Super Foods - Aap Ke Fridge Mein Hain - Article No. 2624

سپر فوڈز ․․․ آپ کے فریج میں ہیں - تحریر نمبر 2624

بدھ 18 جنوری 2023

Super Foods - Aap Ke Fridge Mein Hain - Article No. 2624
اپنی اچھی صحت کے لئے ہمیں پرجوش ہونا بھی چاہئے کیونکہ توانائی ہے تو زندگی ہے وگرنہ بیمار ہو کر اپنے پیاروں کو پریشان کرتے ہیں اور خود بھی اذیت اٹھاتے ہیں۔سپر فوڈز کے بارے میں جس قدر جانکاری مغرب والے رکھتے ہیں ہم پاکستانی اتنا نہیں رکھتے تاوقتیکہ گھر میں کوئی موذی یا مہلک مرض میں مبتلا ہو جائے۔کیا یہ دانشمندی کا تقاضا ہے؟آپ اور ہمیں اپنی زندگی اور تندرستی کے لئے باقاعدہ منصوبہ بندی آج ہی سے کرنی شروع کر دیں۔

اس سے پہلے کہ دیر ہو جائے اور مرض پیچیدہ ہو جائے۔
سپر فوڈز کے اجزاء کیا ہوتے ہیں؟ان میں ایسی کیا چیز ہے جو ہمیں ”مطلوبہ“ بناتی ہے؟یہ سوال آپ کے ذہن میں اُبھر سکتا ہے جس کا سادہ سا جواب یہ ہے کہ ان میں تمام ضروری غذائی اجزاء اور عناصر کی اعلیٰ سطح مثلاً پروٹین،معدنیات،وٹامنز،ضروری فیٹی ایسڈز اور اینٹی آکسیڈنٹس موجود ہوں۔

(جاری ہے)


کچھ سپر فوڈز غیر ملکی یعنی درآمد شدہ ہوتے ہیں کیا یہ بات درست ہے؟دوسرا سوال بھی کچھ کم اہمیت نہیں رکھتا واقعی کچھ سبزیاں ہمارے یہاں کمیاب اور غیر مقبول ہیں مثلاً بروکولی وغیرہ اس کے ساتھ ساتھ Yams اور Acai بیریاں بھی عام طور پر نہیں کھائی جاتیں۔
پاکستان کے ہیلتھ فوڈ اسٹورز میں یہ کمیاب سپر فوڈز دستیاب ہیں۔Acai بیر ایمیزون کے جنگلات میں اُگنے والے بیر ہیں۔

اس طرح گوحی بیری ایک نایاب پھل یہ بھی سپر مارکیٹ سے مل سکتا ہے۔اگر یہ درآمد شدہ غذائیں دستیاب نہ ہوں تو اپنے یہاں پھلیوں کی کئی اقسام ہیں۔ٹماٹر،شکر قندی،بلیوبیری،اسٹرابیری،کوئنو،مچھلیاں،ڈارک چاکلیٹ 77 فیصد سے زائد کوکو کے ساتھ اور ہری سبزیاں موجود ہیں۔
یہ تمام سپر فوڈز کی چند مثالیں ہیں جو بھرپور غذائیت کی حامل ہیں۔ان کے علاوہ پھل عام دستیاب ہوتے ہیں۔


اگر ہم صحت مند ہونے کا تہیہ کر لیں تو پراسیسڈ فوڈز یا کم صحت بخش غذاؤں کی مقدار بتدریج کم کرکے ان سپر فوڈز کی طرف مائل ہو سکتے ہیں۔جسم کو عمدہ غذائیت ملنی چاہئے تاکہ قوت مدافعت بڑھے۔
ایسے روزمرہ کے مینو کے حصے کے طور پر سپر فوڈز کا استعمال نہ صرف ان کی اہمیت کو پہچاننے کی لگن بڑھاتا ہے بلکہ مختلف سپر فوڈز سے ملنے والے فوائد کو جانچنے میں بھی مدد ملتی ہے۔تو پھر کیوں نا آج ہی سے مارکیٹ میں انہیں تلاش کریں اور اپنی پسندیدہ ریسپی دیکھ کر کوئی لذیذ کھانا تیار کیا جائے۔
تاریخ اشاعت: 2023-01-18

Your Thoughts and Comments