بند کریں
صحت صحت کی خبریں صوبے بھر میں آبنوشی کی تمام سکیموں کی بروقت اور معیاری تکمیل یقینی بنائی جائیں،پرویزخٹک،
پورے ..

صحت خبریں

وقت اشاعت: 28/09/2014 - 16:59:20 وقت اشاعت: 28/09/2014 - 16:59:20 وقت اشاعت: 28/09/2014 - 16:33:41 وقت اشاعت: 28/09/2014 - 16:02:32 وقت اشاعت: 28/09/2014 - 13:32:17 وقت اشاعت: 27/09/2014 - 23:21:48 وقت اشاعت: 27/09/2014 - 23:20:55 وقت اشاعت: 27/09/2014 - 19:52:05 وقت اشاعت: 27/09/2014 - 18:46:04 وقت اشاعت: 27/09/2014 - 18:39:42 وقت اشاعت: 27/09/2014 - 17:55:10

صوبے بھر میں آبنوشی کی تمام سکیموں کی بروقت اور معیاری تکمیل یقینی بنائی جائیں،پرویزخٹک،

پورے ملک میں لوگوں بالخصوص بچوں کو آدھی سے بھی زیادہ بیماریاں ناقص یا آلودہ پانی پینے سے لاحق ہوتی ہیں

پشاور(اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔27ستمبر۔2014ء)خیبرپختونخوا کے وزیر اعلیٰ پرویز خٹک نے صوبے بھر میں آبنوشی کی تمام سکیموں کی بروقت اور معیاری تکمیل یقینی بنانے کی ہدایت کرتے ہوئے محکمہ آبنوشی کے حکام پر واضح کیا ہے کہ اس ضمن میں کوئی شکایت برداشت نہیں کی جائے گی وہ اپنے دفتر سی ایم سیکرٹریٹ پشاور میں مختلف اضلاع میں دیہی اور شہری سطح پر پینے کے صاف پانی کی جاری اور نئی سکیموں پر پیشرفت سے متعلق جائزہ اجلاس سے خطاب کر رہے تھے جس میں منصوبہ بندی و ترقیات کے پارلیمانی سیکرٹری میاں خلیق الرحمان کے علاوہ محکمہ پبلک ہیلتھ انجینئرنگ اور انسپکشن ٹیم کے سیکرٹریوں، انجینئرز اور دیگر متعلقہ حکام نے شرکت کی وزیراعلیٰ نے واٹرسپلائی کی تمام سکیموں میں کوالٹی کنٹرول کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ یہ محکموں کے بنیادی فرائض میں شامل ہونا چاہئے انہوں نے اس بات پر افسوس کا اظہار کیا کہ پورے ملک میں لوگوں بالخصوص بچوں کو آدھی سے بھی زیادہ بیماریاں ناقص یا آلودہ پانی پینے سے لاحق ہوتی ہیں اور اسکی بنیادی وجہ متعلقہ محکموں اور حکام کی کرپشن اور چشم پوشی ہے مگر اب اس گندے کھیل کی کم از کم خیبر پختونخوا میں ہرگز اجازت نہیں دی جائے گی حکام کو نہ صرف آبنوشی کی جاری و نئی بلکہ مکمل شدہ سکیموں میں پانی کا معیار جانچنا اور کسی بھی خرابی کی تصحیح کرنا ہو گی تاکہ معصوم شہریوں کو جانے انجانے میں پانی کی جگہ زہر نہ پلایا جا سکے انہوں نے خبردار کیا کہ اس ضمن میں ٹھوس عوامی شکایت یا غفلت کا سخت ترین نوٹس لیا جائے گا اور ایسے ہر کیس کی نہ صرف انسپکشن ٹیم سے انکوائری کرائی جائے گی بلکہ محکمہ اینٹی کرپشن کو بھی رول دیا جائے گا پرویز خٹک نے کہا کہ عوام کو پینے کے صاف پانی کی فراہمی کے حوالے سے محکمہ آبنوشی کو اپنا وجود منوانا ہو گا بصورت دیگر اسکے باقی رہنے کا جواز ختم ہو جائے گا محکمے اسلئے نہیں ہوتے کہ وہ صرف ملازمین بھرتی کرتے اور انہیں مفت کی تنخواہیں دیتے رہیں جبکہ عوام کو رتی بھر فائدہ بھی نہ پہنچا سکیں پی ٹی آئی کی اتحادی حکومت میں غریب عوام کے فنڈز پر پلنے والے ایسے سفید ہاتھیوں کی کوئی گنجائش نہیں اور نہ ہی ہم کسی بھی محکمے میں کرپشن اور بدعنوانی کی اجازت دینگے بلکہ ہر کرپٹ اہلکار کی فوری اور عبرتناک سرزنش ہو گی جس کیلئے احتساب کمیشن بھی فعال بنایا جا رہا ہے محکمہ آبنوشی کے حکام نے وزیراعلیٰ کی ہدایت پر واٹر سپلائی کی تمام سکیموں کی کوالٹی کنٹرول کے مطابق بروقت اور معیاری تکمیل کے علاوہ فنڈز کا شفاف اور منصفانہ استعمال یقینی بنانے کا یقین دلایا۔

27/09/2014 - 23:21:48 :وقت اشاعت