Cholera - Article No. 2202

ہیضہ - تحریر نمبر 2202

جمعرات 15 جولائی 2021

Cholera - Article No. 2202
ہیضہ آنتوں کے امراض میں ایک خطرناک مرض ہے۔یہ بیماری نچلی چھوٹی آنت کو متاثر کرتی ہے۔اس کا حملہ عموماً موسم برسات میں ہوتا ہے۔ہیضے کا اگر بروقت اور درست علاج نہ کرایا جائے تو یہ مریض کی ہلاکت کا باعث بھی بن سکتا ہے۔اس کی علامات میں الٹیاں،ٹانگوں میں درد،پانی جیسے دست اور جسمانی کمزوری وغیرہ ہیں۔طبی معالجین سے علاج کے علاوہ گھریلو ٹوٹکوں،سبزیوں اور پھلوں سے بھی استفادہ کیا جاتا ہے،جن میں سے چند کا تذکرہ ذیل میں کیا جا رہا ہے۔


پانی کی کمی اور کمزوری کے تدارک کے لئے مالٹے کا رس مفید ہے۔مالٹے کے چھلکے بھی اس بیماری میں فائدہ مند ہیں۔دو سے تین مالٹوں کے صرف چھلکوں کو باریک کاٹ کر نصف لیٹر پانی میں ابال لیں۔یہ پانی ٹھنڈا کرکے ایک گلاس پانی میں ایک کھانے کا چمچ شہد ملا کر پئیں۔

(جاری ہے)


شہد ہیضے کا ایک اچھا علاج ہے۔چار چائے کے چمچ شہد کو ایک کپ گرم پانی میں ملائیں،اسے ٹھنڈا کرکے پئیں،پانی کی کمی دور کرنے کے لئے مفید ہے۔


ایک گلاس لسی میں دو چائے کے چمچ پسی ہوئی ادرک ملا کر دن میں تین سے چار مرتبہ مریض کو پلائیں۔ایک گلاس چھاچھ میں ایک چائے کے چمچ کے برابر پسا ہوا زیرہ اور ایک چٹکی کالا نمک ملا کر دن میں تین مرتبہ ایسے مریض کو پلانا مفید ہوتا ہے،مرض میں افاقہ ہو گا۔
ایک چائے کا چمچ اجوائن کو ایک پیالی پانی میں ابالیں،ٹھنڈا کرکے اچھی طرح ہلانے کے بعد مریض کو پلانا مفید ہے۔

مرض کی ابتداء میں، اجوائن کے تیل کے دو قطرے پانی میں ملا کر مریض کو پلانے سے افاقہ ہوتا ہے۔
بلیک بیری یا رس بھری کے پتوں کی چائے پینا مفید ہے۔
کریلے کے پتوں اور پیاز کا رس نکال کر ملا لیں،نصف پیالی مذکورہ رس میں ایک چائے کا چمچ لیموں کا رس ملا کر پئیں۔
املی کے بیج بھوننے کے بعد چھلکا اتار کر پیس لیں۔ایک چوتھائی گرام سفوف نصف پیالی پانی کے ساتھ کھائیں۔


اسٹرابیری کے پتے ابال کر دو چائے کے چمچ ایک گھنٹے کے وقفے سے پئیں۔
ہیضے کے مریض کو بھوک اور پیاس کی حالت میں زیادہ سے زیادہ سنگترے کا رس پلائیں،اس سے جسم میں پانی کی کمی دور ہوتی ہے،مرض میں افاقہ ہوتا ہے۔
انار کا استعمال اس بیماری میں مفید ہے،مریض کو دن میں دو سے تین مرتبہ انار کا رس پلانا مفید ہے۔
ایک گلاس ناریل کے پانی میں ایک چائے کا چمچ لیموں کا رس ملا کر دن میں تین مرتبہ پینے سے افاقہ ہوتا ہے۔

ایک گلاس ناریل کے پانی میں ایک پیالی کھیرے کا رس ملا کر پلانا مریض کے لئے مفید ہے۔
ادرک کا رس نکال کر اس میں پودینے اور ہرا دھنیا کا رس چھان کر ملا لیں،اس میں نصف لیموں کا رس بھی شامل کر لیں۔دن میں دس دس قطرے ہر پندرہ منٹ کے وقفے سے مریض کو پلانے سے فائدہ ہوتا ہے۔ادرک کا چھوٹا ٹکڑا پیس کر ایک چائے کا چمچ شہد ملا کر مریض کو کھلانا مفید ہے۔

ایک پیالی پانی میں ایک گرام کے قریب ادرک کے ٹکڑے کاٹ کر ڈالیں،اس میں دس عدد کالی مرچ،ایک گرام تلسی کے بیج اور پودینے کی آٹھ سے دس پتیاں ملا کر چند منٹ تک ابالیں۔اسے ٹھنڈا کرکے نصف چائے کا چمچ شہد ملا کر مریض کو پلانا مفید ہے۔
ایک گٹھی پودینے کو ایک لیٹر پانی میں ابالیں۔ٹھنڈا کرکے مریض کو وقفے وقفے سے پلانے سے مرض میں افاقہ محسوس ہوتا ہے۔
تاریخ اشاعت: 2021-07-15

Your Thoughts and Comments