بند کریں
صحت مضامینمضامین

مضامین

خون کی کمی۔انیمیا

صحت مند حاملہ خواتین کمزور خواتین کی نسبت انیمیا کا کم شکار ہوتی ہے لیکن صحت مند خواتین میں بھی خون کی مقدار ضرورت کے لحاظ سے 25 فیصد کم ہوجاتی ہے انیمیا کے باعث رنگ پھیکا پڑجاتا ہے مریضہ بہت جلد تھک جاتی ہے

قے آنا

دو پہر کے کھانے کے بعد قے آنا یا دن میں کئی مرتبہ قے آنا یا چوتھے اور نویں مہینے کے درمیان بھی قے آتے رہنا غیر فطری عمل ہیں

ایام حمل کی بیماریاں

حاملہ عورت کی آنکھ جی متلانے کی وجہ سے کھلتی ہے اور چلنے پھرنے اور کام کرنے سے جی اور زیادہ متلانے لگتاہے اکثر اوقات ناشتے کے فوراً بعد قے آجاتی ہے یہ حالت ایک دو گھنٹے تک رہتی ہے

پلکیں اندر کو مڑنا

بعض اوقات بالوں کے نیچے موجود پٹھا پلکوں کو اندر کی طرف موڑ دیتا ہے اور کبھی کبھی پپوٹوں کا زخم مندمل ہوتے وقت پپوٹوں کو اور اس طرح پلکوں کو اندر کی طرف موڑدیتا ہے

آنکھیں آنا

آنکھیں سرخ ہوجاتی ہے ان میں جلن اور درد ہوتا ہے اور ان سے چکنا مادہ خارج ہوتا ہے عموماً ایک گھر کے کئی افراد اس کا شکار ہوتے ہیں صبح جاگنے پر پپوٹے ایک دوسرے سے چپکے ہوتے ہیں اور ان پر زرد سا مادہ لگا ہوتا ہے

آنکھ کی سوزش

نکھ کی سوزش سب سے اہم ہیں چونکہ جراثیم ایک بار آنکھ پر قابض ہوجانے کے بعد بہت دیر تک وہیں پھلتے پھولتے رہتے ہیں اس لیے یہ سوزش بہت دیر تک رہتی ہے اور زیادہ تکلیف دہ ہوتی ہے

آنکھوں کی بیماریاں

آنکھوں میں اندھا دھند ہر اچھی بری چیز ڈالے جانا بہت خطرناک ہے ہم یہاں صرف آنکھوں کی چنداہم بیماریوں کا ذکر کریں گے جب کا گھریلو علاج آسانی سے کیا جاسکتا ہے اور اس سے آنکھوں کو نقصان پہنچنے کا احتمال نہیں ہوتا دیگر خرابیوںکے لیے آپ کو ڈاکٹر سے مشورہ کرنا چاہیے۔

گنٹھیا

گنٹھیوں کا آغاز پاﺅں کے انگوٹھے سے ہوتا ہے عموماً رات کو سوتے وقت مریض کو انگوٹھے میں سخت درد ہونے لگتا ہے جو اس کو جگا دیتا ہے انگوٹھے پر ورم آجانے سے یہ سرخ ہوجاتا ہے اور دبانے سے نرم محسوس ہوتا ہے

تحجر مفاصل

یہ اکثر انگلیوں کے جوڑوں سے شروع ہوتی ہے اگرچہ بعد میں یہ بڑے جوڑوںمثلاًٹخنے گھٹنے کلائی کہنی وغیرہ تک پھیل سکتی ہے یہ بیماری اکثرچالیس سال کی عمر کے لگ بھگ لگتی ہے

جوڑوں کا درد

کسی جوڑ میں اچانک اور بغیر کسی وجہ کے تھکاوٹ یا چوٹ وغیرہ کے درد ہونے لگتا ہے جوڑ میں ورم آجاتا ہے اور یہ سخت ہوجاتا ہے کبھی کبھی جوڑوں کے درد سے کچھ دن پہلے مریض تھکاوٹ اور نفاہت محسوس کرنے لگتا ہے

پٹھوں میں ٹیسیں اُٹھنا

یہ تکلیف بہت زیادہ تھکاوٹ یا سرد ہوا کے تھپیڑوں سے بھی ہوسکتی ہے حاملہ عورتیں بھی عموماً اس بیماری کا شکار ہوتی ہے ان سب صورتوں میں درد زیادہ تر پنڈلی یا بازو کے پٹھوں میں ہوتا ہے تاہم یہ درد کسی بھی پٹھے میں ہوسکتا ہے

کمر کا درد

خواتین کو عام شکایتوں میں سے ایک کمر کا درد ہے یہ عموماً زیادہ شدید نہیں ہوتا لیکن مسلسل جاری رہنے والا ہلکا درد خاصا پریشان کن ثابت ہوتا ہے
فہرست 121 سے 132  تک   (448 ریکارڈز )