بند کریں
صحت مضامینمضامینجلدی امراض

مزید مضامین

پچھلے مضامین - مزید مضامین
جلدی امراض
جلد جراثیم کے خلاف ہمارے جسم کی پہلی دفاعی لائن ہے جب یہ لائن کمزور پڑجاتی ہیں یا کہیں سے ٹوٹ جاتی ہیں تو جراثیم فوراً اس کے اندر گھس کر پھوڑا بنادیتے ہیں
جلدی امراض:
جلد کی بیماریوں کی فہرست بہت طویل ہے یہ بیماریاں شاذ ہی مہلک ہوتی ہے لیکن انسان کی زندگی اجیرن کردیتی ہے یہاں صرف چند اہم جلدی امراض کا ذکر کیا جائے گا جو ہمارے ہاں بہت عام ہے اور جن کے لیے گھریلو علاج موثر ثابت ہوسکتا ہے۔
پھوڑے: جلد جراثیم کے خلاف ہمارے جسم کی پہلی دفاعی لائن ہے جب یہ لائن کمزور پڑجاتی ہیں یا کہیں سے ٹوٹ جاتی ہیں تو جراثیم فوراً اس کے اندر گھس کر پھوڑا بنادیتے ہیں جلد پر لگنے والے زخم بلکہ معمولی خراشیں پھوڑے کا روپ دھار لیتی ہیں عام لوگوں کی نسبت ذیابیطس اور گردے کی بیماریوں کا شکار ہونے والے یا جسمانی طور پر کمزور لوگوں کو زیادہ پھوڑے نکلتے ہیں جلد پر نکلنے والا ایک پھوڑا عموماً اردگرد کے علاقے میں جراثیم پہنچا کرکئی پھوڑے پیدا کردیتا ہے مریض کا تولیہ وغیرہ استعمال کرنے والے دوسرے لوگوں کو بھی پھوڑے نکل سکتے ہیں صفائی سے غفلت پھوڑوں کے لیے راہ ہموار کرتی ہیں بہت بڑے پھوڑے کو کارینکل کہا جاتا ہے کارینکل کی جڑیں بہت گہری اور حلقہ بہت وسیع ہوتا ہے اس سے عموماً مریض کو بخار ہوجاتا ہے اور مریض کمزور ہونے لگتا ہے کارینکل مہلک بھی ثابت ہوسکتا ہے اور اگر اس کا مناسب علاج نہ کیا جائے تویہ اور بڑا ہوجاتا ہے اس کے علاج کے لیے کسی ڈاکٹر کی خدمات حاصل کریں۔
علاج: صفائی بہترین حفاظتی تدابیر ہے جسم پر آنے والی معمولی سی خراش کا بھی نظر انداز نہ کریں اس پر آئیوڈین،سپرٹ یا ڈیٹول لگادیں،خصوصاً گرم مرطوب موسم جولائی،اگست میں ہلکی سی خراش بھی خطرناک پھوڑا بن سکتی ہے پھوڑا نکل آنے کے بعد اسے صاف ستھرا رکھیں اوراسی پر آئیوڈین یا سپرٹ لگاتے رہیں تاکہ یہ جلد کے دوسرے حصوں تک جراثیم نہ پھیلا سکے مزید پھوڑوں سے بچنے کے لئے پنسلین کے انجکشن لگوائے جاسکتے ہیں لیکن اسے پہلے جراثیم کی نوعیت ٹیسٹ کرالینا زیادہ مناسب ہوتا ہے جب ایک پھوڑا نکل آئے تو اسے پکنے دیں حتیٰ کہ اس میں پیپ پڑجائے پھوڑے پر لپری(پولٹس)وغیرہ باندھنا طبی نقطہ گرد کی جلد نرم ہوجاتی ہے اور پھوڑے کو بڑھنے کا موقع مل جاتا ہے تاہم پھوڑے کو جلد کے لیے گرم کپڑے وغیرہ کی ٹکور کی جاسکتی ہے جب پھوڑا رہنے لگے تو اسے صاف کرکے اس پر ٹیرامائیسین کریمTerramycin Cream لگائیں مریض کا تولیہ یا اس کے پھوڑے سے چھونے والی کوئی اور چیز صحت مند شخص کو استعمال نہیں کرنی چاہیے مریض کو بھی اپنا پھوڑا اور اس کی قریبی جلد علیحدہ کپڑے سے صاف رکھنی چاہیے صحت کی کمزوری کی صورت میں صحت بہتر بنانے کی کوشش کریں مریض کو وافر مقدار میں لمحی غذائیں گوشت،انڈا،دودھ مچھلی اور وٹامن سی استعمال کرنے چاہییں اگر کوئی اور بیماری پھوڑوں کا باعث بن رہی ہو تو اس کا علاج کرائیں ناک یا اوپری ہونٹ کے پھوڑے سے خصوصاً ہوشیار رہیں کیونکہ یہ دماغ میں جراثیم پہنچا کر مہلک ثابت ہوسکتے ہیں۔

(0) ووٹ وصول ہوئے