بند کریں
صحت صحت کی خبریںورلڈ کپ کے دوران اپنی بگڑتی صحت کا اندازہ ہو گیا تھا، تاریخی فتح کا حصول ہرقیمت پر چاہتا تھا،ورلڈکپ ..

صحت خبریں

وقت اشاعت: 30/08/2013 - 14:22:42 وقت اشاعت: 29/08/2013 - 22:40:31 وقت اشاعت: 29/08/2013 - 20:54:37 وقت اشاعت: 29/08/2013 - 20:54:37 وقت اشاعت: 29/08/2013 - 20:08:54 وقت اشاعت: 29/08/2013 - 16:55:35 وقت اشاعت: 29/08/2013 - 14:11:17 وقت اشاعت: 29/08/2013 - 14:09:09 وقت اشاعت: 29/08/2013 - 13:11:17 وقت اشاعت: 28/08/2013 - 21:20:32 وقت اشاعت: 28/08/2013 - 21:19:36

ورلڈ کپ کے دوران اپنی بگڑتی صحت کا اندازہ ہو گیا تھا، تاریخی فتح کا حصول ہرقیمت پر چاہتا تھا،ورلڈکپ کا بہترین کھلاڑی قرارپانامیری زندگی اور کیریئر کا سب سے شاندار لمحہ تھا،کینسرکیخلاف جنگ عزم اور حوصلے سے ہی جیتی جا سکتی ہے ، بھارتی کرکٹ ٹیم کے آل راؤنڈر یوراج سنگھ کا تقریب سے خطاب

نئی دہلی (اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔آئی این پی۔ 29اگست 2013ء)بھارتی کرکٹ ٹیم کے آل راؤنڈر یوراج سنگھ نے کہا ہے کہ ورلڈ کپ کے دوران انہیں اپنی بگڑتی صحت کا اندازہ ہو گیا تھا لیکن تاریخی فتح کا حصول ہرقیمت پر چاہتا تھا۔یوراج سنگھ نے ایک تقریب کے دوران کہا کہ عالمی کپ کے دوران میری کھانسی سے خون آیا تھا، لیکن میں نے اس پر جان بوجھ کر توجہ نہیں دی.

اس دوران ہم سب پر کافی دباوٴ تھا اور میں ایسے میں آپ کی صحت کی جانچ نہیں کرانا چاہتا تھا. اس وقت میرے جسم میں کیا چل رہا تھا اس کا مجھے ڈر نہیں تھا، بلکہ ڈر اس بات کا تھا کہ کہیں ہم ہار گئے تو کیا ہوگا. ' یوراج نے ورلڈ کپ اور پھر اس کے بعد کینسر سے جنگ کے بارے میں بات کرتے ہوئے کہا ، 'میں ورلڈ کپ میں مین آف دی ٹورنامنٹ بنا ، جو میری زندگی اور کیریئر کا سب سے شاندار لمحہ تھا.

پھر میں نے اس کے بعد اس کی زندگی کا سب سے برا دور بھی دیکھا. ' یوراج نے بتایا کہ انہوں نے کینسر کے متاثرین کے لئے سابق عالمی معیار سایکلسٹ اور کینسر سے جنگ جیتنے والے لانس ارمسٹرنگ کی راہ پر چلتے ہوئے، انہی کے ماڈل جیسی ایک تنظیم کھڑی کی تاکہ کینسر سے متاثرہ افراد کی مدد کی جا سکے اور اس کے بارے میں بیداری بھی پھیلائی جا سکے اور اب اس کے لیے ان کے پاس اچھی خاصی ایک ڈاکٹروں کی ٹیم بھی ہے.یوراج نے اپنے اس خراب دور کے درد کو بیان کرتے ہوئے کہا کہ مجھے ایسا لگتا تھا کہ آخر یہ سب میرے ساتھ ہی کیوں ہو رہا تھا لیکن آہستہ - آہستہ جب یہ احساس ہو گیا کہ اس جنگ کو صرف میں نہیں بلکہ دنیا بھر میں کتنے لوگ لڑ رہے ہیں، تبھی میں نے فیصلہ کیا کہ مجھے یہ کینسر کی جنگ جیتنی ہی ہے ، تاہم اس جنگ میں آپ کے اہل خانہ کو آپ کے ساتھ رہنا بہت ضروری ہوتا ہے.

مجھے اپنی ماں اور دوستوں کا مکمل ساتھ ملا۔
29/08/2013 - 16:55:35 :وقت اشاعت