بند کریں
صحت صحت کی خبریںخسرے سے متاثرہ ایک اور بچہ موت کے منہ میں چلا گیا ،صوبہ میں مجموعی ہلاکتوں کی تعداد52ہو گئی،محکمہ ..

صحت خبریں

وقت اشاعت: 24/04/2013 - 14:28:23 وقت اشاعت: 24/04/2013 - 14:27:11 وقت اشاعت: 23/04/2013 - 13:17:11 وقت اشاعت: 22/04/2013 - 21:37:23 وقت اشاعت: 22/04/2013 - 21:36:49 وقت اشاعت: 22/04/2013 - 21:36:18 وقت اشاعت: 22/04/2013 - 21:36:18 وقت اشاعت: 22/04/2013 - 21:33:25 وقت اشاعت: 22/04/2013 - 21:20:02 وقت اشاعت: 22/04/2013 - 19:51:49 وقت اشاعت: 22/04/2013 - 13:54:10

خسرے سے متاثرہ ایک اور بچہ موت کے منہ میں چلا گیا ،صوبہ میں مجموعی ہلاکتوں کی تعداد52ہو گئی،محکمہ صحت نے لاہور میں 29اپریل سے 5مئی تک انسداد خسرہ کی خصوصی مہم چلانے کا اعلان کر دیا ،6ماہ سے10سال تک کی عمر کے 30لاکھ بچوں کو خسرہ کی ویکسین کے ٹیکے لگائے جائینگے، سیکرٹری صحت کی زیر صدارت اجلاس

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔آئی این پی۔22اپریل۔ 2013ء) خسرے سے متاثرہ ایک اور بچہ موت کے منہ میں چلا گیا جس کے بعد شہر میں اس وبا ء سے ہلاکتوں کی مجموعی تعداد 32جبکہ صوبے بھر میں 52ہو گئی۔ محکمہ صحت نے لاہور میں 29اپریل سے 5مئی تک انسداد خسرہ کی خصوصی مہم چلانے کا اعلان کر دیا جس میں جسکے دوران 6ماہ سے10سال تک کی عمر کے 30لاکھ بچوں کو خسرہ کی ویکسین کے ٹیکے لگائے جائیں گے۔

شیخوپورہ کی تحصیل فیروزوالہ کا رہائشی 14ماہ کا احمد چلڈرن ہسپتال میں زیرعلاج تھا جو علی الصبح انتقال کر گیا۔ محکمہ صحت کے ذرائع کے مطابق لاہور کے سرکاری ہسپتالوں میں 24گھنٹوں کے دوران خسرے کے 60نئے مریض لائے گئے ۔میو اسپتال میں 24گھنٹوں کے دوران کل 20نئے مریض بچے لائے گئے، پنجاب بھر میں خسرہ جنوری سے اب تک 9ہزار سے زائد بچوں کو اپنی لپیٹ میں لے چکا ہے جن میں سے 52بچے اپنی جانوں سے ہاتھ دھو بیٹھے ہیں۔

علاوہ ازیں سیکرٹری صحت پنجاب عارف ندیم نے کہا ہے کہ لاہور میں 29اپریل سے 5مئی تک انسداد خسرہ کی خصوصی مہم چلائی جائے گی- اس مہم کے دوران 6ماہ سے10سال تک کی عمر کے 30لاکھ بچوں کو خسرہ کی ویکسین کے ٹیکے لگائے جائیں گے-سیکرٹری صحت نے لاہور کے تمام سرکاری ہسپتالوں کے میڈیکل سپرنٹنڈنٹس اور نرسنگ سکولوں کی پرنسپلز کو ہدایت کی ہے کہ وہ اپنے اپنے ہسپتال سے مخصوص تعداد کے مطابق خسرہ کے انجیکشن لگانے کے لئے سٹاف کی فہرست محکمہ کو جمع کرادیں-انہوں نے یہ ہدایات سول سیکرٹریٹ میں انسداد خسرہ کی خصوصی مہم کے سلسلہ میں لاہور کے تمام سرکاری ہسپتالوں کے میڈیکل سپرنٹنڈنٹس اور نرسنگ سکولوں کی پرنسپلز کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے دیں- اجلاس میں ایڈیشنل سیکرٹری صحت(ٹیکنیکل)ڈاکٹر انور جنجوعہ، ایڈیشنل سیکرٹری صحت (اسٹیبلشمنٹ)اسفندیار خان، ڈائریکٹر جنرل ہیلتھ ڈاکٹر تنویر احمد، ای ڈی او صحت لاہور ڈاکٹر ذوالفقار کے علاوہ لاہور جنرل ہسپتال ، جناح ہسپتال، سروسز ہسپتال ، میو ہسپتال ، سرگنگارام ہسپتال، لیڈی ولنگڈن ہسپتال، لیڈی ایچی سن ہسپتال، گورنمنٹ میاں محمد نواز شریف ہسپتال، گورنمنٹ سیدمٹھا ہسپتال ، کوٹ خواجہ سعید ہسپتال ، میاں منشی ہسپتال اور چلڈرن ہسپتال کے میڈیکل سپرنٹنڈنٹس ، نرسنگ سکولوں کی پرنسپلز ، ڈین انسٹیٹیوٹ آف چائلڈ ہیلتھ پروفیسر ڈاکٹر طاہر مسعوداور ڈین انسٹیٹیوٹ آف پبلک ہیلتھ پروفیسر ڈاکٹر معاذ نے شرکت کی-سیکرٹری صحت نے ہدایت کی کہ انسداد خسرہ کی خصوصی مہم کے دوران ویکسینیشن سٹاف اپنی ذمہ داریوں کو قومی فریضہ سمجھ کر سرانجام دیں- انہوں نے واضح کیا کہ ڈیوٹی پر مامور سٹاف کی حاضریاں سو فیصد یقینی بنائی جائیں اور اس سلسلہ میں کسی قسم کی کوتاہی ناقابل برداشت ہوگی -سیکرٹری صحت نے کہا کہ 29اپریل سے 5مئی تک مہم میں حصہ لینے والے سٹاف کو خصوصی الاؤنس بھی دیا جائے گا- اس موقع پر ایڈیشنل سیکرٹری صحت(ٹیکنیکل)ڈاکٹر انور جنجوعہ نے کہا کہ مجموعی طور پر پورے لاہور میں تقریبا 900ورکرز بچوں کو انجیکشن لگانے کے لئے یونین کونسل کی سطح تک تعینات کئے جائیں گے، یہ سٹاف لاہور کے سرکاری ہسپتالوں اور نرسنگ سکولز فراہم کریں گے- اس سلسلہ میں 27اپریل کو مذکورہ سٹاف کی تربیت اور ضروری معلومات فراہم کرنے کے لئے خصوصی ورکشاپ بھی ہوگی- انہوں نے بتایا کہ خسرہ کی وباء سے سب سے زیادہ لاہور متاثر ہوا ہے اور سب سے زیادہ اموات بھی لاہور میں ہوئی ہیں۔

22/04/2013 - 21:36:18 :وقت اشاعت