بند کریں
صحت صحت کی خبریںسندھ ،پنجاب میں سیلاب سے متاثرہ علاقوں میں آلودہ پانی بیماریاں پھیلانے لگا

صحت خبریں

وقت اشاعت: 31/08/2013 - 17:00:58 وقت اشاعت: 31/08/2013 - 15:58:00 وقت اشاعت: 30/08/2013 - 21:16:28 وقت اشاعت: 30/08/2013 - 21:16:05 وقت اشاعت: 30/08/2013 - 20:06:10 وقت اشاعت: 30/08/2013 - 14:22:42 وقت اشاعت: 29/08/2013 - 22:40:31 وقت اشاعت: 29/08/2013 - 20:54:37 وقت اشاعت: 29/08/2013 - 20:54:37 وقت اشاعت: 29/08/2013 - 20:08:54 وقت اشاعت: 29/08/2013 - 16:55:35

سندھ ،پنجاب میں سیلاب سے متاثرہ علاقوں میں آلودہ پانی بیماریاں پھیلانے لگا

لاہور(اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔آئی این پی۔ 30اگست 2013ء)سندھ اور پنجاب کے سیلاب سے متاثرہ علاقوں میں آلودہ پانی بیماریاں پھیلانے کا باعث بننے لگا ،کئی علاقوں میں گندے پانی کے نکاس کے لئے اقدامات نہیں کیے گئے ۔پنجاب میں تباہی پھیلانے کے بعد اب سیلابی پانی دریا سندھ میں کچے کے علاقوں میں تباہی پھیلا رہا ہے۔ نواب شاہ کے کچے کے کئی دیہات اور ہزاروں ایکڑ رقبے پر کھڑی تیار فصلیں زیر آب آ چکی ہیں۔

گھوٹکی میں حفاظتی بند اور شینک بند پرموجود سیلاب متاثرین خیموں اور راشن سے محروم ہیں۔ پینے کے لئے صاف پانی نہیں اور مچھروں اور مکھیوں کے باعث بچے بیمار ہورہے ۔محکمہ آبپاشی کے مطابق گڈو بیراج پر پانی کا بہاو 3لاکھ 93ہزار 4سو12کیوسک ہے۔ سکھربیراج پر پانی کی سطح 3لاکھ 66ہزار کیوسک ہے ،کوٹری بیراج پر پانی کی سطح میں اضافہ ہورہا ہے ،پانی کی سطح 3لاکھ24ہزار کیوسک ہے۔سیالکوٹ میں نالہ ڈیک اورایک کے سیلابی پانی کی وجہ سے بے تباہ کاریاں ہوئیں، بعض علاقے ایسے بھی ہیں جہاں اب بھی پانی جمع ہے، جس کی وجہ سے مزید نقصانات ہو رہے ہیں، انتظامیہ کی جانب سے پانی نکالنے کے لیے ابھی تک کوئی اقدامات نہیں کیے گئے ہیں۔
30/08/2013 - 14:22:42 :وقت اشاعت