بند کریں
صحت صحت کی خبریںہر سال لاکھوں افراد سگریٹ نوشی کے باعث چیسٹ کینسر کا شکار ہو کر موت کے منہ میں چلے جاتے ہیں
عوام ..

صحت خبریں

وقت اشاعت: 18/11/2014 - 20:14:09 وقت اشاعت: 18/11/2014 - 19:45:13 وقت اشاعت: 18/11/2014 - 19:10:15 وقت اشاعت: 18/11/2014 - 19:06:35 وقت اشاعت: 18/11/2014 - 19:06:35 وقت اشاعت: 18/11/2014 - 17:56:15 وقت اشاعت: 18/11/2014 - 15:56:47 وقت اشاعت: 18/11/2014 - 15:45:24 وقت اشاعت: 18/11/2014 - 15:09:13 وقت اشاعت: 18/11/2014 - 12:09:50 وقت اشاعت: 17/11/2014 - 23:01:52

ہر سال لاکھوں افراد سگریٹ نوشی کے باعث چیسٹ کینسر کا شکار ہو کر موت کے منہ میں چلے جاتے ہیں

عوام میں تمباکو نوشی کے خلاف شعور بیدار کرنے کی ضرورت ہے، مجتبیٰ شجاع الرحمن

لاہور(اُردو پوائنٹ تاز ترین اخبار۔ 18نومبر 2014ء) وزیرایکسائز و ٹیکسیشن، خزانہ ، قانون پنجاب مجتبیٰ شجاع الرحمن نے کہاہے کہ عوام میں تمباکو نوشی کے خلاف شعور بیدار کرنے کی ضرورت ہے کیونکہ ہر سال لاکھوں افراد سگریٹ نوشی کے باعث چیسٹ کینسر کا شکار ہو کر موت کے منہ میں چلے جاتے ہیں اور 600ملین لوگ تمباکو نوشی کی پیچیدگیوں کے باعث ٹی بی و پھیپھٹروں کی خطرناک بیماریوں سے متاثر ہیں ۔

انہوں نے کہا کہ کینسر و دیگر موذی امراض کے علاج کے لئے عوام میں شعور بیدار کیا جائے کیونکہ صوبہ کے ٹیچنگ و بڑے سرکاری ہسپتالوں میں کینسر کے علاج کی سہولتیں میسر ہیں ۔شالیمار ٹاؤن میں تمباکو نوشی بارے شعور کے عالمی دن کے حوالے سے ڈاکٹرز کے وفد اور پارٹی ورکرز سے گفتگو کرتے ہوئے مجتبیٰ شجاع الرحمن نے کہا کہ صوبائی حکومت نے ملینیم ڈویلپمنٹ اہداف حاصل کرنے کے لئے صحت کے شعبہ کو 121ارب روپے فراہم کئے گئے ہیں۔

حکومت کا بنیادی فوکس پرائمری ہیلتھ کیئر اور بیماریوں سے بچاؤ ہے- انہوں نے کہا کہ ترقی پذیر اضلاع خصوصا جنوبی پنجاب کے علاقوں کے لئے موبائل ہیلتھ یونٹس فراہم کئے جائیں گے جس کے لئے ایک ارب روپے کے فنڈز مختص کئے گئے ہیں- انہوں نے کہا کہ کم وسائل رکھنے والے لوگوں کو صحت کی معیاری سہولیات کی فراہمی کے لئے 8 ارب 75 کروڑ روپے، ماں و بچے کی صحت کے ایک منصوبے کے لیے 1.80۔

ارب روپے مختص کئے گئے ہیں۔انہوں نے کہا کہ امراض گردہ میں مبتلاغریب مریضوں کو مفت ڈائیلاسسز کے لئے 60 کروڑ روپے جاری کئے گئے ہیں ۔مجتبیٰ شجاع الرحمن نے کہا کہ بچوں کو بیماریوں سے محفوظ بنانے کے لئے صوبہ بھر کے بچوں کو حفاظتی ٹیکے لگائے جاتے ہیں اور ویکسین دی جاتی ہے ، حکومت اس پروگرام کے لئے خطیر رقم خرچ کر رہی ہے-انہوں نے بتایا کہ4ارب روپے سے ہیلتھ انشورنس کارڈ سکیم شروع کی جائے گی جس کی بدولت کم آمدنی والے افراد سرکاری ہسپتالوں کے علاوہ بہترین نجی طبی اداروں میں بھی علاج کی مفت سہولت حاصل کر سکیں - انہوں نے کہا کہ صوبے کے مختلف علاقوں میں ترقیاتی تفاوت کم کرنے کے لئے پسماندہ اضلاع کو ترقی یافتہ اور خوشحال بنانے کے لئے اربوں روپے کے وسائل فراہم کئے جارہے ہیں کیونکہ جنوبی پنجاب کے عوام کا معیار زندگی بلند کر کے انہیں ترقی کے دھارے میں لانا ہماری ترجیحات میں شامل ہے۔



18/11/2014 - 17:56:15 :وقت اشاعت