بند کریں
صحت مضامینغذا اور صحتسردیوں میں گرما گرم سوپ پییں

مزید غذا اور صحت

پچھلے مضامین - مزید مضامین
سردیوں میں گرما گرم سوپ پییں
سوپ بہت مفید غذا ہے ، خاص طور پر سردیوں میں توا سے ضرور پیناچاہیے ۔ اس میں شامل کی جانے والی اشیاء بہت فائدہ مند ہوتی ہیں۔ یہ اشیا حیاتین (وٹامنز ) ، معدیات (منرلز) اور لحمیات (پروٹینز) سے بھر پور ہوتی ہیں۔ سوپ دنیا کے ہر روایتی پکوان کاحصہ ہے۔
سعدیہ قمر :
سوپ بہت مفید غذا ہے ، خاص طور پر سردیوں میں توا سے ضرور پیناچاہیے ۔ اس میں شامل کی جانے والی اشیاء بہت فائدہ مند ہوتی ہیں۔ یہ اشیا حیاتین (وٹامنز ) ، معدیات (منرلز) اور لحمیات (پروٹینز) سے بھر پور ہوتی ہیں۔ سوپ دنیا کے ہر روایتی پکوان کاحصہ ہے۔ چینی ، اطالوی ، تھائی م پاکستان اور ہندستانی سوپ کی چند اقسام آسانی دستیاب ہیں۔ جن کارن سوپ ، انڈے کا سوپ اور دادہ چکن سوپ وغیر۔ سوپ جسم کو گرم رکھتا ہے ۔ سردیوں کے موسم میں یہ بہت شوق سے پیاجاتا ہے ۔ یہ وزن گھٹانے میں مدد دیتا ہے ۔ سوپ غذائیت سے بھر پور ہوتا ہے ۔ بیماری میں سوپ پینا بہت فائدہ مند ہے ۔ یہ آسانی سے ہضم ہوجاتا ہے ۔ سوپ بنانے میں لاگت بھی کم آتی ہے ۔
سردیوں کے موسم میں گرم گرم سوپ ہوتوہاتھ روکنا مشکل ہوجاتا ہے ۔ عام طور پرسوپ سردیوں میں رات کے کھانے سے پہلے یانزلے زکام کے حالت میں پیاجاتا ہے ۔ طبی طور پر یہ صحت کے لیے فائدہ مند ہے ۔ دنیا بھر میں سوپ کی کئی اقسام ہیں۔ اسے کئی طریقوں سے تیار کیاجاتا ہے ۔ اس میں شامل مسالوں کی کم مقدار اور تیار کرنے کے آسان طریقے کی وجہ سے یہ مغربی ممالک میں کھانوں کا باقاعدہ حصہ بن گیا ہے ۔
سوپ سے متعلق گرم غذا کا مفروضہ غلط ثابت ہوچکا ہے ۔ غذا کے ماہرین بھی اس کی نفی کرتے ہیں۔ ان کے خیال میں سوپ کی تاثیراس وقت گرم ہوتی ہے ، جب اس میں گرم تاثیروالے اجزا شامل کیے جاتے ہیں ۔ سوپ کی ہر قسم گرم نہیں ہوتی۔ سُوپ بنانے کے لیے سبزیاں ، مرغی یاگائے کا گوشت فرائی کرلیں یاپانی میں پکالیں۔ اس طرح سوپ کی غذائیت برقرار رہتی ہے ۔ زیادہ دیرتک فرائی کرنے سے سبزی اور گوشت کے خاص غذائی اجزا ضائع ہوجاتے ہیں۔ سوپ میں حراروں (کیلوریز) کی تعداد بہت کم ہوتی ہے ۔ عام خیال یہ ہے کہ سوپ پی کر بھوک زیادہ لگتی ہے ، یہ اس وجہ سے ہوتا ہے کہ سوپ چوں کہ زودہضم ہوتا ہے اور طبیعت میں بھاری پن پیدانہیں کرتا، لہٰذا کچھ ہی دیر بعد بھوک ستانے لگتی ہے ۔
سبزیوں کاسُوپ :
یوں تو سوپ کی تمام اقسام ہی صحت بخش تعلیم کی جاچکی ہیں، لیکن سبزیوں کے سوپ کی افادیت زیادہ بتائی جاتی ہے ۔ سوپ کی ایک افادیت یہ بھی ہے کہ یہ جسم میں پانی کی ضروری مقدار کو برقرار رکھتا ہے ، نزلے زکام کی صورت میں مرغی کاسوپ بہت فائدہ مند ہوتا ہے ، مگر شرط یہ ہے کہ دیسی مرغی کاگوشت شامل کیا جائے ۔ اس طرح اس کے ذائقے اور لذت میں اضافہ ہوجاتا ہے اور اس کی تاثیر بھی گرم ہوجاتی ہے۔ جب سردی بڑھ جائے تو ناشتے ، دوپہر اور رات کے کھانے میں سوپ کا ایک بڑا پیالہ ضرور پییں۔ یہ جسم کودرکار توانائی فراہم کرتا ہے ۔
سوپ میں چکنائی کم ہوتی ہے ۔ یہ ہضم کے نظام کودرست رکھتا ہے ۔ چھاتی کے سرطان کے امکانات کو کم کرتا ہے ۔ ڈائٹنگ کرنے والے افراد کے لیے سوپ بہترین معاون ہے ۔ سوپ کم وقت میں وزن کم کرنے کی صلاحیت رکھتا ہے ۔ بچوں کو مختلف قسم کے سوپ پینے کی عادت ڈالیں۔ انھیں ہفتے میں دوتین بار مختلف قسم کے سوپ پلائیں ، خاص طور پر سردیوں میں۔ غذا کے ماہرین وان کم کرنے کے لیے جو غذائیں منتخب کرتے ہیں، ان میں سوپ ضرور شامل ہوتا ہے ۔ آپ سردی کے موسم میں سوپ کی اپنی روزانہ کی غذاؤں کالازمی حصہ بنالیں ۔

(0) ووٹ وصول ہوئے