Qelola Ki Ehmiyat Wa Afadiyat

قیلولہ کی اہمیت وافادیت

Qelola Ki Ehmiyat Wa Afadiyat
لیاقت علی جتوئی
دنیا کے چند بڑے اور تیزی سے ترقی کرنے والے اداروں گوگل اور ناساکو اس بات کا بخوبی اندازہ ہے کہ دن کے اوقات میں تھوڑی دیر کے لیے سونا یا قیلولہ کرنا،انسان کی صحت اور اس کی کام کرنے کی صلاحیتوں کو بڑھانے کا باعث بنتا ہے ۔انگریزی میں اسے Napیا Power napکہا جاتا ہے ۔
قیلولہ نہ صرف نیند کی کمی کو دور کرتا ہے بلکہ دماغ کو تقویت پہنچاتا،پیچیدہ مسائل حل کرنے کی ذہنی صلاحیت بڑھاتا،یادداشت کو بہتر کرتا اور سیکھنے کی صلاحیت بڑھاتا ہے ۔


قیلولہ کرنے والے افراد ریاضی ،منطق ،ردِعمل ظاہر کرنے اور نشانات کی شناخت کے معاملے میں دیگرافراد کے مقابلے میں بہتر کار کردگی دِکھاتے ہیں۔قیلولہ سے مزاج میں بہتری آتی ہے اور نیند اور تھکاوٹ کا احساس ختم ہو جاتا ہے ۔

(جاری ہے)

صرف یہی نہیں قیلولہ دل ،بلڈ پریشر ،اسٹریس لیول اور حیران کن طور پر وزن پر قابو پانے میں بھی معاون ثابت ہوتا ہے ۔


قیلولہ کا دورانیہ
قیلولہ یا مختصر دورانیہ کی نیند دن کے اوقات میں عموماً دو پہر ایک بجے سے لے کر چار بجے کے درمیان کسی بھی وقت لی جاسکتی ہے۔قیلولہ کا دورانیہ عموماً 10منٹ سے لے کر 30منٹ تک کا ہوتا ہے ۔ایک گھنٹے سے زیادہ سونے کی صورت میں Sleep inertiaپیدا ہونے کا خدشہ ہوتا ہے ،جس کے نتیجے میں جاگنے کے بعد بھی نیند کا احساس رہتا ہے اور انسان سستی محسوس کرتا ہے ۔

سہ پہر چار بجے کے بعد قیلولہ کرنے کی تجویز نہیں دی جاتی ،کیونکہ اس سے رات کی نیند متاثر ہونے کا امکان ہوتا ہے ۔
البتہ ،قیلولہ کے اوقات کارکے حوالے سے کوئی واضح سائنسی اصول موجود نہیں ہے ۔یونیورسٹی آف کیلیفورنیا کی سائنسدان اور Change Your Life!Take a Napکی مصنفہ سارامیڈنِک کہتی ہیں کہ مختلف دورانیہ کے قیلولہ کے مختلف فوائد ہیں۔مثلاً 10سے 20منٹ کا قیلولہ دماغ کی چستی کو بڑھاتاہے،جس کے بعد نیند اور تھکاوٹ کا احساس،تازگی اور تیزی میں بدل جاتا ہے ۔


تاہم وہ 30منٹ کے قیلولہ کو پسند نہیں کرتی ہیں کیونکہ ان کے خیال میں اتنا طویل قیلولہ نیند کو غالب کر دتیا ہے ،جس کے بعد نارمل ہونے میں وقت لگتا ہے ۔سارا میڈنِک 60منٹ دورانیہ کا قیلولہ بھی پسند کرتی ہیں کیونکہ ان کا کہنا ہے کہ یہ ہماری ادراکی یادداشت کو بہتر بنانے میں معاون ثابت ہوتا ہے۔
یہاں یہ بتانا دلچسپی سے خالی نہیں ہو گا کہ ،تحقیق سے ثابت ہوتا ہے کہ چھ منٹ دورانیہ کا قیلولہ ،جسے Ultra.short sleep episodeکہا گیا ہے ،طویل مدتی یادداشت کو بہتر بناتاہے۔


