بند کریں
صحت صحت کی خبریںوزیراعلیٰ سے انٹرنیشنل ریسکیو کمیٹی کے صدرو سابق برطانوی وزیر خارجہ ڈیوڈ ملی بینڈ کی ملاقات،ریسکیو،تعلیم ..

صحت خبریں

وقت اشاعت: 19/11/2014 - 13:09:53 وقت اشاعت: 19/11/2014 - 12:50:35 وقت اشاعت: 19/11/2014 - 12:34:38 وقت اشاعت: 19/11/2014 - 11:00:36 وقت اشاعت: 18/11/2014 - 23:45:30 وقت اشاعت: 18/11/2014 - 21:59:40 وقت اشاعت: 18/11/2014 - 20:54:05 وقت اشاعت: 18/11/2014 - 20:51:31 وقت اشاعت: 18/11/2014 - 20:48:11 وقت اشاعت: 18/11/2014 - 20:46:08 وقت اشاعت: 18/11/2014 - 20:43:42

وزیراعلیٰ سے انٹرنیشنل ریسکیو کمیٹی کے صدرو سابق برطانوی وزیر خارجہ ڈیوڈ ملی بینڈ کی ملاقات،ریسکیو،تعلیم اوردیگر شعبوں میں تعاون پر تبادلہ خیال،پنجاب میں حالیہ سیلاب نے بے پناہ تباہی مچائی،حکومت نے متعلقہ اداروں کے تعاون سے تاریخ کا بڑا ریلیف اینڈ ریسکیو آپریشن مکمل کیا،سیلاب متاثرین کی بحالی اور ان کی دوبارہ آبادکاری کے لئے16ارب روپے کاتاریخی پیکیج دیا گیا ہے،شمالی وزیرستان میں دہشت گردی کے خلاف جنگ میں بے گھر ہونیوالے بہن بھائیوں کی بھر پور مدد کی جارہی ہے،شہبازشریف،

برطانوی ترقی کے ادارے ڈیفڈ کے تعاون سے تعلیم اور صحت کے شعبوں کی بہتری کیلئے جامع پروگرام پر عملد رآمد جاری ہے،شہبازشریف کی قیادت میں پنجاب نے مختلف شعبوں میں مثالی ترقی کی ہے،سابق برطانوی وزیر خارجہ ڈیوڈ ملی بینڈ

لاہور(اُردو پوائنٹ تاز ترین اخبار۔ 18نومبر 2014ء)وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے کہا ہے کہ پنجاب میں حالیہ سیلاب سے بڑے پیمانے پر تباہی ہوئی، لاکھوں افراد متاثر ہوئے،گھروں اورفصلوں کو بھی نقصان پہنچا۔ حکومت نے متعلقہ اداروں کے تعاون سے تاریخ کا سب سے بڑا ریلیف اینڈ ریسکیو آپریشن کامیابی سے مکمل کیا۔سیلاب متاثرین کی بحالی کیلئے 16 ارب روپے کا تاریخی پیکیج دیا ہے۔

شمالی وزیرستان میں دہشت گردی کے خلاف جنگ میں بے گھر ہونیوالے بہن بھائیوں کی بھی بھرپور مدد کی جا رہی ہے۔ تعلیم، صحت، امن عامہ اور دیگر شعبوں کی بہتری کیلئے جامع اقدامات کئے جا رہے ہیں۔برطانیہ کے ترقیاتی ادارے ڈیفڈ کے تعاون سے تعلیم اور صحت کے شعبوں کی بہتری کیلئے جامع پروگرام پر عملدرآمد کیا جا رہا ہے۔ان خیالات کا اظہار وزیراعلیٰ محمد شہبازشریف نے انٹرنیشنل ریسکیو کمیٹی کے صدر و چیف ایگزیکٹو آفیسرو سابق برطانوی وزیر خارجہ ڈیوڈ ملی بینڈ سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ،جنہوں نے اپنے وفد کے ہمراہ یہاں ان سے ملاقات کی۔

ملاقات میں قدرتی آفات کے دوران ریسکیو، تعلیم، صحت اور دیگر شعبوں میں تعاون پر تبادلہ خیال کیا گیا۔اس موقع پر وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف نے گفتگو کرتے ہو ئے کہا کہ قدرتی آفات کے باعث ہونے والے نقصانات کو کم سے کم کرنے کیلئے حکمت عملی تیار کی جا رہی ہے،پنجاب میں حالیہ سیلاب کے دوران تمام متعلقہ اداروں نے ایک ٹیم ورک کے طورپر کام کیا ہے اور لاکھوں لوگوں کو بر وقت امداد مہیا کی تاہم اس ضمن میں انٹرنیشنل ریسکیو کمیٹی اورپنجاب کے متعلقہ اداروں کے مابین تعاون کو فروغ دیا جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ تعلیم ،صحت اورامن عامہ کے شعبے ہماری اولین ترجیحات میں شامل ہیں اورحکومت ان شعبوں کی بہتری کے لئے جامع پروگرام پر عمل پیرا ہے۔گزشتہ برس ساڑھے سات ارب روپے کی لاگت سے سکولوں میں عدم دستیاب سہولتیں فراہم کی گئیں جبکہ رواں برس سوا آٹھ ارب روپے کی لاگت سے سکولوں میں عدم دستیاب سہولتیں فرہم کی جا رہی ہیں۔وزیراعلیٰ نے کہاکہ چند برس کے دوران ایک لاکھ اساتذہ صرف اور صرف میرٹ پر بھرتی کئے گئے ہیں۔

