتے ہیں،مگر ان کا استعمال ڈاکٹر کے مشورے سے کرنا ہی بہتر ہوتاہے اور زیادہ کھانے سے گریز کرنا ضروری ہے کیونکہ زیادہ مقدار سے بھی اعصاب کو نقصان پہنچ سکتاہے،سینے میں جلن یا قے کا سامنا ہو سکتاہے۔


کمی کی وجوہات
وٹامن بی سکس کی کمی کا سامنا بہت کم ہوتاہے مگر اکثر درمیانی عمر کے یا بزرگ افراد میں اس کی سطح بہت کم ہو جاتی ہے جس کی وجہ کم کھانا ہوتاہے یا جسم غذائی اجزاء کو موثر طریقے سے جذب نہیں کر پاتا۔گردوں کے امراض اور دیگر عارضے بھی اس کی وجہ بن سکتے ہیں جبکہ الکحل بھی یہ خطرہ بڑھا سکتاہے۔دراصل آج کے اس دور میں ذہنی تناؤ عام مرض بن چکا ہے اور ہر دوسرا شخص اس کا شکار نظر آتا ہے،ماہرین کے مطابق جسم میں وٹامن بی 6اور آئرن کی کمی دماغی مسائل میں مبتلا کر سکتی ہے۔

میڈیا رپورٹ کے مطابق ماہرین کا کہنا ہے کہ یوں تو مختلف دماغی امراض ومسائل کی بڑی وجہ جینیات،دماغ کی کیمسٹری،ماحولیاتی عوامل اور کوئی طبی مسئلہ یا بیماری ہوتاہے تاہم ذہنی تناؤ کا تعلق جسم میں مختلف غذائی اجزاء کی کمی سے بھی ہو سکتاہے۔ان کے مطابق جسم میں وٹامن بی6اور آئرن کی کمی دماغی مسائل میں مبتلا کر سکتی ہے۔حال ہی میں کی جانے والی ایک تحقیق کے مطابق وٹامن بی6اور آئرن کی کمی دماغ کے اس حصے میں کیمیائی تبدیلیوں میں اضافہ کر دیتی ہے جو شدید گھبراہٹ ،گھٹن محسوس ہونے ،سانس کے تیزی سے چلنے اور بے چینی کا ذمہ دار ہوتاہے۔
تاریخ اشاعت: 2019-12-21

Your Thoughts and Comments