بند کریں
صحت صحت کی خبریںفلاح انیانیت فاؤنڈیشن گجرانوالہ کی جانب سے تھرپارکر میں میڈیکل ٹیمیں لاکھوں روپے کی ادویات ..

صحت خبریں

وقت اشاعت: 26/12/2014 - 20:51:46 وقت اشاعت: 26/12/2014 - 20:16:30 وقت اشاعت: 26/12/2014 - 17:48:19 وقت اشاعت: 26/12/2014 - 17:44:52 وقت اشاعت: 26/12/2014 - 17:12:00 وقت اشاعت: 26/12/2014 - 17:00:05 وقت اشاعت: 26/12/2014 - 16:34:31 وقت اشاعت: 26/12/2014 - 15:12:04 وقت اشاعت: 26/12/2014 - 14:52:53 وقت اشاعت: 26/12/2014 - 14:16:57 وقت اشاعت: 25/12/2014 - 22:00:25

فلاح انیانیت فاؤنڈیشن گجرانوالہ کی جانب سے تھرپارکر میں میڈیکل ٹیمیں لاکھوں روپے کی ادویات اور راشن لے کر پہنچ گئیں

پنگریو ( اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 26 دسمبر 2014ء)فلاح انیانیت فاؤنڈیشن گجرانوالہ کی جانب سے تھرپارکر میں میڈیکل ٹیمیں لاکھوں روپے کی ادویات اور راشن لے کر پہنچ گئیں۔ ان میڈیکل ٹیموں کا فلاح انسانیت فاؤنڈیشن کے دفتر میں استقبال کرتے ہوئے چیئرمین فلاح انسانیت فاؤنڈیشن حافظ عبدالرؤف نے کہا کہ تھر کے قحط زدہ علاقوں میں ایک بار پھر غذائی قلت اور بیماریوں کے پھوٹ پڑنے پر ملک بھر سے میڈیکل ٹیمیں اور راشن کا سامان طلب کرلیا گیا ہے۔

ملک بھر کے مختلف علاقوں سے میڈیکل ٹیمیں تھرپارکر کی جانب روانہ ہوچکی ہیں۔ ان میڈیکل ٹیموں میں ڈاکٹرز، پیرا میڈیکل عملہ، ادویات، ٹیکنیشن اور دیگر صحت کے شعبہ سے وابستہ کثیر تعداد میں افراد تھر پہنچنا شروع ہوگئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ تھر کی موجودہ قحط کی صورتحال دیکھ کر فلاح انسانیت فاؤنڈیشن نے ریلیف کا بڑا آپریشن لانچ کردیا ہے۔

ریلیف آپریشن کی نگرانی میں خود کروں گا۔ انہوں نے کہا کہ میں ملک بھر کے مخیر تاجروں اور صنعتکاروں کو تھر کے دورے کی دعوت پیش کرتا ہوں وہ آکر یہاں کے حالات کا جائزہ لیں اور خدمت کے میدان میں اپنا کردار ادا کریں۔ انہوں نے کہا کہ گجرانوالہ سے آنے والی میڈیکل ٹیموں میں بائیس افراد شامل ہیں ان میں ڈاکٹرز، پیرا میڈیکل عملہ اور ڈسپینسرز شامل ہیں۔

وہ تھر کے مختلف دیہی علاقوں میں میڈیکل کیمپ قائم کریں گے اور ادویات و علاج معالجہ کی مفت سہولت دی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ ملک بھر سے راشن کی صورت میں تھرپارکر کے لیے ٹرک روانہ ہوچکے ہیں۔ ان ٹرکوں میں اشیاء خوردنوش، چاول، گھی، دالیں، آٹا، مصالحہ جات اور دیگر کھانے پینے کی اشیاء شامل ہیں۔ یہ تمام تھر کے خصوصاً دیہی علاقوں میں تقسیم کیا جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ فلاح انسانیت فاؤنڈیشن اس مشکل گھڑی میں تھر کے قحط زدہ لوگوں کو تنہا نہیں چھوڑے گی۔ ہم خدمت انسانیت پر یقین رکھتے اور یہ خدمت اللہ کا حکم سمجھ کر انجام دے رہے ہیں۔ انہوں نے کہا تھر کے موجودہ حالات کو دیکھ کر دل خون کے آنسو روتا ہے۔ یہاں پر بچوں میں سردی کی آمد کی وجہ سے بیماریاں پھوٹ پڑی ہیں۔ موسمیاتی بیماریوں کی وجہ بچے بڑی تعداد نزلہ، زکام، بخار اور دیگر بیماروں میں مبتلاء ہوچکے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ صحرا میں سردی زیادہ ہونے کی وجہ سے گرم کپڑوں کی اشد ضرورت ہے۔ اس ضرورت کو مدنظر رکھتے ہوئے فلاح انسانیت فاؤنڈیشن نے دس ہزار سے زائد بچوں میں گرم کپڑے تقسیم کرنے کا منصوبہ بنایا ہے جو مختلف گاؤں، گوٹھوں میں یہ کپڑے تقسیم کیئے جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ فلاح انسانیت فاؤنڈیشن کی سروے ٹیمیں تھر کے مختلف علاقوں میں سروے کررہی ہیں۔ سروے کو مدنظر رکھتے ہوئے سروے شدہ گاؤں میں راشن کی تقسیم کا سلسلہ جاری ہے۔

26/12/2014 - 17:00:05 :وقت اشاعت