Hari Bhari Booti

ہری بھری بوٹی

پیر جون

Hari Bhari Booti

ہرا دھنیا دنیا بھر میں وسیع پیمانے پر استعمال ہونے والی مشہور ترین بوٹی ہے۔اپنے منفرد ذائقے،خوشنما رنگت اور تیز خوشبو کی بناء پر تقریباً ہر کھانے میں دھنیے کا استعمال کیا جاتاہے۔کھانے سجانے کے علاوہ یہ بوٹی صحت اور جلد کے حوالے سے بھی ان گنت فوائد رکھتی ہے۔اگرچہ اس پودے کے تمام حصے کھانے کے لاحق ہوتے ہیں لیکن پتوں اور بیج کا استعمال بہت زیادہ نمایاں ہے۔

دھنیا ضروری معدنیات اور وٹامنز حاصل کرنے کا شاندار ذریعہ ہے۔فولاد سے بھر پور ہونے کی وجہ سے ہیمو گلوبن کی سطح بڑھانے اور اینیمیا یعنی خون کی کمی کا تدارک کرتا ہے۔
دھنیے میں موجود میگنیشیم اعصابی نظام کو مناسب اور باقاعدہ طریقے سے فعال رکھتا ہے اور ہڈیوں کی طاقت بڑھاتا ہے ۔دھنیے کا جوس وٹامن A,B,Cکے علاوہ فاسفورس،کیلشیم،فائٹو نیوزیلکس اور فلیوونائیڈز حاصل کرنے کا قدرتی اور موثر ذریعہ ہے۔

(جاری ہے)


دھنیا اینٹی آکسیڈینٹ خصوصیات رکھتا ہے۔صحت مند جسم کو فروغ دینے اور دل سے متعلق خطرات کی روک تھام میں مدد دیتا ہے۔موٹاپے اور ذیابیطس کے لئے بھی حیرت انگیز طور پر کام کرتا ہے مگر ظاہر ہے کہ پیچیدہ امراض میں علاج کو دوا کے ذریعے ہی کیا جاتا ہے لیکن جہاں غذا کی فعالیت کا سوال ہوتو دھنیا کھانا اچھا ہے۔یہ چربی کو کم کرکے وزن گھٹانے میں معاون ثابت ہوتا ہے۔

جب دھنیا تازہ اور کچا کھایا جائے تو یہ شکر کی سطح کو کم کرتا ہے۔کھانسی،حلق کے ورم اور دمے میں دھنیے کے کچے پتے چبانا مفید ہوتا ہے۔اس کے علاوہ دھنیا ہاضمے میں مدد دیتا ہے۔خاص طور پر جب دھنیے کے پتوں کو گرم پانی کے ساتھ استعمال کیا جائے تو غذا کو ہضم کرنے اور معدے میں گیس بننے کے عمل کو روکتا ہے۔سبز دھنیا خامروں اور ہاضمی جوس یعنی انزائمز کے مناسب اخراج میں مدد دیتا اور بھوک کی کمی دور کرتا ہے۔


خوشبو دار دھنیے کا استعمال کیا جائے تو یہ مثانے کے انفیکشنز کو روکنے میں مدد دیتا ہے۔بیکٹیریا اور فنگس پر اینٹی بیکٹیریل اثرات مرتب کرتا ہے۔جلدی مسائل میں ہلدی پاؤڈر کے ساتھ دھنیے کا استعمال مفید ہے۔دھنیا چہرے کے (کیل مہاسوں) کو کم کرتا ہے۔ایگزیما،خشکی اور فنگل انفیکشن سے بھی تحفظ فراہم کرتاہے۔آشوب چشم میں بھی فائدہ دیتاہے۔

خشک اور بھنا ہوا دھنیا جسے مصالحے کے طور پر استعمال کیا جائے مختلف ایسڈز مثلاًPalmitic,Ascorbic,LinoleicاورStericکی موجودگی کی وجہ سے اچھے کولیسٹرول کو بڑھانے اورجسم سے خراب کولیسٹرول کو گھٹانے میں مدد دیتاہے۔اس کے علاوہ دھنیے کا استعمال ہارمونز کے اخراج کو بہتر بنانے اور مخصوص ایام میں ہونے والی بد نظمی کو روکنے میں مدد دیتا ہے۔دھنیے کے بیجوں سے نکلنے والے تیل کو بہترین اینٹی سیپٹک کہا جاتا ہے جس کا استعمال منہ کے السر میں بے حد فائدہ دیتا ہے۔


دھنیے کا فیس ماسک
جلد کو نرم وملائم رکھنے کے لئے آدھا کپ جو کا آٹا،ایک چوتھائی کپ دودھ،ایک چوتھائی کپ کچلا ہوا کھیرا اور مٹھی بھر تازہ دھنیے کو بلینڈ کرلیں۔اس مکسچر کو تقریباً 20منٹ تک چہرے پر لگائے رکھیں اور خشک ہونے پر دھولیں۔
کیل مہاسوں کے لئے
کیل مہاسوں سے نجات کے لئے ایک چائے کا چمچ لیمن گر اس ،دھنیا اور کیمو مائل کو پین میں ڈالیں اور پھر اس پر کھولتا ہوا پانی ڈالیں اور ایک گھنٹے تک ٹھنڈا ہونے دیں پھر ان تمام چیزوں کو بلینڈ کرکے نرم سا پیسٹ بنا لیں۔

اس پیسٹ کو 20منٹ تک چہرے پر لگائے رکھیں پھر نیم گرم پانی سے دھولیں آخر میں چہرے پر عرق گلاب کے چھینٹے ماریں۔
فیس لفٹ ماسک
مٹھی بھر تازہ دھنیا دھو کر دو انڈوں کی سفیدی ،آدھا کپ جو کا آٹا لے کر ان تمام اجزاء کو اچھی طرح بلینڈ کرلیں۔اب منہ دھونے کے بعد اس پیسٹ کو چہرے پر لگالیں اور 10-15منٹ کے بعد جب ماسک سوکھ جائے تو چہرہ دھولیں۔


لپ بام
2چائے کے چمچ دھنیے کا جوس اور ایک چائے کا چمچ لیموں کا رس ملا کر رات کو سونے سے پہلے ہونٹوں پر لپ بام کی طرح لگالیں اور اگلی صبح نرمی سے صاف کرلیں۔چند دنوں کے استعمال سے ہونٹ گلابی اور نرم وملائم ہو جائیں گے۔ روزانہ لپ اسٹک کے استعمال سے ہونٹوں پر پڑنے والے نشانات بھی زائل ہو جائیں گے۔

تاریخ اشاعت: 2020-06-22

Your Thoughts and Comments