پنجاب ایجوکیشن فاؤنڈیشن کی واؤچر سکیم کے تحت 15 لاکھ طلبا و طالبات کو تعلیم کی سہولت فراہم کی گئی ہے۔ پنجاب ایجوکیشنل انڈومنٹ فنڈ کے ذریعے ذہین مگر کم وسیلہ طلبا و طالبات کو تعلیمی وظائف دیئے جا رہے ہیں۔انڈومنٹ فنڈ کے ذریعے 60 ہزار سے زائد طلبا و طالبات اعلیٰ تعلیم حاصل کر رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ صحت کے حوالے سے مدر اینڈ چائلڈ کئیر پر خصوصی توجہ دی جا رہی ہے۔

6 موبائل ہسپتال صوبے کے دور دراز علاقوں میں عوام کو جدید طبی سہولتیں فراہم کر رہے ہیں۔ مظفرگڑھ میں ترکی کے تعاون سے سٹیٹ آف دی آرٹ طیب اردگان ہسپتال مریضوں کو علاج معالجے کی بہترین سہولتیں فراہم کر رہا ہے۔انہوں نے کہاکہ توانائی بحران کے حل کیلئے تیز رفتاری سے اقدامات اٹھائے جا رہے ہیں۔جنوبی پنجاب میں پاکستان کا پہلا قائداعظم سولر پارک قائم کیا گیا ہے۔

پنجاب حکومت 100 میگاواٹ کا سولر پاور پراجیکٹ اپنے وسائل سے لگا رہی ہے جو جلد مکمل ہوگا۔کوئلے سے توانائی کے حصول کیلئے بھی متعدد منصوبوں پر کام جاری ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگلے ساڑھے تین برس کے دوران صوبے میں ترقی کی شرح 7 فیصد تک لے جانے کا ہدف مقرر کیا گیاہے۔امن عامہ کی صورتحال کی بہتری کیلئے انسداد دہشت گردی کا علیحدہ محکمہ قائم کیا گیا ہے۔

سیف سٹی پراجیکٹ پر بھی کام کیا جا رہا ہے۔انہو ں نے کہا کہ لاہور میں جدید ترین اینٹی گریٹڈ کمانڈ اینڈ کنٹرول سینٹر کا منصوبہ شروع کیا گیا ہے جس کے تحت پہلے مرحلے میں لاہور میں سی سی ٹی وی کیمرے لگائے جائیں گے۔وزیراعلیٰ نے کہا کہ تعلیم، صحت، پولیس اور دیگر شعبوں میں انفارمیشن ٹیکنالوجی سے استفادہ کیا جا رہا ہے۔لاہو رمیں سرکاری سطح پر پہلی انفارمیشن ٹیکنالوجی یونیورسٹی قائم کی گئی ہے۔

صوبے کے 5 ہزار ہائی سکولوں میں آئی ٹی لیبز کا قیام عمل میں لایا گیا ہے۔حالیہ سیلاب کے دوران گھروں اورفصلوں کو پہنچنے والے نقصانات کا تخمینہ لگانے کے لئے بھی انفارمیشن ٹیکنالوجی سے استفادہ کیاگیا اورعالمی بینک نے بھی پنجاب حکومت کے سروے پر اطمینان کا اظہار کیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ حکومت عوام کے مسائل کے حل کیلئے نئے عزم اور جذبے سے کام کر رہی ہے اورانشاء اللہ حکومتی اقدامات سے عوام کی زندگیوں میں بہتری آئے گی۔

ڈیوڈ ملی بینڈ نے اس موقع پر کہا کہ وزیراعلیٰ شہباز شریف نے پنجاب میں عوام کی فلاح و بہبود کیلئے شاندار اقدامات کئے ہیں۔مجھے خوشی ہے کہ شہباز شریف کی قیادت میں پنجاب مختلف شعبوں میں آگے بڑھ رہا ہے۔انہوں نے کہا کہ پنجاب حکومت کے ساتھ ریسکیو، تعلیم اور صحت کے حوالے سے اشترا ک کو فروغ دیں گے۔صوبائی وزراء کرنل (ر) شجاع خانزادہ، رانا مشہود احمد، بیگم ذکیہ شاہنواز، ایم پی اے ڈاکٹر عائشہ غوث پاشا، سیکرٹری سکولز ایجوکیشن، سیکرٹری سپورٹس، سیکرٹری ہوم اور ڈی جی پی ڈی ایم اے بھی اس موقع پر موجود تھے۔

18/11/2014 - 21:59:40 :وقت اشاعت