بند کریں
صحت مضامینغذا اور صحتدار چینی

مزید غذا اور صحت

پچھلے مضامین - مزید مضامین
دار چینی
شریانوں میں خون جمنے سے روکتی ہے
ڈاکٹر تنویر سرور
کھانے میں استعمال ہونے والا گرم مصالحہ کھانے کی لذت بڑھانے میں اہم کردار ادا کرتا ہے۔ یوں توگرم مصالحے میں شامل تمام مصالحے ہی کوئی نہ کوئی تاثیررکھتے ہیں۔تاہم اس میں شامل دار چینی کی کئی ایک خوبیاں ہیں۔دارچینی کاسب سے بڑافائدہ یہ ہے کہ کھانا خراب ہونے سے بچ جاتا ہے کیونکہ اس کے استعمال سے بیکٹریا کی افزائش میں کمی واقع ہوتی ہے۔
دار چینی دراصل ایک درخت کی چھال ہوتی ہے جوذائقہ کے لحاظ سے شیریں لیکن چبھنے والی ہوتی ہے۔اس کی رنگت ہلکی سیاہی مائل ہوتی ہے۔یہ زیادہ ترہندستان،سری لنکا اور چین میں کاشت ہوتی ہے۔دارچینی کی تین اقسام ہوتی ہیں جواپنے حجم اور رنگت کے لحاظ سے ایک دوسرے سے ذرا مختلف ہوتی ہیں۔ہندی میں اس کو دارچینی اور انگلش میں سینا مون کہتے ہیں۔ ہمارے ہاں سری لنکا اور چین کی بہترین دارچینی استعمال کی جاتی ہے جوخوشبو کے لحاظ سے بھی منفرد ہوتی ہے۔دارچینی کا مزاج گرم ہوتا ہے اور کھانوں کولذیز بنانے میں اس کاکوئی ثانی نہیں۔جس کھانے میں دارچینی کااستعمال کیاجائے وہ نہ صرف ذائقہ دار بلکہ خوشبودار بھی ہوتا ہے۔دار چینی کاکھانوں میں استعمال اس بات کی ضمانت ہے کہ آپ صحت مند رہیں گے کیونکہ یہ بہت سی بیماریوں میں ہمارے لئے مفید ہے۔دارچینی کے درج ذیل فوائد ہیں۔
دار چینی نزلہ وزکام اور متلی میں مدد گارثابت ہوتی ہے۔
دارچینی معدے کی خرابیوں کاازالہ کرتی ہے۔
جن لوگوں کوبدہضمی اور ریاح کی شکایت ہو وہ باقاعدگی سے دار چینی کااستعمال کریں۔
دل کی بیماریوں میں دارچینی کااستعمال فائدہ مندرہتا ہے۔
دارچینی ہمارے جسم میں کولیسٹرول کی سطح کونارمل رکھنے میں مدد گار ہے۔
دارچینی شریانوں میں خون جمنے سے روکے رکھتی ہے۔
دانت درد کی صورت میں ا گر روغن دار چینی روئی سے لگا کردرد والی جگہ رکھی جائے تو درد میں افاقہ ہوتاہے۔
دارچینی شہد کے ساتھ استعمال کرنے سے قوت مدافعت میں اضافہ ہوتا ہے۔
کھانسی اور دمہ کی شکایت کی صورت میں دار چینی کاپاؤڈر شہد کے ساتھ استعمال کریں۔
دارچینی کاپیچش اور اسہال میں استعمال مفید قرار پایا ہے۔
یہ ہماری آنتوں اور معدے پر بھاری نہیں گزرتی اور جلد ہضم ہوجاتی ہے۔
پیٹ پھولنے اور ریاح میں اس کااستعمال قائدہ مند ہوتاہے۔
ایسے خواتین وحضرات جنہیں بھوک نہ لگتی ہو وہ دارچینی کاباقاعدہ استعمال شروع کریں۔
ایسے لوگ جنہیں دودھ ہضم نہ ہوتا ہو وہ ایک لیٹردودھ میں دوسے تین گرام دارچینی ملا کر استعمال کریں دودھ ہضم ہوجائے گا۔
الرجی سے آنے والی چھینکیں دارچینی کے استعمال سے ٹھیک ہوجاتی ہے۔
دردسر میں دارچینی کالیپ ماتھے پہ کرنا فائدہ مندہوتا ہے۔خاص طور پر جب سردیوں میں سردرد کی شکایت ہو۔
دارچینی کااستعمال جریان کے مریضوں کے لئے فائدہ مند ہے۔

(4) ووٹ وصول ہوئے