بند کریں
صحت صحت کی خبریںکوئٹہ میں پولیو ٹیم پر حملے ،صو بائی حکومت نے واقعہ کی تحقیقات کیلئے دو کمیٹیاں قائم کردی ..

صحت خبریں

وقت اشاعت: 26/11/2014 - 20:19:20 وقت اشاعت: 26/11/2014 - 20:17:18 وقت اشاعت: 26/11/2014 - 20:10:53 وقت اشاعت: 26/11/2014 - 20:07:04 وقت اشاعت: 26/11/2014 - 20:05:52 وقت اشاعت: 26/11/2014 - 19:55:18 وقت اشاعت: 26/11/2014 - 19:52:36 وقت اشاعت: 26/11/2014 - 19:12:07 وقت اشاعت: 26/11/2014 - 19:07:39 وقت اشاعت: 26/11/2014 - 19:07:39 وقت اشاعت: 26/11/2014 - 19:07:39

کوئٹہ میں پولیو ٹیم پر حملے ،صو بائی حکومت نے واقعہ کی تحقیقات کیلئے دو کمیٹیاں قائم کردی ،

پولیو ٹیم پر حملہ انسانیت سوز واقعہ ہے، دہشت گردوں کا بھرپور انداز میں مقابلہ کرینگے، ذمہ دار افراد کو گرفتارکر کے قرار واقعی سزا دی جائیگی، , دہشتگردی پھیلانے والوں کے عزائم کو ناکام بنانے کیلئے متحد ہو کر کام کرنے کی ضرورت ہے، میر سرفراز بگٹی ‘ میر رحمت صالح بلوچ ،خالد لانگو کی مشترکہ پریس کانفرنس

کوئٹہ(اُردو پوائنٹ تاز ترین اخبار۔ 26نومبر 2014ء)کوئٹہ میں پولیو ٹیم پر حملے کے بعد صو بائی حکومت نے واقعہ کی تحقیقات کیلئے دو کمیٹیاں قائم کردی جاں بحق ہونے والے پولیو ورکرز کے ورثاء کو دس دس لاکھ روپے اور زخمیوں کو دو دو لاکھ روپے کی حکومتی امداد فراہم کی جائیگی کوئٹہ میں صو بائی وزیر داخلہ میر سرفراز بگٹی ‘ وزیر صحت میر رحمت صالح بلوچ اور مشیر خزانہ خالد لانگو نے مشترکہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ مشرقی بائی پاس میں پولیو ٹیم پر حملہ انسانیت سوز واقعہ ہے حکومت نے اس سلسلے میں سی سی پی او اور ڈی ایچ او کوئٹہ کی سربراہی میں دو کمیٹیاں بنا کر رپورٹ 24گھنٹے میں اپنی تحقیقات سے صو بائی حکومت کا آگاہ کریگی سیکورٹی اور دیگر حوالے سے جو بھی غفلت ہوئی ان کو بھی معاف نہیں کرینگے بلو چستان سے دہشتگردی کی خاتمے کیلئے سب کو مل کر کام کرنا ہو گا تاکہ غلط سو چ رکھنے والے عناصر کی سازشوں کو ناکام بنائیں وزیر داخلہ بلو چستان سرفراز بگٹی کا کہنا تھا کہ بلو چستان وارزون میں واقع ہے اس لئے پولیو کی ٹیموں پر حملوں سمیت متعدد تھرٹ موجود ہے جن کا بھرپور انداز میں مقابلہ کرینگے پولیو ٹیموں کو سو فیصد سیکورٹی فراہم کی جائیگی واقعہ کی تحقیقات مکمل ہونے کے بعد جو بھی ذمہ دار ہوا ایسے قرارواقعی سزادی جائیگی میڈیا نے بروقت نشاندہی کرکے حکومت کی مدد کی مرنے والے پولیو ورکرز کے خاندانوں کے ساتھ مکمل اظہار یکجہتی کرتے ہیں اور کسی کو بھی تنہاء نہیں چھوڑا جائیگا پولیو ورکرز کی گھروں پر بھی جا کر صو بائی وزراء نے ہمدردی کا اظہار کیا ہے دہشتگردی پھیلانے والوں کی عزائم کو ناکام بنانے کیلئے متحد ہو کر کام کرنے کی ضرورت ہیں اس موقع پروزیر صحت نے کہا کہ پولیو رضا کاروں کے بائیکاٹ علم نہیں اور نہ ہی اس بارے میں اسی کوئی بات سامنے آئی ہے پولیو مہم کل سے باقاعدہ متاثرہ علاقوں میں جاری رہی گی غلط فتوؤں کے ذریعے انتشار پھیلانے والے بلو چستان کے عوام کو پہلے بھی استعمال کرتے رہے ہیں اور اب بھی ان کی یہی عزائم ہے لیکن اس غلط سوچ کو عوام میں شعور بیدا رکرکے ختم کیا جائیگا انہوں نے کہا کہ پولیو ٹیموں کی سیکورٹی سے متعلق بھرپور اقدامات کئے جارہے ہیں اور اس سے قبل بھی اقدامات کئے گئے تھے لیکن واقعہ پولیو ٹیموں کی روانگی سے قبل رضا کاروں کی گاڑی پر فائرنگ کرنے سے ہوا جس کی ہر پہلو سے تحقیقات کی جارہی ہیں محکمہ صحت کی جانب سے ذمہ داروں نے اگر کوئی کوتاہی بھرتی تو ان کے خلاف محکمانہ کارروائی عمل میں لائی جائیگی ضلعی ہیلتھ آفیسر کی سربراہی میں ایک کمیٹی قائم کی گئی ہے جو اپنی رپورٹ 24گھنٹوں کے اندر مرتب کرکے حکام دیگی اس موقع پر سیکرٹری صحت ارشد بگٹی‘ڈی جی ہیلتھ نصیر احمد بلوچ ‘ڈی سی کوئٹہ عبدالطیف کاکڑ اور ڈی جی پی آر کامران اسد بھی موجود تھے۔

26/11/2014 - 19:55:18 :وقت اشاعت