کینسرسنٹرفیز ٹواوردیگرمنصوبوں کے بارے میں کمشنر کوبریفنگ

ملتان (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - اے پی پی۔ 19 جنوری2021ء) جدید سہولیات سے لیس ہسپتال حکومت پنجاب کی اولین ترجیح ہیں۔شہریوں کو طبی سہولیات کی فراہمی کیلئے صحت کے شعبے کی توسیع کی جارہی ہے۔عوام کی صحت کی بہترین اور جدید سہولیات تک سہل رسائی کیلئے مختلف منصوبے زیر تکمیل ہیں۔کمشنر جاوید اختر محمود نے نشترہسپتال ویونیورسٹی کے اچانک دورہ کے موقع پرمتعلقہ حکام کو ہدایت کی کہ تمام سکیموں کو بروقت مکمل اور ان میں شفافیت کومعیار بنایا جائے۔

اس موقع پر بریفنگ دیتے ہوئے وائس چانسلر نشتر یونیورسٹی ڈاکٹر پروفیسر احمد اعجاز مسعود نے بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ کینسر سنٹر لینئیر ایکسلیریٹر فیز1 پر 65 کروڑ روپے لاگت آئے گی جو کہ رواں ماہ اپریل تک مکمل کرلیا جائے گا۔

(جاری ہے)

کینسر سنٹر فیز2 میں 5 منزلہ عمارت تیار کی جائے گی۔ فیز1 کی تکمیل سے کینسر جیسے موذی مرض کی مکمل تشخیص اور اس کا علاج کیا جاسکے گا۔

اس سنٹر کی تکمیل سے سرکاری سطح پر پاکستان بھر کا یہ پہلا ہسپتال ہوگا جہاں تمام سہولیات میسر ہوپائیں گی۔کمشنر نے 5 لیکچر تھیٹر کملپکس، ادویات وئیر ہاو¿س کا بھی دورہ کیا۔اس بارے بریفنگ دیتے ہوئے وائس چانسلر ڈاکٹر اعجاز مسعود نے کہا کہ5 لیکچر تھیٹر کمپلکس سے طلباءکیلئے نئے کلاسر رومز کا اضافہ ہوگا۔یونیورسٹی میں طلباءکی تعداد میں اضافہ کو مدنظر رکھتے ہوئے نئے لیکچرتھیٹرز کی تعمیر ناگزیر تھی۔5 لیکچر تھیٹر کمپلیکس رواں سال جون تک مکمل کر لیا جائے گا۔ انہوں نے مزید کہا کہ وئیر ہاو¿س پر ساڑھے 39 کروڑ روپے لاگت آئے گی اور یہ رواں سال جون میں مکمل ہوگا۔ وئیر ہاو¿س 4 منزلہ عمارت ہے اور اس میںادویات حفاظتی شرائط کے مطابق سٹور ہو سکیں گی۔

Your Thoughts and Comments