بند کریں
صحت مضامینغذا اور صحتناریل

مزید غذا اور صحت

پچھلے مضامین - مزید مضامین
ناریل
بے پناہ خوبیوں کے باعث اس کا پانی دنیا کا مقبول مشروب بن گیا ناریل کے پانی میں پوٹاشیم وافر مقدار میں ہوتا ہے جودماغ کو تازہ اور جلد کوملائم کرتا ہے نیز جسم کو طاقت دیتا ہے
ناریل پیاس بجھانے کے ساتھ ساتھ دماغ کو طاقت دیتا اور جلد کوتروتازہ بناتا ہے۔یہی وجہ ہے کہ دنیا میں اس کی مانگ بڑھتی جارہی ہے۔ترقی یافتہ دنیا یورپ اور امریکہ میں اس وقت ناریل اس کا تیل اورجوس پانی کی فروخت میں بے پناہ اضافہ ہوا ہے۔لندن کے ایک بزنس کنسلٹنگ گروپ نیونٹریشن بزنس Business New Nutritionکے مطابق 2011ء میں یورپی یونین اور امریکہ میں ناریل اور اس کی مصنوعات کی فروخت2016ء میں یہ اور زیادہ بڑھ گئی ہے۔اس وقت انڈونیشا فلپائن اور سری لنکاناریل کے سب سے بڑے برآمدکنند گان ہیں۔
جدید تحقیقات سے جیسے جیسے ناریل کے اجزاء کی خوبیاں سامنے آرہی ہیں ۔اس کی پسند یدگی میں دن بدن اضافہ ہورہا ہے۔ناریل کے پانی میں پوٹاشیم وافر مقدار میں ہوتا ہے جودماغ کو تازہ اور جلد کوملائم کرتا ہے نیز جسم کو طاقت دیتا ہے۔اس خوبی کے سبب یہ اب دنیا کا تیزی سے مقبول ہوتا ہے مشروب بن گیا ہے۔ادارہ نیونٹر یشن بزنس کی ڈائر یکٹر جولین میلنٹن کہتی ہیں کہ دنیا میں ناریل کے پانی کی فروخت دیگر انرجی ڈرٹکس اور انار کے جوس کی فروخت سے زیادہ ہوگئی ہے۔ناریل کا تیل جسے کبھی زیادہ چربی کا حامل ہونے کی بنا ء پر زیادہ پسند نہیں کیا جاتا تھا۔نئی تحقیق کی بدولت اب کھانا پکانے کے لیے کو کنگ ائل اور کوکنگ بٹر کے طور پر یورپ اور امریکہ میں مقبولیت حاصل کر رہا ہے۔
ناریل کا تیل بطور رہیئر آئل مشرق میں صدیوں سے مستعمل ہے۔جدید تحقیق کے نتیجے میں یورپ اور امریکہ میں ناریل کا تیل مختلف جلدی شکایات اور عمر کے ساتھ چہرے پر نمودار ہونے والی جھریوں کی روک تھام(Anti-aging) کریموں ،صابنوں اور شمپوز میں استعمال کیا جارہا ہے ۔ امریکہ میں اس تیل پر مزید تحقیق ہورہی ہے لیکن کچھ کمپنیاں اس کے موجود معلوم خواص سے ہی استفاد کرتے ہوئے اپنی اپنی مصنوعات کو بہتر سے بہتر بنانے میں مصروف ہیں۔ناریل سے کھانے کا تیل اور مکھن تیار کرنے کے ساتھ ساتھ اسے جلد کی حفاظت کا ایک صابن بنانے میں بھی استعمال کیاجارہا ہے۔فلپائن انڈونیشیا کے بعد دنیا کا سب سے بڑا ناریل پیدا کرنے والا ملک ہے ۔کراچی اور ٹھٹھہ کے قرب وجوار کی زمینیں ناریل کی کاشت کے لئے موزوں ہیں ۔یہاں بڑی تعداد میں ناریل کے درخت لگائے جاسکتے ہیں۔ناریل کا درخت بہت زیادہ دیکھ بھال کا متقاضی نہیں ہوتا اور کھاد کے بغیر ہی اگ جاتا ہے۔تجارتی پیمانے پر اس کا کاشت پر سندھ کے کسانوں اور زمینداروں کوتوجہ دینی چاہئے۔

(1) ووٹ وصول ہوئے