بند کریں
صحت صحت کی خبریںاسرائیلی کارخانوں کے زہریلے دھوئیں سے ہزاروں فلسطینی مہلک بیماریوں کا شکار

صحت خبریں

وقت اشاعت: 29/05/2007 - 16:18:20 وقت اشاعت: 28/05/2007 - 23:50:08 وقت اشاعت: 28/05/2007 - 20:12:09 وقت اشاعت: 28/05/2007 - 17:33:27 وقت اشاعت: 28/05/2007 - 12:39:12 وقت اشاعت: 28/05/2007 - 00:11:11 وقت اشاعت: 27/05/2007 - 22:15:09 وقت اشاعت: 27/05/2007 - 18:52:30 وقت اشاعت: 27/05/2007 - 17:44:48 وقت اشاعت: 25/05/2007 - 14:28:43 وقت اشاعت: 25/05/2007 - 11:27:18

اسرائیلی کارخانوں کے زہریلے دھوئیں سے ہزاروں فلسطینی مہلک بیماریوں کا شکار

رملہ (اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔28مئی۔2007ء) اسرائیلی کارخانوں کے زہریلے دھوئیں سے ہزاروں فلسطینی مہلک بیماریوں کا شکار ہوچکے ہیں۔ فلسطینی محکمہ صحت کی جانب سے جاری کردہ ایک رپورٹ میں مغربی کنارے کے بعض شہروں میں اسرائیلی کارخانوں کی وجہ سے بڑھتی ہوئی فضائی آلودگی پر سخت تشویش کا اظہار کیا گیا ہے- رپورٹ کے مطابق اسرائیل مقبوضہ علاقوں میں صنعتی کارخانوں کے جال بچھا رہا ہے- جس کی وجہ سے ہوا، پانی اور مٹی زہر آلود ہو چکی ہے- سب سے زیادہ ”سلفیت،، کا علاقہ متاثر ہوا ہے، جہاں فلسطینی شہری کینسر، ہیپاٹائٹس سی اور جلد کے مہلک امراض کا شکار ہو چکے ہیں- اعداد و شمار کے مطابق جب تک ہزاروں افراد ہسپتالوں میں علاج کے لیے داخل کیے جاچکے ہیں- رپورٹ کے مطابق اسرائیلی کارخانوں کا زہریلو خاص مادہ کھلے عام فلسطینیوں کی زمینوں پر اور فصلوں میں پھینک دیا جاتا ہے جس کی وجہ سے فضائی آلودگی میں تیزی سے اضافہ ہونے کے ساتھ ساتھ فصلیں تباہ ہو رہی ہیں- مغربی کنارے اور اس کے مضافات میں دوسو پچاس نئے کارخانے قائم کیے گئے ہیں یہ کارخانے عین آبادیوں کے درمیان قائم کیے گئے ہیں تاکہ فلسطینیوں کو نقل مکانی پر مجور کر کے علاقے پر مستقبل قبضہ قائم کیا جاسکے- رپورٹ کے مطابق اسرائیل مغربی کنارے میں مزید کارخانوں کے قیام کے لیے دو لاکھ ستر ہزار ڈالر کی مزید سرمایہ کاری کررہا ہے-
28/05/2007 - 12:39:12 :وقت اشاعت