12 سال اور اس سے زائد عمر کے بچوں کی ویکسینیشن کا فیصلہ

بچوں کو ویکسین لگوانے میں آسانی کے لیے اسکولوں میں ویکسی نیشن کی خصوصی مہم چلائی جائے گی، اسد عمر

12 سال اور اس سے زائد عمر کے بچوں کی ویکسینیشن کا فیصلہ
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 28 ستمبر2021ء)وفاقی وزیر منصوبہ بندی اسد عمر نے کہا ہے کہ نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر (این سی او سی) کے اجلاس کے میں 12 سال اور زائد عمر کے بچوں کی ویکسی نیشن کا فیصلہ کیا گیا ہے۔اپنے ٹوئٹ میں انہوں نے کہا کہ بچوں کو ویکسین لگوانے میں آسانی کے لیے اسکولوں میں ویکسینیشن کی خصوصی مہم چلائی جائے گی۔

این سی او سی کے اعدادوشمار کے مطابق ملک میں 27 ستمبر کو کووڈ 19 کی 9 لاکھ 61 ہزار 340 ویکسین لگائیں، اب تک پاکستان نے 7 کروڑ 95 لاکھ 31 ہزار 641 خوراکیں دی ہیں۔این سی او سی نے عوام کو فوری طور پر ویکسین لگوانے پر زور دیتے ہوئے خبردار کیا تھا کہ یکم اکتوبر سے ویکسین نہ لگوانے والے افراد کو مختلف پابندیوں کا سامنا کرنا پڑے گا۔

(جاری ہے)

حکومت نے یکم ستمبر سے 17 سال سے زائد عمر کے شہریوں کو ویکسین لگانے کی منظوری دی تھی۔

وزیر اعظم کے معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر فیصل سلطان نے کہا کہ تھا کہ 17 سال سے زائد عمر کے نوجوانوں کو تعلیمی اداروں میں داخل ہونے کے لیے 15 اکتوبر تک مکمل ویکسین لگوانی ہوگی۔رواں ماہ کے آغاز میں این سی او سی نے 18 سال سے کم عمر کے شہریوں کیلئے کورونا ویکسینیشن گائیڈ لائنز پر نظر ثانی کی تھی اور کہا تھا کہ انہیں فائزر ویکسین لگائی جائے گی۔

این سی او سی کے بیان میں کہا گیا تھا کہ 18 سال سے کم عمر افراد کو نیشنل ایمیونائزیشن مینجمنٹ سسٹم میں رجسٹریشن کے لیے اپنا بے فارم نمبر فراہم کرنا ہوگا۔ملک میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا وائرس کے 1400 کیسز رپورٹ ہوئے ہیں جو کہ 5 جولائی کے بعد سب سے کم ہے جب ملک میں 830 کیسز سامنے آئے تھے۔سب سے زیادہ نئے کیسز پنجاب سے 574، سندھ میں 535 اور خیبر پختونخوا میں 143 رپورٹ ہوئے۔نئے کیسز کے بعد ملک میں کیسز کی مجموعی تعداد 12 لاکھ 41 ہزار 825 ہوگئی ہے اور مثبت کیسز کی شرح 3.1 فیصد ہے۔دریں اثنا ملک میں کورونا وائرس سے مزید 41 افراد انتقال کرگئے جس کے بعد ہلاکتوں کی مجموعی تعداد 27 ہزار 638 تک پہنچ گئی ہے۔

Your Thoughts and Comments