بند کریں
صحت صحت کی خبریںوزیراعلی خیبرپختونخوا نے وزیر صحت کو تھر متاثرین کیلئے خصوصی میڈیکل ٹیم روانہ کرنے کی ہدایت ..

صحت خبریں

وقت اشاعت: 11/03/2014 - 14:31:31 وقت اشاعت: 11/03/2014 - 14:20:30 وقت اشاعت: 10/03/2014 - 23:05:43 وقت اشاعت: 10/03/2014 - 22:32:43 وقت اشاعت: 10/03/2014 - 20:13:26 وقت اشاعت: 10/03/2014 - 20:12:32 وقت اشاعت: 10/03/2014 - 20:06:40 وقت اشاعت: 10/03/2014 - 19:59:55 وقت اشاعت: 10/03/2014 - 18:31:42 وقت اشاعت: 10/03/2014 - 17:36:16 وقت اشاعت: 10/03/2014 - 13:38:52

وزیراعلی خیبرپختونخوا نے وزیر صحت کو تھر متاثرین کیلئے خصوصی میڈیکل ٹیم روانہ کرنے کی ہدایت بھی کر دی ، مختلف سپیشلسٹ اور عمومی ڈاکٹروں اور پیرا میڈیکل سٹاف کا ایک مستعد دستہ تشکیل دے کر اُنہیں سٹاف میں دستیاب تمام ادویات کے ہمراہ سندھ روانہ کیاجائیگا

پشاور(اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔10مارچ۔2014ء) خیبر پختونخوا کے وزیر اعلیٰ پرویز خٹک نے تھر متاثرین کیلئے خصوصی میڈیکل ٹیم روانہ کرنے کی ہدایت بھی کر دی ہے اُنہوں نے تھر میں بیماریوں بالخصوص بچوں کے امراض میں اضافے کے پیش نظر وزیر صحت شوکت یوسفزئی کو ادویات کے ساتھ میڈیکل ٹیم فوری تھر روانہ کرنے کی ہدایت کی جس پر عمل درآمد کرتے ہوئے وزیر صحت نے مختلف سپیشلسٹ اور عمومی ڈاکٹروں اور پیرا میڈیکل سٹاف کا ایک مستعد دستہ تشکیل دے کر اُنہیں سٹاف میں دستیاب تمام ادویات کے ہمراہ سندھ روانہ کرنے کی ہدایت کردی دریں اثناء وزیر اعلیٰ کی ہدایت پر تھر پارکر میں قحط متاثرین کیلئے غذائی سامان لیکر پندرہ ٹرکوں کا پہلا امدادی قافلہ جو اتوار کی رات بدین سے میرپور خاص پہنچ گیا تھا پیر کی صبح متاثرہ ضلع تھرپارکر کے صدرمقام مٹھی پہنچ گیا ٹرکوں پر خیبر پختونخوا کے عوام کی طرف سے تھرمتاثرین سے اظہار یکجہتی کے نعرے درج تھے جبکہ تھر پہنچنے پر مقامی باشندوں اور بچوں نے تالیاں بجا کر قافلے کا انتہائی گرمجوشی سے استقبال کیا اور خیبر پختونخوا حکومت کے حق میں نعرے لگائے خیبر پختونخوا پی ڈی ایم اے کے ڈائریکٹر جنرل طاہر اورکزئی کی معیت میں اتھارٹی کی آٹھ رکنی ٹیم بھی قافلے کے ہمراہ تھی کسی صوبے سے سب سے پہلے اور تیز ترین تھر پہنچنے والی یہ امدادی اشیاء مٹھی میں ڈپٹی کمشنر مٹھی تھر آصف اکرام اور دیگر اعلیٰ حکام کی موجودگی میں سندھ کے ڈائریکٹر جنرل پی ڈی ایم اے سید سلمان شاہ کے حوالے کی گئیں جنہیں فوری طور پر متاثرہ علاقوں میں پہنچا کر قحط زدگان میں تقسیم کیا گیاان غذائی اشیاء میں 60ٹن چاول، بیس بیس کلو کے آٹے کے دس ہزار تھیلے، 6oٹن دالیں ، 30ٹن چینی ، 10ٹن چائے کی پتی، 2ہزار ٹن خشک دودھ، 5ہزار کنستر کوکنگ آئل، 10ٹن کھجوریں، ایک ٹن نمک ، ایک لاکھ پانی کی بوتلیں، 15ہزار پیکٹ عمومی بسکٹ، 5ہزار پیکٹ ہائی انرجی بسکٹ، 5ہزار پیک سیریلیک اور ننھے بچوں کی دوسری بنیادی خوراک و ادویات شامل تھے بدین ہی سے روانہ دوسرا امدادی قافلہ اگلی صبح منگل کو تھر پہنچے گا ٹیم تھر میں مقامی حکام کی طبی و معاونت کیلئے امدادی کیمپ آفس بھی لگائے گی وزیراعلیٰ پرویزخٹک نے خیبرپختونخواکی پی ڈی ایم اے اور میڈیکل ٹیموں کو تھر میں قحط سالی و امراض اور ہنگامی صورتحال کے خاتمے تک وہاں موجود رہنے اور طبی و امدای سرگرمیوں میں حکومت سندھ کی حتی الوسع مدد جاری رکھنے کی ہدایت کی ہے اور ان پر واضح کیا ہے مصیبت کی اس گھڑی میں اہل تھر کی مدد ہمارا اولین فرض بن چکا ہے تاکہ متاثرین کو تنہائی کا احساس نہ ہونے پائے نہ ہی انہیں کسی بھی قیمت پر تنہا چھوڑا جائے گا۔

10/03/2014 - 20:12:32 :وقت اشاعت