بند کریں
صحت صحت کی خبریںراولپنڈی اسلام آباد میٹرو بس منصوبے جیسا منصوبہ عوامی بہبود کا ایسا منصوبہ ہے ‘جس سے زیادہ ..

صحت خبریں

وقت اشاعت: 18/11/2014 - 12:09:50 وقت اشاعت: 17/11/2014 - 23:01:52 وقت اشاعت: 17/11/2014 - 22:16:42 وقت اشاعت: 17/11/2014 - 22:16:30 وقت اشاعت: 17/11/2014 - 22:13:58 وقت اشاعت: 17/11/2014 - 22:12:34 وقت اشاعت: 17/11/2014 - 22:04:14 وقت اشاعت: 17/11/2014 - 22:04:14 وقت اشاعت: 17/11/2014 - 22:01:33 وقت اشاعت: 17/11/2014 - 21:42:33 وقت اشاعت: 17/11/2014 - 21:40:43

راولپنڈی اسلام آباد میٹرو بس منصوبے جیسا منصوبہ عوامی بہبود کا ایسا منصوبہ ہے ‘جس سے زیادہ تر غریب اور متوسط طبقہ مستفید ہو گا ‘منصوبہ ایک سٹیٹ آف دی آرٹ ماس ٹرانزٹ سسٹم ہو گا،

میٹرو بس پراجیکٹ عملدرآمد کمیٹی کے ممبرو پنجاب اسمبلی کے رکن راجہ حنیف ایڈووکیٹ کی بات چیت

راولپنڈی(اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔17نومبر 2014ء)میٹرو بس پراجیکٹ عملدرآمد کمیٹی کے ممبر و پنجاب اسمبلی کے رکن راجہ حنیف ایڈووکیٹ نے کہا کہ راولپنڈی اسلام آباد میٹرو بس منصوبے جیسا منصوبہ عوامی بہبود کا ایسا منصوبہ ہے جس سے زیادہ تر غریب اور متوسط طبقہ مستفید ہو گا ․ اور یہ منصوبہ ایک سٹیٹ آف دی آرٹ ماس ٹرانزٹ سسٹم ہو گا․ انہو ں نے کہا کہ میٹرو بس منصوبے کی بلا جواز مخالفت کرنے والے عوام کو میسر آنے والی سہولتوں اور ریلیف کو برداشت نہیں کر پا رہے ․ حالانکہ یہ ایسا منصوبہ ہے جس کے ذریعے راولپنڈی اور اسلام آباد کے عوام براہ راست مستفید ہو ں گے ․ انہوں نے کہا کہ میٹرو بس منصوبے پر عملدرآمد کر کے وزیر اعلی پنجاب محمد شہباز شریف نے نہ صرف اپنا وعدہ پورا کیا بلکہ لاہور کے بعد راولپنڈی کے عوام کی ضرورتوں کو پیش نظر رکھتے ہوئے ایک بین الاقوامی معیار کا ماس ٹرانزٹ سسٹم فراہم کیا ہے ․ جس کی تکمیل کے بعد مخالفین کے منہ خود بخود بند ہو جائیں گے ۔

