گزشتہ 24گھنٹوں کے دوران صوبہ بھر میں ڈینگی کا کوئی بھی مریض رپورٹ نہیں ہوا

سیکرٹری پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ، سارہ اسلم

گزشتہ 24گھنٹوں کے دوران صوبہ بھر میں ڈینگی کا کوئی بھی مریض رپورٹ نہیں ہوا
لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 24 جولائی2021ء) سیکرٹری محکمہ پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ کئیر سارہ اسلم نے کہا ہے کہ صوبہ بھر میں ڈینگی لاروا کو تلف کرنے اور افزائش روکنے کے لیے بھرپور کاروائیاں جاری ہیں۔ پنجاب بھر میں مون سون اور بارشوں کی ابتدا پر ڈینگی سے بچاؤ کی سر گرمیاں تیز کر دی گء ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ مون سون بارشوں کا سلسلہ شروع ہو چکا ہے ڈینگی سے بچاؤ کی احتیاطی تدابیر ازحد ضروری ہیں.مون سون کے دوران ڈینگی سے بچاؤ کی احتیاط میں شہری زیادہ ذمہ داری کا مظاہرہ کریں خصوصاً بارشوں کا پانی رہائشی علاقوں میں نہ جمع ہونے دیں۔

سیکرٹری ہیلتھ کیئر سارہ اسلم نے کہا کہ گزشتہ روز پنجاب بھر کے ہسپتالوں میں ڈینگی کا کوئی بھی مریض رپورٹ نہیں ہوا۔

(جاری ہے)

اس وقت پنجاب بھر کے ہسپتالوں میں ڈینگی کا صرف ایک مریض ہولی فیملی ہسپتال راولپنڈی میں زیر علاج ہے ڈینگی کا واحد مریض اٹک کا رہائشی ہے۔انھوں نے بتایا کہ رواں سال صوبہ بھر سے ڈینگی کے60کنفرم کیسزسامنے آئے ہیں۔اور اس وقت لاہور سمیت پنجاب بھر کے ہسپتالوں میں صرف ایک مریض زیر علاج ہے۔

سارہ اسلم نے بتایا کہ محکمہ صحت کی صوبہ بھر میں ڈینگی لاروا کو تلف کرنے اور افزائش روکنے کے لیے بھرپور کاروائیاں جاری ہیں۔پچھلے 24گھنٹوں میں پنجاب بھر میں 151622 ان ڈور مقامات اور 31914 آؤٹ ڈور مقامات کو چیک کیا گیا اور56مقامات سے لاروا تلف کیا گیا۔ لاہور میں 21228گھروں کی اور 6034 آؤٹ ڈور مقامات کی ڈینگی لاروا کے حوالہ سے چیکنگ کی گئی اور ٹوٹل 55 مقامات سے پازٹیو کینٹینرز کو تلف کیا گیا۔

اس ضمن میں سیکرٹری سارہ اسلم کا کہناتھا کہ کورونا کی وبا سے بچاؤ کی احتیاط کے ساتھ ساتھ ڈینگی سے بچاؤ کی احتیاطی تدابیر بھی اپنائیں۔ اپنے ارد گرد کے ماحول کو صاف رکھ کر اپنے ذمہ دار شہری ہونے کا ثبوت دیں۔گھروں کے اندر یا باہر پانی کھڑا نہ ہونے دیں. پرندوں اور جانوروں کے پانی والے برتن صاف رکھیں۔ اپنے گھر کے روشن دان، کھڑکیوں اور دروازوں پر جالی لگا کر رکھیں نیز دیہی علاقوں کے رہائشی مچھر دانی لگا کر سوئیں کیونکہ صفائی ستھرائی کا خیال رکھ کر ڈینگی مچھر کی افزائش کو روکا جا سکتا ہے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ اگر محکمہ صحت کی ٹیمیں آپ کے گھر یا کاروباری مراکز میں ڈینگی کے لاروا کے حوالے سے چیکنگ کرنے کے لئے آئیں تو ان سے بھرپور تعاون کیا جائے کیونکہ ڈینگی انتہائی خطرناک بخار ہے جو کہ جان لیوا ثابت ہوسکتا ہے۔

Your Thoughts and Comments