پاکستان میں 5سال سے کم عمر بچوں کی ایک تہائی تعداد وٹامن اے اور آئرن کی کمی کے باعث زندگی کی بازی ہار جاتی ہے،ماہرین فیصل ۱ٓباد میڈیکل یونیورسٹی

فیصل آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - اے پی پی۔ 03 جون2020ء) فیصل ۱ٓبادمیڈیکل یونیورسٹی و الائیڈ ہسپتال فیصل آبادکے ماہرین طب نے بتایا ہے کہ پاکستان میں 5سال سے کم عمر بچوں کی ایک تہائی تعداد وٹامن اے اور آئرن کی کمی کے باعث زندگی کی بازی ہار جاتی ہے جبکہ پاکستان سمیت دنیا بھر کے دیگر ترقی پذیر ممالک میں ہر سال ایک کروڑ بچوں کی نصف تعداد غذائی کمی کا شکار ہو کر لقمہ اجل بنتی ہے اسلئے ہمیں شیر خوار بچوں سمیت بڑھتے ہوئے بچوں کے خوراکی مسائل سے احسن انداز میں نبرد آزما ہونا ہو گا تاکہ معصوم بچوں کی بہت بڑی تعداد کو موت کا شکار ہونے سے بچایا جا سکے۔

(جاری ہے)

انہوںنے اے پی پی کو بتایا کہ فطرت کے تقاضوں کے مطابق بنی نوع انسان زندگی کے آغاز سے ہی بچوں کی خوراکی ضروریات کیلئے کاوشیں بروئے کار لاتے چلے آ رہے ہیں تاکہ نو مولو د بچوں کی غذائی ضروریات ماں کے دودھ سے پوری ہونے کی وجہ سے بچوں میں بیماریوں کے رجحانات کو کم سے کم کرتے ہوئے صحت مند بچوں کا رجحان فروغ پا سکے۔انہوںنے کہا کہ ہم سب کو مل کر بچوں کی غذائی ضروریات پوری کرنے کیلئے تمام وسائل بروئے کار لانا ہوں گے تاکہ بچوں کو ذہنی و جسمانی کمزوری سے بچایا جا سکے۔

Your Thoughts and Comments