بند کریں
صحت صحت کی خبریںمحکمہ صحت خیبر پختونخوا نے طویل ترغیر حاضری کے الزامات میں چالیس ڈاکٹروں کو ملازمت سے برطرف ..

صحت خبریں

وقت اشاعت: 03/09/2014 - 22:12:43 وقت اشاعت: 03/09/2014 - 21:13:17 وقت اشاعت: 03/09/2014 - 21:07:53 وقت اشاعت: 03/09/2014 - 20:32:41 وقت اشاعت: 03/09/2014 - 19:33:42 وقت اشاعت: 03/09/2014 - 17:16:24 وقت اشاعت: 03/09/2014 - 16:01:44 وقت اشاعت: 03/09/2014 - 15:07:13 وقت اشاعت: 03/09/2014 - 15:05:58 وقت اشاعت: 03/09/2014 - 14:43:38 وقت اشاعت: 03/09/2014 - 14:00:12

محکمہ صحت خیبر پختونخوا نے طویل ترغیر حاضری کے الزامات میں چالیس ڈاکٹروں کو ملازمت سے برطرف کردیا

پشاور (اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔3 ستمبر۔2014ء) محکمہ صحت خیبر پختونخوا نے طویل ترغیر حاضری کے الزامات میں چالیس ڈاکٹروں کو ملازمت سے برطرف کر دیا ہے ۔ محکمہ صحت کی سفارشات پر چیف سیکرٹری خیبر پختونخوا کی جانب سے سمری کی منظوری دیدی گئی ہے اور سمری واپس محکمہ صحت کو ارسال کر دی ہے ۔ برطرف کئے جانے والے ڈاکٹروں میں سے دس لیڈیز ڈاکٹرز بھی شامل تھے ۔

پشاور سمیت صوبے کے مختلف ڈسٹرکٹ و تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتالوں، بی ایچ یوز میں تعینات چالیس ڈاکٹر عرصہ دراز سے غیر حاضر تھے ۔ جن پر محکمہ صحت کی جانب سے انہیں شوکاز نوٹسز بھی جاری کردیئے گئے تھے ۔ تاہم اس کے باوجود یہ ڈاکٹرز ڈیوٹی سے غیر حاضر پائے گئے ۔ ان ڈاکٹروں کی غیر حاضری کے باعث سرکاری ہسپتالوں میں مریضوں کو مشکلات درپیش آ رہی ہے ۔ محکمہ صحت کی جانب سے ان ڈاکٹروں کو فارغ کرنے کی سفارشات کی سمری چیف سیکرٹری کو ارسال کی گئی ۔ اور اس ضمن میں اعلامیہ جاری کردیا ہے

03/09/2014 - 17:16:24 :وقت اشاعت