بند کریں
صحت مضامینمضامینپوری نیند لیں

مزید مضامین

پچھلے مضامین - مزید مضامین
پوری نیند لیں
اس کی کمی سے صحت کوسنگین خطرات لاحق ہوجاتے ہیں
اگر آپ کی گھڑی کاالارم صبح بج بج کرچپ ہوجائے اور پھر بھی آپ کئی باراونگھنے پرمجبور ہوجائیں یاخود کو سستی سے بچانے اور توجہ مرکوزرکھنے کے لیے کیفین کاسہارالینے پرمجبور ہیں توآپ ممکنہ طورپر نیند کی کمی کا شکار ہیں۔ حالیہ تحقیق میں اس بات کا انکشاف ہواہے کہ یہ چیز آپ کی صحت پرمنفی اثرات مرتب کر سکتی ہے۔ ماہرین کے مطابق نیند دماغ کے لیے جراثیم کش ہے جودماغی امراض کے زہریلے اثرات کوجسم سے نکال باہرکرتی ہے جبکہ نیند کی کمی جسم پرمنفی اثرات مرتب کرسکتی ہے۔
نیند کی کمی کے فوری اثرات توتوجہ کوزکرنے سے محرومی اور بیزاری کی صورت میں نکلتے ہیں جبکہ آپ زیادہ جذباتی اور ست بھی ہوجاتے ہیں اور ایک رات کی اچھی نیندان مسائل سے نجات بھی دلا دیتی ہے۔ مگر کیا آپ کومعلوم ہے کہ اوسط دورانیے یعنی 7گھنٹے کی نیند صرف ایک ہفتے تک نہ لینے سے آپ کوکیا خطرات لاحق ہوسکتے ہیں؟ یہ بات درست ہے کہ ایک رات کی نیند کی کمی سے کوئی سنگین خطرہ لاحق نہیں ہوتا مگرایک ہفتے کی کمی 700سے زائد جنیاتی تبدیلیوں کاباعث بن جاتی ہے اور اس کے علاوہ چند دیگر سنگین خطرات کے بارے میں جانیے جوآپ کی نیند اڑانے کی بجائے بستر پر جانے پرمجبور کرسکتے ہیں۔
فالج کاخطرہ:
ایک تحقیق کے مطابق بغیر کسی روایتی خطرے جیسے موٹاپے یاخاندانی تاریخ کے علاوہ، نیند کی کمی بھی فالج کاخطرہ بڑھا دیتی ہے، تحقیق میں بتایاگیا ہے کہ جولوگ 6گھنٹے سے کم نیند کومعمول بنالیتے ہیں۔ ان میں فالج کاخطرہ چارگناتک بڑھ جاتاہے۔
موٹاپے کاامکان:
بہت کم نیند لوگوں کے اندرجنک فوڈیاموٹاپے کا باعث بننے والی خوراک کااستعمال بڑھا دیتا ہے، جس کی وجہ سے نیند پوری نہ کرنے کے باعث جسم کے جنیاتی نظام میں آنے والی تبدیلیاں ہوتی ہیں۔ 6گھنٹے یا اس سے کم نیند کی عادت سے بھوک کاباعث بننے والے ہارمون میں تبدیلی آتی ہے اورآپ کے لیے محدود مقدار میں غذااستعمال کرنا ناممکن ہوجاتاہے۔
ذیابیطس کاخطرہ:
ایک تحقیق کے مطابق نیند کی کمی اور انسولین میں مزاحمت کے درمیان تعلق موجودہے جوکہ ذیابیطس کا خطرہ بڑھانے والابڑاسبب ہے نیند کی کمی کے شکار افراد میں انسولین کی مزاحمت بہت زیادہ ہوتی ہے جس کامطلب یہ ہوتاہے کہ جسم انسولین کوموثر طریقے سے استعمال نہیں کرپاتا، جس کانتیجہ ذیابیطس کی شکل میں ہی نکلتاہے۔
یاداشت میں کمی:
آپ غورکریں تومعلوم ہوگاجن دنوں میں آپ زیادہ تھکے ہوئے ہوتے ہیں چیزوں کوزیادہ بھولتے ہیں تاہم نیند کی کمی یاداشت کی اس کمزوریکومستقل مسئلہ بنادیتی ہے۔ آپ کی نیند میں جتنی کمی ہوگی یاداشت کے ذخیرہ کرنے کی صلاحیت بھی اتنی ہی گھٹ جائے گی۔
ہڈیوں کی کمزوری :
کم زاکم چوہوں پرہونے والے تجربات میں نیند کی کمی اور ہڈیوں کی کمزوری کے درمیان تعلق پایاگیا ہے انسانوں میں ا سکاتجربہ تونہیں ہوامگر نیند کی کمی سے ایساہونے کاامکان بہت زیادہ ہوتاہے۔
کینسر کاخطرہ :
ایک تحقیق کے مطابق کم اور خراب نیند سے مخصوص اقسام کے کینسر کاخطرہ بڑھ جاتاہے، خاص طورپر 6 گھنٹے سے کم کی نیند سے بریسٹ کینسر اور دیگر کاخطرہ بڑھادیتی ہے۔
دل کی تکلیف :
نیند کی کمی سے پیداہونے والاتناؤ جسم میں ایسے کیمیکلز اور ہارمونزکی پیدوارھی بڑھادیتاہے جو امراض قلب کاسبب بن سکتے ہیں، ایک تحقیق کے مطابق رات میں6یااس سے کم گھنٹوں کی نیند سے امراض قلب میں مبتلا ہونے یااس سے موت کا خطرہ 48فیصد تک بڑھ جاتاہے۔
ہلاکت کاسبب :
صرف دل کے مسائل ہی نیند کی کمی سے ہلاکت کاسبب بنتے، درحقیقت نیند کی کمی کم عمری میں کسی بھی وجہ سے ہلاکت کاسبب بن سکتی ہے، ایک تحقیق کے مطابق کم نیند لینے والے مردوں میں اگلے 14برس میں کسی بھی بیماری سے ہلاکت کاخطرہ بڑھ جاتاہے۔

(0) ووٹ وصول ہوئے