بند کریں
صحت مضامینغذا اور صحتاخروٹ موسم سرماکاانمول تحفہ

مزید غذا اور صحت

پچھلے مضامین - مزید مضامین
اخروٹ موسم سرماکاانمول تحفہ
دماغ کوطاقت وربناتاہے
معالین کے مطابق سردی کاموسم جسم میں تازہ خون بنانے کابہترین موقع فراہم کرتاہے اور سردیوں میں کھائے جانے والے خشک میوے اپنے اندروہ تمام ضروری غذائیت رکھتے ہیں جوجسم میں توانائی اور تازہ خون بنانے کے لئے ضروری ہوتے ہیں۔یہ میوے معدنیات اور حیاتین سے بھرپور ہوتے ہیں اور اسی غذائی اہمیت کے پیش نظر معالحین انہیں”قدرتی کیپسول“ بھی کہتے ہیں۔اطباء بھی خشک میوہ جات کی غذائی اہمیت کوتسلیم کرتے ہیں اور اکثرکومغزیات کادرجہ دیتے ہیں۔س معالحین ک مطابق سردیوں میں جوکچھ کھاؤ وہ جسم کولگتا ہے کیوں کہ اس موسم میں نظام ہضم کی کارکردگی تیزہوجاتی ہے اورگرمیوں کے مقابلے میں زیادہ کام کرنے کودل چاہتاہے۔خشک میوہ جات قدرت کی جانب سے سردیوں کاانمول تحفہ ہیں جوخوش ذائقہ ہونے کے ساتھ ساتھ بے شمارطبی فوائد کے حامل بھی ہیں۔خشک میوے جات مختلف بیماریوں کے خلاف مضبوط ڈھال کے طورپرکام کرنے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔خشک میوے جسم کے درجہ حرارت کوبڑھانے اور موسم سرماکے مضراثرات سے بچاؤ میں اہم کرداراداکرتے ہیں۔اعتدال کے ساتھ ان کااستعمال انسانی جسم کو مضبوط اور توانا بناتاہے۔سردیوں کی سوغاتوں میں ایک خشک میوہ اخروٹ بھی ہے آئیے دیکھتے ہیں کہ اخروٹ انسانی صحت کے لیے کتنامفید ہے؟
سردیوں میں اخروٹ کی گری یعنی اس کامغزنہایت غذائی بخش میوہ تسلیم کیاجاتاہے۔ماہرین غذائیت کے مطابق ایک سوگرام اخروٹ کی گری میں فولاد2.1ملی گرام اور حرارے656ہوتے ہیں۔اس کی بھنی ہوئی گری سردیوں کی کھانسی کودور کرنے کے لئے نہایت مفید ہے۔اخروٹ کوکشمش کے ساتھ استعمال کیاجائے تومنہ میں چھالے اور حلق میں خراش ہوسکتی ہے۔یہ دماغی قوت کے لیے بہت ہی فائدہ مندتسلیم کیاجاتاہے۔اس کے استعمال سے دماغ طاقت ورہوجاتاہے۔ایک حالیہ امریکی تحقیق کے مطابق اخروٹ کااستعمال ذہنی نشونما کے لیے نہایت مفید ہے،اور اس کے تیل کااستعمال ذہنی دباؤ اور تھکان کوکم کرنے میں مدد دیتاہے۔امریکا کی ریاست پنسلوانیامیں کی جانیوالی اس تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ اخروٹ میں موجود اجزاء خون کی گردش کومعمول پرلاکرذہن پر موجود دباؤ کوکم کرنے میں اہم کردار اداکرتے ہیں۔جس کی وجہ سے وہ حضرات جوزیادہ کام کرتے ہیں ان کے ذہنی سکون کے لئے اخروٹ اور اس کے تیل کااستعمال نہایت مفید ثابت ہوتاہے۔ماہرین کے مطابق اخروٹ کااستعمال بلڈپریشر قابو پانے اورامراض قلب کی روک تھام کے لیے بھی نہایت مفید ہے۔
اخروٹ بالوں کوسیاہ کرنے کے لیے بھی معروف ہے اس سے جوخضاب بنایاجاتاہے وہ بازار میں دسیتاب بال رنگنے کے پاوڈر اور محلولوں سے بہ درجہ بابہترہے کیوں کہ ان میں مختلف کیمیکل شامل کیے جاتے ہیں جب کہ اخروٹ کاخضاب یک سرمحفوظ ہے جوبالوں کوصرف سیاہ ہی نہیں ان میں چمک بھی پیداکرتاہے۔اس کی تیاری کاطریقہ ہے کہ اخروٹ کاسبزچھلکا ایک کلولے کراسے آٹھ کلودودھ میں جوش دیں۔بعد میں اتار کراس دودھ کادہی جمائیں،اب اس دہی کوبلوکرگھی حاصل کرلیں اور مناسب مقدار میں بالوں پرلگائیں۔اس نسخہ سے ناصرف بالوں کارنگ کالارہے گابلکہ وہ گرنے سے بھی محفوظ رہیں گے۔

(0) ووٹ وصول ہوئے