بند کریں
صحت صحت کی خبریںباجوڑایجنسی، ماموند میں مسلح افراد کا پولیو ٹیم پر حملہ ، ایک لیوی اہلکارشہید ،پولیو اہلکار ..

صحت خبریں

وقت اشاعت: 21/05/2013 - 20:50:20 وقت اشاعت: 21/05/2013 - 20:47:55 وقت اشاعت: 21/05/2013 - 20:44:25 وقت اشاعت: 21/05/2013 - 20:43:51 وقت اشاعت: 21/05/2013 - 15:51:08 وقت اشاعت: 20/05/2013 - 23:16:28 وقت اشاعت: 20/05/2013 - 23:13:56 وقت اشاعت: 20/05/2013 - 20:13:38 وقت اشاعت: 20/05/2013 - 20:10:27 وقت اشاعت: 20/05/2013 - 13:46:59 وقت اشاعت: 20/05/2013 - 13:38:59

باجوڑایجنسی، ماموند میں مسلح افراد کا پولیو ٹیم پر حملہ ، ایک لیوی اہلکارشہید ،پولیو اہلکار بال بال بچ گئی ، انتظامیہ کا علاقہ میں سرچ آپریشن ، مشتبہ افراد گرفتار

باجوڑایجنسی (اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔آئی این پی۔20مئی۔ 2013ء)باجوڑایجنسی کی تحصیل ماموند کے سرحدی علاقہ کلان میں نامعلوم مسلح افراد کے پولیو ٹیم پر حملہ میں باجوڑ لیویز فورسز کا ایک اہلکارشہید ہوگیا،پولیو اہلکار بال بال بچ گئی ، انتظامیہ کا علاقہ میں سرچ آپریشن ،کئی مشتبہ افراد گرفتار جبکہ انتظامیہ اور محکمہ صحت نے ایجنسی میں پولیو کے خلاف مہم جاری رکھنے کا اعلان کیا ۔

مقامی لوگوں اور انتظامیہ کے حکام کے مطابق پیر کے روز صدرمقام خار سے شمال مغرب کے جانب تیس کلومیٹر دور تحصیل ماموند کے سرحدی علاقہ کلان میں نامعلوم مسلح افراد نے پولیو کے ایک ٹیم پر اس وقت فائرنگ کیا جب پولیو ٹیم علاقہ میں پولیو کے ویکسنیشن مہم میں مصروف تھے ۔ حملہ میں باجوڑ لیویز فورس کا سپاہی اکبر خان موقع پر جان بحق ہوگیا جبکہ ٹیم کے دیگر اہلکا ر بال بال بچ گئی ۔

واقعہ کے فوراً بعد علاقہ کے مقامی لوگ اور امن کمیٹی کے رضاکار جائے وقوع پر پہنچ گئی اور انھوں نے علاقہ کا محاصرہ کرلیا ۔ واردات کے بعد امن کمیٹی کے رضاکاروں اور علاقہ کے لوگوں نے حملہ اوروں کا پیچھا کیا تاہم وہ فرار ہونے میں کامیاب ہوگئی ۔ ابھی تک کسی نے پولیو ٹیم پر حملہ کی ذمہ داری نہیں لی ہے ۔ دوسری طرف محکمہ صحت نے پولیو ٹیم پر حملہ کے واقعہ کے بعد ایجنسی بھر میں پولیو کے خلاف مہم جاری رکھنے کا اعلان کیا ۔

محکمہ صحت کے ایک سینئر اہلکار نے پیر کے روز میڈیا کو بتایاکہ محکمہ صحت نے ایجنسی بھر میں پولیو کے خلاف مہم بدستور جاری رکھنے کا فیصلہ کیاہے اور اس طرح کی کاروائیاں محکمہ صحت کے اہلکاروں کی حوصلے پست نہیں کرسکتی ۔ ایجنسی سرجن باجوڑ ڈاکٹر جہانز یب داوڑ کے مطابق ایجنسی میں پیر کے روز سے شروع ہونے والے تین روزہ پولیو مہم کے دوران پانچ سال کے عمر کے کل دو لاکھ 23ہزار پانچ سو ستر بچوں کو پولیو سے بچاو کے قطرے پلائے جارہی ہیں جبکہ چھ سو چوبیس ٹیمیں مہم کا حصہ ہیں۔

باجوڑایجنسی میں محکمہ صحت نے گزشتہ کئی ماہ سے خواتین ورکروں پر پولیو کے خلاف مہم میں حصہ لینے پر پابندی عائد کی ہیں، دوسری طرف انتظامیہ نے ایجنسی بھر میں پولیو ٹیموں کی سیکورٹی مزید سخت بنانے کا فیصلہ کیاہے اور اس مقصد کے لیے باجوڑ لیویز فورسز کے مزید اہلکاروں کی ڈیوٹیاں پولیو ٹیموں کے ساتھ لگائی ہیں۔
20/05/2013 - 23:16:28 :وقت اشاعت