قیلولہ کیسے کام کرتا ہے ؟
جب ہم سورہے ہوتے ہیں تو ہمارا دماغ 90منٹ سے لے کر 120منٹ دورانیہ کے گول دائرے میں مختلف مراحل میں چکر کاٹتا ہے ۔ان مراحل (Stages) میں Non.rapid eye movement (NREMاور Rapid (REMeye movementشامل ہیں۔
NREMنیند کے دوران ہمارا دماغ سست لہروں میں سفر کرتا ہے ،جوکہ نیند کی سب سے گہری قسم ہوتی ہے ۔سست لہروں میں سفر کرنے والی نیند ہمیں حقائق ،مقامات اور چہرے یاد رکھنے میں مدد دیتی ہے اور سارا میڈنِک اسی وجہ سے 60منٹ دورانیہ کے قیلولہ کو پسند کرتی ہیں۔


قیلولہ کو چار اقسام میں تقسیم کیا جا سکتا ہے
ارادی قیلولہ:ارادی قیلولہ کو قبل از وقت قیلولہ(Preemptive nap)بھی کہاجاتا ہے ۔دوسرے الفاظ میں اس کا مطلب یہ ہوا کہ آپ کو ابھی نیند نہیں آرہی لیکن آپ کو اندازہ ہے کہ بعد میں آپ کو نیند کا جھونکا اپنی آغوش میں بہا کر لے جا سکتا ہے اور آپ ایسا ہونے سے پہلے ہی قیلولہ کر لیتے ہیں۔


ایمرجنسی قیلولہ:جیسا کہ نام سے ظاہر ہے یہ اس وقت لیا جاتا ہے جب اچانک سے نیند آپ کہ اپنے غلبے میں لے لے اور آپ اپنے کام پر توجہ مرکوز کرنے سے قاصر ہوں ۔ایمر جنسی قیلولہ خصوصاً ڈرائیونگ کرنے اور خطرناک مشینری پر کام کرنے والے افراد کو ضرور کرنا چاہیے۔
عادی قیلولہ:یہ وہ قیلولہ ہے ،جس کے آپ عادی بن چکے ہوں اور ہر روز مقررہ وقت پر مخصوص وقت کے لیے آرام فرماتے ہوں۔


حسبِ منشاقیلولہ:یہ وہ قیلولہ ہوتا ہے جو آپ دن کے کسی بھی وقت لطف اندوز ہونے کے لیے کرتے ہیں۔
قیلولہ کسے لینا چاہیے؟
غالباً ہر شخص کو قیلولہ کرنے کی ضرورت نہیں ہے ۔ماہرین کے مطابق ،بے خوابی (Insomnia)کے شکار مریضوں کو قیلولہ نہیں کرنا چاہیے،کیونکہ یہ ایسے افراد کی رات کی نیند کو مزید خراب کرنے کا باعث بنے گا اور محسوس ہو گا کہ جیسے اس کے بعد انھیں رات میں سونے کی ضرورت ہی نہیں رہی۔

مجموعی طور پر ،’اگر رات میں آپ اچھی نیند لینے کے بعد صبح تازہ دم اُٹھتے ہیں اور دن بھر چستی اور توانائی کے ساتھ کام کرنے کے قابل ہوتے ہیں تو پھر آپ کو قیلولہ کرنے کی ضرورت نہیں ہے ‘۔
اگر آپ کو ایسا محسوس ہو کہ دن میں آپ کی کام کرنے کی صلاحیت متاثر ہورہی ہے ،آپ حاصل شدہ معلومات کی بنیاد پر تیزی سے عمل درآمد نہیں کر پار ہے ،آپ دن بھر مختلف اوقات میں اونگھتے پائے جاتے ہیں یا پھر آپ کو لگے کہ دن بھر کوئی رکاوٹ ہے جسے آپ عبور نہیں کر پارہے تو آپ قیلولہ سے مستفید ہو سکتے ہیں۔
تاریخ اشاعت: 2019-05-06

Your Thoughts and Comments