بند کریں
صحت صحت کی خبریں عوام کو صحت کی معیاری سہولیات فراہم کرنا اور صحت کے شعبہ کی کارکردگی بہتر بنانا حکومت کی ..

صحت خبریں

وقت اشاعت: 13/03/2014 - 16:55:55 وقت اشاعت: 13/03/2014 - 14:38:35 وقت اشاعت: 13/03/2014 - 14:29:18 وقت اشاعت: 13/03/2014 - 12:22:06 وقت اشاعت: 12/03/2014 - 22:45:37 وقت اشاعت: 12/03/2014 - 22:41:13 وقت اشاعت: 12/03/2014 - 22:40:09 وقت اشاعت: 12/03/2014 - 20:43:34 وقت اشاعت: 12/03/2014 - 20:38:36 وقت اشاعت: 12/03/2014 - 17:13:42 وقت اشاعت: 12/03/2014 - 14:05:15

عوام کو صحت کی معیاری سہولیات فراہم کرنا اور صحت کے شعبہ کی کارکردگی بہتر بنانا حکومت کی اولین ترجیح ہے ، صدر ممنون حسین ،صحت کے شعبہ میں چیلنجز سے نمٹنے کیلئے تمام ممکن اقدامات کئے جا رہے ہیں ، عالمی ادارہ صحت کے ساتھ مل کر کام جاری رکھیں گے ، صدرنے عالمی ادارہ صحت کی ڈائریکٹر کو پاکستان میں صحت کے شعبہ میں بے مثال خدمات پر ”ہلال پاکستان“ عطا کیا

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔12مارچ۔2014ء)صدر مملکت ممنون حسین نے کہاہے کہ عوام کو صحت کی معیاری سہولیات فراہم کرنا اور صحت کے شعبہ کی کارکردگی بہتر بنانا حکومت کی اولین ترجیح ہے، صحت کے شعبہ میں چیلنجز سے نمٹنے کیلئے تمام ممکن اقدامات کئے جا رہے ہیں ، عالمی ادارہ صحت کے ساتھ مل کر کام جاری رکھیں گے۔صدر مملکت ممنون حسین نے عالمی ادارہ صحت کی ڈائریکٹر جنرل ڈاکٹر مارگریٹ چان کو پاکستان میں صحت کے شعبہ میں بے مثال خدمات پر ”ہلال پاکستان“ عطا کیا ہے اس سلسلے میں ایوان صدر میں بدھ کو ایک خصوصی تقریب کا انعقاد کیا گیا۔

اس موقع پر ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن (ڈبلیو ایچ او) کے ریجنل ڈائریکٹر ڈاکٹر الا الوان، اسسٹنٹ ڈائریکٹر جنرل برائے پولیو ڈاکٹر ریمنڈ بروس جے ایلورڈ، ڈاکٹر نجمہ سعید عابد، ڈاکٹر الیاس درے اور این سمتھ کے علاوہ وزیر مملکت برائے نیشنل ہیلتھ سروسز، ریگولیشنز ایند کو آرڈینیشن سائرہ افضل تارڑ، پولیو کے خاتمے کے لئے وزیراعظم کی فوکل پرسن عائشہ رضا فاروق، صدر مملکت کے سیکرٹری ندیم حسن آصف، سیکرٹری نیشنل ہیلتھ سروسز، ریگولیشنز اینڈ کو آرڈینیشن امتیاز عنایت الٰہی، سیکرٹری کابینہ اخلاق احمد تارڑ اور دیگر اعلیٰ افسران بھی موجود تھے۔

ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن 1948ء میں اپنے قیام سے پاکستان میں کام کر رہی ہے اور 1960ء میں پاکستان میں اس کا کنٹری آفس قائم کیا گیا جس کے بعد سے وہ پاکستان کی صحت کے شعبہ میں اہداف کے حصول میں معاونت کر رہی ہے اور عالمی ادارہ صحت نے متعدی امراض کے خاتمے، ملینیئم ترقیاتی اہداف کے حصول، زچہ و بچہ کی شرح اموات میں کمی کے سلسلے میں قابل قدر خدمات انجام دی ہیں اور اس نے بالخصوص چیچک، گنی ورم بیماری کے خاتمے میں بھرپور کردار ادا کیا ہے اور وہ پاکستان سے پولیو کے خاتمے کے لئے بھی سرگرمی سے کام کر رہا ہے۔

