غریب ،متوسط طبقات کو حقوق دیئے بغیر ملک میں حقیقی تبدیلی نہیں آسکتی ،محمد طاہرکھوکھر

مظفر آباد (اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 22 دسمبر 2014ء)ایم کیو ایم آزادکشمیرکے پارلیمانی لیڈر ‘ جوائنٹ انچارج صوبائی تنظیمی کمیٹی محمد طاہرکھوکھر نے کہا ہے کہ غریب و متوسط طبقات کو حقوق دیئے بغیر ملک میں حقیقی تبدیلی نہیں آسکتی ‘اگر کوئی حقیقی تبدیلی یا انقلاب لا سکتا ہے تو متوسط اور غریب طبقات کے عوام ہی ہیں اس لئے عوام کو چاہیے کہ وہ اس فرسودہ اور گلے سڑے استحصالی نظام سے چھٹکارا حاصل کرنے کے لئے روایتی سیاستدانوں سے جان چھڑائیں‘ جاگیرداروں‘ وڈیروں‘ صنعت کاروں اور حکمرانوں کی اولادوں کو اسمبلیوں میں بھیجنے کے بجائے اپنی صفوں میں سے نمائندے چن کر اسمبلیوں میں بھیجیں تاکہ ان کی آواز اقتدار کے ایوانوں میں سنی جائے - یہاں مختلف عوامی وفود و کارکنان سے گفتگو کرتے ہوئے طاہرکھوکھر نے کہا کہ ایم کیو ایم ہی وہ واحد سیاسی تحریک ہے جو عملی طور پرغریب اور متوسط طبقات کی نمائندگی کرتی ہے یہی وجہ ہے کہ مراعات یافتہ طبقات اپنے مفادات کو خطرہ میں دیکھتے ہوئے ہمیشہ ایم کیو ایم کے خلاف سازشیں اورپروپیگنڈاکرتے ہیں لیکن ملک کے عوام اب مزید ان کے جھانسے میں آنے کیلئے تیار نہیں یہی وجہ ہے کہ قائد تحریک الطاف حسین بھائی نے 120 گز کے گھر سے جوسیاسی سفر شروع کیا آج وہ پورے ملک کے غریب ‘ مظلوم ‘ محکوم اور بے بس عوام کیلئے امید کی کرن بن چکا ہے آج ایم کیو ایم اور قائد تحریک کا فکر و فلسفہ چاروں صوبوں اور آزادکشمیر میں مقبولیت حاصل کررہا ہے اور ملک بھر میں ایم کیو ایم کی نمائندگی موجود ہے - انہوں نے کہاکہ پاکستان کے سیاسی نظام اور انتظامی ڈھانچے کے کنویں میں ایڈھاک ازم ، دہشت گردی ، انتہاء پسندی اور طالبانائزیشن کا کتا پڑا ہے، فیوڈل ازم ، کرپٹ کلچر اور دہشت گردی کی بیماریوں کا مقابلہ ایم کیوایم ہی کر سکتی ہے - انہوں نے کہا کہ ایم کیوایم تمام قومیتوں کے غریب و متوسط طبقے کے حقوق کے حصول کی جدوجہد کررہی ہے ، آج تمام قومیتیں ایم کیوایم کے پرچم تلے متحد و منظم ہوچکی ہیں اور اب ایم کیوایم کو تمام قومیتوں کے مظلوموں کی ملک گیر جماعت بننے سے دنیا کی کوئی طاقت نہیں روک سکتی ۔

(جاری ہے)

طاہرکھوکھر نے کہاکہ چاروں صوبوں کی طرح آزادکشمیر کے عوام بھی روایتی استحصالی سیاست سے تنگ آ چکے ہیں اور تبدیلی چاہتے ہیں آزادکشمیر میں گزشتہ 60 سالوں میں صرف چند مخصوص خاندان حکمرانی کر رہے ہیں جنہوں نے آج تک اپنے اثاثے بنانے کے علاوہ عوام کو کچھ نہیں دیا عوام کو چاہیے کہ وہ ان کا احتساب کریں اور پوچھیں کہ انہوں نے ساٹھ سالوں میں عوام گو کیا دیاانہوں نے کہا کہ ایم کیو ایم کا پلیٹ فارم تبدیلی چاہنے والوں کیلئے حاضر ہے نوجوان سامنے آئیں اور متوسط طبقہ کی قیادت کا انتخاب کریں اگر اسمبلیوں میں غریب اور متوسط طبقہ سے تعلق رکھنے والے لوگ بیٹھے ہوں گے تو وہ غریبوں کیلئے کام کریں کریں گے کیونکہ حکمرانوں کی اولادیں جنہیں عوام اپنے ووٹ کے ذریعے اقتدار کاحق دیتے ہیں وہ ان کے مسائل سمجھنے سے قاصر ہوتے ہیں عوام کے مسائل وہی سمجھ سکتا ہے جو پیدل ‘پبلک ٹرانسپورٹ پر سفر کرتا ہو‘ جس نے غربت دیکھی ہو ‘جس نے بے انصافیاں اور معاشی ناہمواریاں دیکھی ہوں اس لئے عوام کو اپنی تقدیر بدلنے کیلئے کردار ادا کرنا ہوگا - طاہرکھوکھر نے کہا کہ ایم کیو ایم قائد تحریک کی قیادت میں ملک سے غربت ‘ جہالت ‘ بے روزگاری ‘ دہشت گردی کے خاتمہ اور عوام کو حق اقتدار دلانے کی جدوجہد جاری رکھے گی وہ وقت دور نہیں جب پاکستان فلاحی ریاست میں تبدیل ہو جائیگا۔

Your Thoughts and Comments