Lemon Sabziyon Ka Badshah - Article No. 2860

Lemon Sabziyon Ka Badshah

لیموں سبزیوں کا بادشاہ - تحریر نمبر 2860

اس کے استعمال سے بدن جراثیم سے پاک ہوتا رہتا ہے

منگل 9 جولائی 2024

اشفاق احمد قاضی
لیموں عام سبزیوں کی طرح نہیں ہے۔جیسے آم پھلوں کا بادشاہ ہے ویسے ہی لیموں کو سبزیوں کا بادشاہ کہا جا سکتا ہے۔اس کے استعمال سے بدن جراثیم سے پاک ہوتا رہتا ہے۔لیموں الہامی دوا ہے۔ہر فرد کے لئے قدرت کی بڑی نعمت ہے۔لیموں کے رس کو اگر زیتون کے تیل کے ساتھ دو سے تین ماہ استعمال کروایا جائے تو پتے کی پتھری ختم ہو جاتی ہے۔
لیموں السر میں مارجنل اینٹی السر کے طور پر کام کرتا ہے۔لیموں کے رس میں موجود پوٹاشیم اور کیلشیم خون میں موجود سفید خلیے پیدا کرنے کے لئے موٴثر ہے۔جس کی وجہ سے بدن کا فنی نظام مضبوط ہوتا ہے۔لیموں کچھ بیماریوں کو ظاہر ہونے سے روک دیتا ہے۔لیموں میں پایا جانے والا پاکیزہ کیمیائی مرکب لیمونین جوڑوں کے درد کو ختم کرنے اور یورک ایسڈ کو کم کرنے کے لئے بہترین دوا ہے۔

(جاری ہے)

سانس کی نالی کے انفیکشن میں موٴثر ہے۔لیموں میں پایا جانے والا ایک کیمیائی مرکب ایلفا پاین ہے جو اینٹی آنفلوآنزا ہے۔آنفلوآنزا میں اس کا استعمال مثبت نتائج دیتا ہے۔
لیموں کو دل کو ٹانک تصور کیا جاتا ہے۔یہ خون کے بہاوٴ میں مدد دیتا ہے۔کولیسٹرول اور بلڈ پریشر کو کم کرتا ہے۔دریدوں کے تنگ ہونے کے عمل کو روکتا ہے۔خون میں سرخ خلیوں کو بڑھاتا ہے۔
لیموں سکنجبین کی شکل میں استعمال کرنے سے سینے کی جلن کو پیدا نہیں ہونے دیتا۔لیموں کے اندر نور بھری پوٹاشیم (80mg پر لیموں) کی مقدار دماغ اور اعصابی خلیوں کی نشوونما میں بہت مدد دیتی ہے۔کیلشیم (26gm پر لیموں) کی موجودگی دانتوں اور ہڈیوں کو مضبوط کرتی ہے۔دمہ، نزلہ، زکام، خناک کے جراثیم کو ختم کرتا ہے۔اہم نقطہ نہ ہے کہ لیموں کا جوس سکنجبین کی شکل میں لینے سے یہ آکسیجن اور کیلشیم کی مقدار کو درست رکھتا ہے۔
اگر لیموں کو پانی میں گھول کر استعمال کیا جائے تو گردے کی پتھری کو حل کرنے میں اہم کردار ادا کرتا ہے۔آدھے لیموں کا رس روزانہ استعمال کرنے سے انسان بہت سے امراض سے محفوظ رہتا ہے۔لیموں موٹاپے کو کم کرتا ہے۔
گرمی شروع ہے ہر فرد تسلسل سے لیموں کا استعمال جاری رکھے۔لیموں بدہضمی کو ختم کرتے ہوئے بدن سے تکلیف دہ اذیت ناک مادوں کو فضاء میں تحلیل کرتا ہے۔لیموں کی ناقدری جاری ہے۔معمولی سبزی میں شمار کیا جاتا ہے۔قدرت نے اس میں سٹرک ایسڈ، کیلشیم، پوٹاشیم، فولاد، فاسفورس اور وٹامنز اے بی سی پیدا کیے ہیں۔گوشت بنانے والے نشاستہ دار اور روغنی اجزاء کا نادر مجموعہ بنایا۔مقطر پانی اور حیات بخش وٹامن سی کا تو یہ خزانہ ہے۔

Browse More Ghiza Kay Zariay Mukhtalif Bemarion Ka Elaaj