اس موقع پر ایوین انفلوانزا جیسی بیماریوں کے خاتمے کے لئے پاکستان کے ساتھ تعاون کو فروغ دینے پر ڈاکٹر مارگریٹ چان کے کردار کو بھی سراہا گیا۔ ڈاکٹر مارگریٹ چان کو ہلال پاکستان دینے کی تقریب کے بعد پاکستان اور عالمی ادارہ صحت کے درمیان تعاون سے متعلق امور کا جائزہ لینے کے لئے ایک تفصیلی اجلاس ہوا اور پاکستان میں مختلف بیماریوں اور بالخصوص پولیو کے خاتمے سے متعلق حکومت کی طرف سے کئے جانے والے اقدامات پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

صدر ممنون حسین نے بیماریوں کے خاتمے اور پاکستان میں صحت کے شعبہ کی کارکردگی کو مزید بہتر بنانے کے لئے عالمی ادارہ صحت کے مسلسل تعاون کو سراہا۔ صدر مملکت نے کہا کہ عوام کو صحت کی معیاری سہولیات فراہم کرنا اور صحت کے شعبہ کی کارکردگی بہتر بنانا موجودہ حکومت کی اولین ترجیح ہے، صحت کے شعبہ میں چیلنجز سے نمٹنے کے لئے تمام ممکن اقدامات کئے جا رہے ہیں اس سلسلے میں مختلف اقدامات کا ذکر کرتے ہوئے صدر مملکت نے کہا کہ ملک میں امراض، معذوری اور ہلاکتوں کی شرح میں کمی لانے کے لئے ای پی آئی پروگرام کو وسعت دی جا رہی ہے اس کے علاوہ متعدی امراض کے خاتمے کے لئے بھی بھرپور کوششیں کی جا رہی ہیں اور حکومت غیر متعدی امراض کے خاتمے پر بھی توجہ مرکوز کئے ہوئے ہے کیونکہ اس وقت ملک کو متعدی اور غیر متعدی دونوں اقسام کے امراض کا سامنا ہے۔

صدر مملکت نے کہا کہ ہم صحت کا نظام بہتر بنانے کے لئے بین الاقوامی شراکت داروں کے ساتھ مل کر کام کر رہے ہیں تاکہ لوگوں کو صحت کی معیاری سہولیات تک رسائی حاصل ہو۔ پولیو کے خاتمے کے حوالے سے انہوں نے عالمی ادارہ صحت کی مسلسل حمایت اور تعاون کو سراہتے ہوئے کہا کہ ہم اس مرض کے خاتمے کے لئے اپنی کوششوں کو مزید تقویت پہنچانے کے لئے عالمی ادارہ صحت کے ساتھ مل کر کام جاری رکھیں گے کیونکہ اس سے ہمارے بچوں کے مستقبل کو خطرہ لاحق ہے۔

اس حوالے سے صدر مملکت نے پولیو کے خاتمے اور بالخصوص ان علاقوں سے پولیو ختم کرنے کے لئے جہاں پر سیکورٹی کے بعض مسائل ہیں، مختلف کوششوں کو اجاگر کیا اور امید ظاہر کی کہ غیر متزلزل سیاسی عزم، عالمی شراکت کے مسلسل تعاون اور معاشرے کے تمام طبقات کی حمایت سے پولیو کے خاتمے کی کوششیں پوری طرح کامیاب ہوں گی۔ ڈاکٹر مارگریٹ چان نے ہلال پاکستان عطا کرنے پر صدر مملکت اور حکومت پاکستان کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ وہ پاکستان میں عالمی ادارہ صحت کے ساتھ ایک طویل عرصہ سے وابستہ ہیں اور چین کی شہری ہونے کے ناطے وہ پاکستان کے عوام کے لئے خصوصی جذبات رکھتی ہیں۔

انہوں نے بیماریوں کے خاتمے اور صحت کا نظام بہتر بنانے کے لئے عالمی ادارہ صحت کی طرف سے مسلسل حمایت اور تعاون جاری رکھنے کا یقین دلایا۔

12/03/2014 - 22:41:13 :وقت اشاعت