ان خیالات کا اظہارانہوں نے گزشتہ روز پیکج ون،ٹو اور تھری کے دورہ کے موقع پر کیا،پراجیکٹ ڈائریکٹر عمر فاروق،پراجیکٹ منیجر سلیم بھٹی،محمد جمیل خالق،مرزا ناصر،عمر منیر اور خاور ملک سمیت تاجر برادری کے نمائندے بھی ان کے ہمراہ تھے، راجہ حنیف ایڈوکیٹ کو بریفنگ میں بتایا گیا کہ پیکج تھری کا 70 پرسنٹ کام شمس آباد سمیت مکمل ہوچکا ہے،فیض آباد ایریا،سکستھ روڈ اسٹیشن اور ڈرین پر کام جاری ہے اسی طر ح سٹیٹ پورشن مری روڈ کو کلیئر کردیا گیا ہے،راجہ حنیف ایڈوکیٹ نے فیض آباد سمیت دیگر مقامات کے معائنے کے دوران پیکج تھری پپر اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے پیکج ون اور پیکج ٹو پر تحفظات کا اظہار کیا اور ہدایات جاری کیں کہ منصوبے کی تعمیر کے دوران عوامی مفادات کا خیال رکھا جائے،عوام کی اکثریت آلودہ ماحول کی وجہ سے مختلف بیماریوں میں مبتلا ہورہی ہے،مری روڈ پر پر بے جا کھڈے بند کیئے جائی،فضول مٹی کی صفائی کی جائے اور روزانہ ہر دو گھنٹے بعد پانی کا چھڑکاؤ کیا جائے ،یوٹیلیٹی سروسز کا عمل اور ڈرین کو مکمل کرکے جلد چالو کیا جائے تاکہ شہریوں کی شکایات کا جلد از جلد ازالہ ہو،میٹرو منصوبے کے معاملات اور شہریوں کو درپیش مشکلات سے متعلق وزیراعلیٰ پنجاب کو خط بھی لکھ دیا گیا ہے،راجہ حنیف ایڈوکیٹ نے کہا کہ اگست کے شروع سے لے کر گزشتہ ماہ تک دھرنوں کی وجہ سے میٹرو بس پراجیکٹ کی تعمیری رفتار پر اگرچہ بہت زیادہ اثر پڑا اور جس تیز رفتاری سے اس منصوبے کو نو ماہ کی مدت میں مکمل کیا جانا تھا وہ ہدف اب دس ماہ کی مدت میں 30 جنوری 2015 تک اس کی تکمیل کر کے حاصل کر لیا جائے گا ․ انہو ں نے کہا کہ سروسز کی منتقلی, لینڈ ایکوزیشن کے کام سمیت منصوبے کے ہر مرحلے پر مشکلات ضرور درپیش رہیں لیکن ایوان صنعت و تجارت راولپنڈی کے عہدیداروں, اراکین , تاجر برادری , صحافیوں اور معاشرے کے تمام مکاتب فکر کے لوگوں کے تعاون سے یہ منصوبہ تیز رفتاری کے ساتھ تکمیل کی منزل کی جانب گامزن ہے ․ انہو ں نے کہا کہ میٹرو بس منصوبے کی تکمیل سے راولپنڈی سے اسلام آباد آنے جانے والے ڈیڑھ لاکھ سے زائد مسافروں کو فائدہ حاصل ہو گا․ اور وہ بیس روپے کے رعائیتی کرائے پر فلیشمنز ہوٹل راولپنڈی سے پاک سیکرٹریٹ اسلام آباد کا سفر طے کر سکیں گے ․ انہوں نے کہا کہ پاکستان مسلم لیگ (ن) کے تمام ارکان اسمبلی , پارٹی عہدیدار, کارکن اور راولپنڈی اسلام آباد کے شہری وزیر اعظم پاکستان محمد نواز شریف اور وزیر اعلی پنجاب محمد شہباز شریف کے شکر گزار ہیں جنہوں نے وفاقی دارالحکومت کے جڑواں شہروں میں بین الاقوامی معیار کا ماس ٹرانزٹ سسٹم کا منصوبہ دیا ، راولپنڈی اسلام آباد میٹرو بس پراجیکٹ 30 جنوری 2015 تک مکمل کر لیا جائے گا ․ میٹرو بس منصوبے کی تکمیل کے بعد فوری طور پر چونسٹھ بسیں(64 ) چلائی جائیں گی ․ پورے ٹریک کی نگرانی کی جائے گی ․ کمشنر راولپنڈی نے کہا کہ ہر سٹیشن پر سیڑھیوں , ایکسکلیٹرز اور معذوروں اور بزرگوں کے لیئے لفٹ کے سہولت موجود ہو گی ․ اور یہی برجز روڈ کراسنگ کے طور پر بھی کام دیں گے ․ راولپنڈی میں میٹرو بس کا ٹریک ایلیویٹڈ ہے جبکہ اسلام آباد میں تمام ٹریک آن گراؤنڈ اور سٹیشنز پر اپروچ کے لیئے انڈر پاسز کی سہولت موجود ہو گی ․انہوں نے مذید کہا کہ میٹرو بس منصوبے کی تعمیر کے سلسلے میں راولپنڈی اور اسلام آبادکے عوامی نمائندوں , ایوان ہائے صنعت و تجارت , تاجر برادری, صحافی برادری اور کمیونٹی کے دیگر شعبوں سے تعلق رکھنے والے شہریوں کے تعاون کے انتہائی شکر گزار ہیں․

17/11/2014 - 22:12:34 :وقت اشاعت