بند کریں
صحت صحت کی خبریںموٹاپا دنیا کی تیزی سے بڑھتی ہوئی بیماریوں میں سے ایک،
پاکستان میں تقریباً 20 فیصد افراد ..

صحت خبریں

وقت اشاعت: 31/10/2014 - 12:41:18 وقت اشاعت: 31/10/2014 - 12:37:57 وقت اشاعت: 31/10/2014 - 12:08:10 وقت اشاعت: 31/10/2014 - 11:50:21 وقت اشاعت: 30/10/2014 - 22:52:56 وقت اشاعت: 30/10/2014 - 22:52:56 وقت اشاعت: 30/10/2014 - 22:25:27 وقت اشاعت: 30/10/2014 - 20:25:17 وقت اشاعت: 30/10/2014 - 19:59:36 وقت اشاعت: 30/10/2014 - 19:07:54 وقت اشاعت: 30/10/2014 - 19:07:54

موٹاپا دنیا کی تیزی سے بڑھتی ہوئی بیماریوں میں سے ایک،

پاکستان میں تقریباً 20 فیصد افراد موٹاپے کا شکار

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔30اکتوبر 2014ء )موٹاپا دنیا کی تیزی سے بڑھتی ہوئی بیماریوں میں سے ایک ہے پاکستان میں تقریباً 20 فیصد افراد موٹاپے کا شکار ہیں جو کہ صرف بڑی عمر کے مرد اور خواتین تک محدود نہیں بلکہ نوجوانوں لڑکے اورلڑکیاں بھی اس کا شکار ہیں ان خیالات کا اظہار ماہرین امراض ذیا بیطس و موٹاپا ڈاکٹر خاور کاظمی ، ڈاکٹر نجم الاسلام، ڈاکٹر زاہد میاں ، ڈاکٹر زاہد یعقوب ، ڈاکٹر مسعود حمید خان نے موٹاپے کے عالمی دن کے حوالے سے موٹاپے سے ہونے والی بیماریوں اور اس سے بچاؤ کے سلسلے میں کراچی پریس کلب میں پریس بریفنگ کے دوران کیا ۔

ماہرین نے کہا کہ حال ہی میں امریکن میڈیکل ایسوسی ایشن نے موٹاپے کو باقاعدہ طور پر ایک بیماری قرار دیا ہے نیشنل ہیلتھ سروئے اور عالمی ادارہ صحت WHO کے مطابق پاکستان میں 20 فیصد افراد اس بیماری کا شکار ہیں چونکہ موٹاپا بیماریوں کی جڑ ہے اس لئے یہ کئی اقسام کی بیماریوں کو جنم دیتاہے جن میں ہائی بلڈ پریشر ، ذیابیطس امراض قلب ، فالج ، کولیسٹرول ، بانجھ پن گردے اور گھٹنے کی بیماریاں اور کئی اقسام کے کینسرز،مقررین نے کہا کہ تحقیق کے مطابق موٹاپے کا شکار لوگوں کی نہ صرف جسمانی سر گرمیاں محدود ہو جاتی ہیں بلکہ وہ کم عرصے تک زندہ رہ پاتے ہیں انھوں نے کہا کہ تحقیق و اعداد وشمار کے مطابق وزن میں 5 سے10 فیصد کمی سے درج بالا بیماریوں سے ممکنہ حد تک بچا جا سکتا ہے مقررین نے کہا کہ آئیں ہم موٹاپے کے عالمی دن کے موقع پر یہ عہد کریں کہ اس موذی مرض کے خلاف بھر پور کردار ادا کریں گے تاکہ ہم ایک صحت مند معاشرہ تعمیر کر سکیں ۔

#

30/10/2014 - 22:52:56 :وقت اشاعت