Kiwi Phal Bhi Khayiyae

کیوی پھل بھی کھائیے

Kiwi Phal Bhi Khayiyae

حکیم شجاع احمد طاہر
کیوی پھل جس کا اصل وطن آسٹریلیا یا نیوزی لینڈ بتایا جاتا ہے ،غذائی اجزا سے بھر پور ہونے کی وجہ سے دنیا بھر میں خصوصی شہرت رکھتا ہے ۔کیوی پھل میں خوردنی شکر کے علاوہ پوٹاشیئم،فاسفورس ،تانبا ،کیلسیئم ،ریشہ اور مینگنیز وافر مقدار میں ہوتے ہیں ۔اس کے علاوہ حیاتین سی اور ای(وٹامنز ج اور ھ)کافی مقدار میں پائی جاتی ہیں ۔

کیوی میں حرارے (کیلوریز)کم ہوتے ہیں۔ کیوی پھل درخت پر لگتا ہے ۔
درخت کے پتے انجیر کے پتوں سے مشابہ ہوتے ہیں ۔
یہ ہلکے براؤن رنگ کا ہوتا ہے۔ اوپر والی تہ کے چھلکے پر باریک باریک رواں ہوتا ہے۔ کیوی پھل کے اندر باریک کالے رنگ کے بیج ہوتے ہیں ۔اس کو کاٹنے پر اندر سے پیلے رنگ کا گودا نکلتا ہے ،جو شیریں اور خوش ذائقہ ہوتا ہے ۔

(جاری ہے)

کیوی پھل میں قدرت نے بے پناہ خوبیاں رکھی ہیں۔

صحت برقرار رکھنے کے لیے چین،نیوزی لینڈ ،آسٹریلیا اور یورپ وغیرہ کے لوگ اسے شوق سے کھاتے ہیں۔ ان ممالک میں کیوی پھل سے تیار شدہ بے شمار مصنوعات بھی بازار میں ملتی ہیں ۔
کیوی پھل مرد وخواتین دونوں کے لیے فائدہ مند ہے ۔اس پھل کو روزانہ کھانے سے پٹھے مضبوط ہو جاتے ہیں۔ اسے کھانے سے غذا کی نالی کو طاقت ملتی ہے ۔اس میں شامل لحمیات(پروٹینز )غذا ہضم کرنے میں مدد دیتی اور آنتوں سے غلیظ مادّوں کو نکال کر صحت مند بناتی ہیں۔

عصر حاضر کے خطر ناک مرض سرطان سے بچاؤ کے لیے کیوی پھل عطیہ خداوندی ہے ۔کیوی میں حیاتین ج(وٹامن سی)ہوتی ہے ،جس کی وجہ سے قوتِ مدافعت بڑھ جاتی ہے ۔
کیوی پوٹاشےئم سے بھر پور پھل ہے ،اس لیے سرطانِ خون کو قابو میں رکھنے میں مفید ہے ۔یہ پھل امراضِ قلب دور کرنے میں سود مند ہے۔بلڈ پریشر کو قابو میں رکھتا ہے ۔ماہرینِ صحت کہتے ہیں جن افراد کو گہری نیند نہ آتی ہو ،وہ سونے سے قبل کیوی پھل کھائیں، انھیں جلد گہری نیند آجائے گی۔

کیوی ذہن کو پُر سکون کرکے قدرتی نیند طاری کرتا ہے ۔ذیابیطس میں مبتلا افراد کیوی پھل کھاکے اس مرض کو قابو میں کر سکتے ہیں۔ اس پھل میں پایا جانے والا فائٹو کیمیکل(PHYTOCHEMICAL) نامی جزو غدئہ قدامیہ (پروسٹیٹ گلینڈ)اور پھیپھڑوں کے سرطان کی روک تھام میں موٴثر تسلیم کیا گیا ہے ۔
کیوی پھل معدے ،جگر اور مثانے کی گرمی دور کرکے مردانہ طاقت میں اضافہ کرتا ہے۔

مرضِ سوزاک (GONORRHEA)،سیلان الرحم (لیکوریا)اورسوزشِ رحم دور کرنے میں فائدہ مند ہے ۔کیوی پھل فربہ افراد کے لیے بہت سود مند ہے ،اس لیے کہ یہ فربہی کا خاتمہ کرتا ہے ۔پرانے سر کے درد سے نجات دلاتا اور بالوں کا گرنا روکتا ہے ۔بصارت کو تیز کرتا ہے ۔جلد کو ملائم ،شاداب اور چمکد دار بنانے میں یہ پھل اپنا ثانی نہیں رکھتا۔
کیوی پھل حسب طاقت ایک وقت میں دو کھائے جا سکتے ہیں ۔

اس کے کھانے کا بہترین وقت صبح دس بجے سے لے کر رات سونے سے دو گھنٹے قبل تک ہے۔مزاجاً کیوی سردوخشک پھل ہے ،اس لیے بعض افراد میں قبض کا باعث بنتا ہے ۔معجون بنانے کے لیے اسے باریک چھیل کر گودہ نکال کر گرائنڈ کر لیا جاتا ہے ۔ذیل میں کیوی کے گودے سے معجون بنا نے کی ترکیب دی جارہی ہے:
اشیا:گودا650گرام ،قندِ سفید 100گرام اور الائچی خورد10گرام لے لیں۔

پھر قندِ سفید کو پانی میں الائچی خوردملا کر پکائیں۔جب شربت سے معمولی گاڑھا ہو جائے تو ایک چٹکی لیموں کا ست ملا کر چولھے سے اتارلیں ۔اسی شیرے میں کیوی کا گودا ملا کر محفوظ کرلیں ۔صبح وشام ایک چمچہ معجون کیوی کھانے کے بعد کھالیا کریں ۔یہ معجون انسان کو چاق چوبند رکھتا ہے ،غذا کو جزوبدن بناتا ہے اور اندرونی اعضا کے ورموں کو ختم کرکے توانا کرتا ہے۔


کیوی پھل سے شیک بھی بنایا جا سکتا ہے ۔شیک کو صبح کے وقت نوش کرنے سے تمام دن انسان چست رہتا ہے ۔پیشاب آور ہونے کی وجہ سے یہ بدن سے غلیظ مادّے خارج کرتا ہے ۔کیوی پھل جو پہلے نایاب تھا ،لیکن اب جدید کاشت کاری کی بدولت پاکستان کے ہر شہر میں بہ آسانی دستیاب ہے ۔کیوی پھل ہمیشہ نرم خریدیں،اس لیے کہ سخت کیوی پھل ذائقے میں اچھا نہیں ہوتا ۔

تاریخ اشاعت: 2019-04-13

Your Thoughts and Comments