بند کریں
صحت مضامین

مضامین

نمونیا، ایک وبائی مرض

نمونیا ایک طرح کا وبائی مرض ہے، جس کی وجہ سے پھیپڑوں میں ہوا کی تھیلیاں اور چھوٹی چھوٹی نالیاں سوزش سے متاثر ہوجاتی ہیں اور ان میں رقیق مادہ بھر جاتاہے

چھینک اور کھانسی کے جراثیم کا پھیلاؤ

کیا آپ نے کبھی غو رکیا ہے کہ آپ کی چھینک اور کھانسی کی مار کہاں تک ہوتی ہے اور یہ اپنے زور سے جراثیم کو کتنی دور تک پہنچاتی ہے۔ اسی طرح یہ اندازہ بھی شاید نہ ہو کہ ہاتھ یا رومال کو ناک او رمنھ کے سامنے رکھنے سے آپ کس حد تک جراثیم کی پھوار روکنے میں کام یاب ہوتے ہیں

کچھ تو ہوتا ہے

ہمیشہ سے سنتے آئے ہیں ” پرہیز علاج سے بہتر ہے “، مگر کوئی علاج بھی کروا رہا ہو تولوگ اسے بھی پرہیز کہاں کرنے دیتے ہیں،محض مہمان نوازی کی خاطر شوگر کے مریض کو کولڈ ڈرنکس اور آئیس کریم ،انتہائی پیار سے یہ کہتے ہوئے پیش کرتے ہیں

ورزش کر یں فٹ رہیں!

اندر کو دھنسا ہوا سینہ مرد کے جسم کی ساری خوبصورتی کو گرہن لگا دیتاہے۔ ساتھ ہی اگر پیٹ باہر کو نکلا ہو اہو تو آدمی کے کارٹون نظر آنے میں کوئی کسر باقی نہیں رہتی

قربانی کا گوشت، عبادت اور صحت ایک ساتھ

سرخ گوشت میں فولاد، زنک اور سیلنیم کی بڑی مقدار ہوتی ہے
گوشت کم کھانے والے کو لیسٹرول، کینسر اور ٹائپ ٹوذیابیطس سے محفوظ رہتے ہیں

سائیکل چلائیے ڈاکٹر کا خرچہ بچائیے

سائیکل چلانے والے طویل عمر پاتے اور بیماریوں سے محفوظ رہتے ہیں
یورپی ممالک میں مر داور خواتین سبھی سائیکل پر دفاتر جاتے ہیں

اب ہر کوئی سُن سکے گا!

سٹم سیل سے سماعت کے خُلیے تیار کر لئے گئے ہیں
ماہرین کہتے ہیں کہ زندگی کے کسی دور میں بہرے ہو جانے والے افراد کی سماعت واپس لانا اب بالکل ممکن ہے۔ لیکن یہ ایک دشوار کام ہے اور چوہوں پر حالیہ کامیاب تجربے اس جانب ایک اہم پیشرفت ہے

”مورنگا “ایک کثیر المقاصد کرشماتی پودا

تحقیق سے یہ بات ثابت ہے کہ مورنگاکے پتوں میں دودھ سے دو گنا زیادہ پروٹین اور چار گنا زیادہ کیلشیم ، گاجر سے چار گنا زیادہ وٹامن A،سنگترے سے سات گنا زیادہ وٹامنC، کیلے سے تین گنا زیادہ پوٹاشیم اور دہی سے دو گنا زیادہ پروٹین پائی جاتی ہے

دل کے لئے صحت بخش غذا کھائیے

اگر آپ اپنے دل کو صحت مند رکھنا چاہتے ہیں تو اپنے وزن میں کمی کیجئے اور بلاناغہ ورزش کی عادت ڈالئے، لیکن جو غذا آپ روز کھاتے ہیں، وہ بھی بہت اہمیت کی حامل ہے

شہد کی اقسام اور ان کے فائدے

قدیم ترین معلومات کے مطابق شہد جسم میں خون کی کمی، جِلدی امراض مثلاً زخم، ایکز یما اور خارش کے لئے استعمال کیا جاتاتھا۔ شہد کو اس وقت بھی دق وسل، امراضِ قلب، اعصابی اور معدے و آنتوں کی بیماریوں، جگرکی شکایات ، کھانسی اور گلے کی تکلیف کے لئے استعمال کیا جاتا تھا

ڈینگی، مچھر، وائرس، بخار اور احتیاطی تدابیر

ڈینگی فیور سے اموات کی شرح میں اضافے کی وجہ یہ ہے کہ عام طور پر لوگ مقامی ڈاکٹروں کے کلینک سے دوائی لینے کو ترجیح دیتے ہیں جو مرض کی تشخیص نہیں کر پاتے جس کی وجہ سے مرض بڑھ جاتاہے

غذائی مقدار کا تعین کیجئے

فربہ ہونے کا سب سے بڑا سبب ضرورت سے زیادہ کھانا ہے، مگر ہم میں سے شاید ہی کوئی اس کا ادراک رکھتا ہو کہ وہ ضرورت سے زیادہ کھاتا ہے۔ گزشتہ50برس سے ہمارے ریستورانوں میں پلیٹوں میں کھانا اتنی مقدار میں آتا ہے کہ ہماری ناکوں ناک تک بھر جاتاہے
فہرست 913 سے 924  تک   (1382 ریکارڈز )